Loading...
مدرس ڈے وشیش:ماں پر10خاص کوتائیں۔Happy Mothers Day Poems | Webdunia Hindi

مدرس ڈے وشیش:ماں پر10خاص کوتائیں

Mothers-Day
سنیہہ کا جھرنا ہے ماں

ممتا کا ساگر ہے ماں
سنیہہ کا جھرنا ہے ماں
لوری کے میٹھے بول گاکر
سپنو کو جگاتی ہے ماں
تیاگ کی مورتی ہے ماں
سمیہ ساکشی ہے اسکا
اتہاس نیا رچتی ہے ماں
-آشا وڈنیرے
ماں,تم سے ہی سب سیکھا

اسہائے نہ پایا کبھی
سر اٹھائے تمہارا جینا دیکھا
آشا میں رکھ وشواس
اسفلتا کو گلے لگانا دیکھا
ستت قرم,پوجا سے بڑھکر
تم سے ہی پاٹھ پڑھا
سمہالو که‘جیون ہے سوغات
ماں!تم سے ہی یہ سیکھا۔
-چندر کلا جین


اسمپورن سرشٹی ماں کا پریائے

ماں پر لکھنے کے لئے
میں نے جیوں ہی قلم اٹھائی
پرتھم پوجیہ آرادھیہ گجانن
تمہاری ہی یاد آئی
جیوں تم نے اسمپورن سرشٹی کو
ماں کا پریائے بتایا
اس سے بہتر ماں کو آج تک
کوئی سمجھ نہ پایا۔
-ونیتا موٹلانی

ماں,میں خوش ہوتی ہوں

ماں میں خوش ہوتی ہوں
جب بناتی ہوں بچی ہوئی روٹیاں کا
روٹی پتجا,
یا نہیں کرتی الگ سے آرام
جب مانتی ہوں کاریانترن ہی ہے وشرام
یا سنتی ہوں سب کو جب سویکارتی ہوں
ایسا ہی نہیں ہوتا ہے ویسا بھی ہو سکتا ہے
ماں میں خوش ہوتی ہوں که آپ سے
ونشانگت اور سیکھی اچھائیوں سے
میں اور اچھی انسان ہوتی جاتی ہوں۔
-ڈا.کسلیہ پنچولی

شاشوت پریم ماں کا

شاشوت ہے پریم ماں کا
کوئی نہیں ہے جوڑ اسکا
کیا لکھیں شبد نہیں ہیں
اتنا ہے,آدر جس کا
سدیو بنا رہے
بچوں کے سر ہاتھ اسکا
بس یہی ہے ایش سے
میری آج پرارتھنا۔
-بکلا پاریکھ

غنغنی دھوپ ہوتی ہے ماں

سرد ہواوٴں کے بیچ
غنغنی دھوپ ہوتی ہے
ڈوب رہی من کی نوکا
سبل پتوار ہوتی ہے
پت جھڑ میں جو مدھماس کھلا دے
وہ جیونداینی ماں ہوتی ہے۔
-نشاء ولاس دیشپانڈے

ماں نے آشیش بھجوایا

گل داودی کی خوشبو میں
ماں کا احساس نظر آیا
مند مند ہریالی ہواوٴں میں
ماں کا آنچل لہرایا
مانا آج نہیں ماں سنسار میں
سرشٹی شرنگار کی ڈولی میں
ماں نے آشیش بھجوایا۔
-رشمی لونکر

ماں ساتھ تھیں

میری خوشیوں کو کبھی
غم کی نظر نہیں لگی
ماں ساتھ تھیں
دنیا کی تپش
چھانہ سی لگی۔
-امر کھنوجا چڈا

شیش رہ جاتی ہے ماں

کیول بچہ جنم نہیں لیتا,
جنم لے لیتی ہے ایک ماں بھی
اسکے پہلے تو وہ ہوتی ہے,
لڑکی,بیٹی,بہو,پتنی,سخی
اور نہ جانے کیا کیا ہو جاتی ہے ماں
گود میں لیتے ہی نوجات کو
دھرنی کی دھیر اور پرکرتی سی ادارتا
جانے کہاں سے آ جاتی ہے اس میں
الہڑتا بدل جاتی ہے گرما میں
سب کچھ سمٹ جاتا ہے کلکاری میں
بسور جاتا ہے اپنا ہونا
شیش رہ جاتی ہے کیول ماں
اور کیا اسکے بعد کچھ ہونا شیش رہتا ہے؟
-ڈا.گرما سنجے دبے

ماں تیرے آنچل میں

میں لڑونگی,جھگڑونگی تجھ سے
کبھی کبھی تیری کوئی
بات بھی نہیں مانونگی
پر جب تھک جاؤنگی
اس دنیا سے لڑتے لڑتے
بس تیرے ہی آنچل میں آ
ہولے سے چھپ جاؤنگی۔
-ڈا.دیپا منیش ویاس

سابھار میرے پاس ماں ہے


 

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation