Loading...
ماتر دوس پر4چھوٹی کوتائیں:جیون کی سر بھی ہے ماتا۔mothers day poems | Webdunia Hindi

ماتر دوس پر4چھوٹی کوتائیں:جیون کی سر بھی ہے ماتا



ماں,ایک ورش کے سمان

ماں کو سمجھ پانا بہت مشکل ہے
ماں کی ممتا کی تھاہ
پانا بہت مشکل ہے
ماں ایک ورش کے سمان ہوتی ہے,
اسکی جڑوں کی تھاہ پانا
مشکل ہی نہیں اسمبھو ہے۔
-بیلا جین
مان کریں ماں کا

کشٹوں سے نہیں ہارتی ماں
دکھ درد کو نہیں دکھاتی ماں
مسکراتی ہر دم کھٹتی ہے ماں
تھکتی ہے پر تھکتی نہیں ماں
بوڑھی ہوتی ہے پر بوڑھی نہیں ہوتی ہے ماں
ماں کے شرم کا مان کریں,منائیں ماں کو
کچھ پل آرام کریں
ماں کو خوش کرنے کا
کیوں نہ کچھ کام کریں۔
-گائتری مہتہ

کلیانی کہلاتی
ناری کو وردان ہے ممتا
جیون کی سر بھی ہے ماتا
سنسکاروں کو پوشت کرتی
دنیا اسے کلیانی کہتی۔
-ہنسا مہتہ

ماں کوئی جات نہیں

کیا ماں کی بھی کوئی جات ہوتی ہے
کیا وہ ہندو یا مسلمان ہوتی ہے
ماں تو بس ماں ہوتی ہے
انکے آشیرواد کے بنا
ہماری کیا پہچان ہوتی ہے۔
-انجو شریواستو نگم
سابھار میرے پاس ماں ہے

 

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation