Loading...
Lok Sabha Chunav 2019 Bihar Election Nitish Kumar Bjp Congress Jdu Rjd Ground Report -بہار کے انتم چرن کے چناؤ میں کانٹے کی جنگ,کیوں آسان نہیں ہے نتیش کمار کی راہ؟- Amar Ujala Hindi News Live
وگیاپن
وگیاپن

بہار کے انتم چرن کے چناؤ میں کانٹے کی جنگ,کیوں آسان نہیں ہے نتیش کمار کی راہ؟

Nawal Kishor Kumarنول کشور کمار Updated Wed, 15 May 2019 02:26 PM IST
19مئی کو بہار کے نالندہ,پٹنہ صاحب,پاٹلپتر,آرا,بکسر,ساسارام,کاراکاٹ اور جہاناباد میں چناؤ ہونے ہیں۔
19مئی کو بہار کے نالندہ,پٹنہ صاحب,پاٹلپتر,آرا,بکسر,ساسارام,کاراکاٹ اور جہاناباد میں چناؤ ہونے ہیں۔ -فوٹو:امر اجالا گرافکس
خبر سنیں

لوک سبھا چناؤ کے انتم چرن میں19مئی کو بہار کے نالندہ,پٹنہ صاحب,پاٹلپتر,آرا,بکسر,ساسارام,کاراکاٹ اور جہاناباد میں چناؤ ہونے ہیں۔ ان میں سے4شیتروں میں ورتمان کیندر سرکار کے4منتریوں کی قسمت دانو پر لگی ہے۔ ان میں پٹنہ صاحب سے روی شنکر پرساد,پاٹلپتر سے رامکرپال یادو,بکسر سے اشونی چوبے کے علاوہ کاراکاٹ سے اوپیندر کشواہا شامل ہیں۔ حالانکہ اوپیندر کشواہا چناؤ کے پہلے ہی نتیش کمار سے36کے سمبندھ کے کارن بھاجپا سے ناطہ توڑکر راجدنیت مہاگٹھبندھن میں شامل ہو گئے ہیں۔

وگیاپن
دوسری اور آرا سنسدیہ شیتر میں بھارت سرکار(منموہن سنگھ سرکار)کے پورو گرہ سچو آر.کے.سنگھ بھی دوسری بار تال ٹھونک رہے ہیں جہاں انکا مقابلہ بھاکپا مالے کے نوجوان امیدوار راجو یادو سے ہونا ہے۔ اس سنسدیہ شیتر پر سب کی نگاہیں اسلئے بھی ٹکی ہیں کیونکہ راجو یادو کو راجد اور کانگریس نے اپنا سمرتھن دیا ہے۔

نالندہ کیوں بنا نتیش کے لئے چنوتی؟
اس پرکار انتم چرن کا چناؤ دلچسپ بن گیا ہے۔ شیتروار بات کریں تو نالندہ لوک سبھا شیتر میں ایک بار پھر نتیش کمار کی پرتشٹھا انکے گلے میں اٹکی پڑی ہے۔ یہ شیتر نتیش کمار کا گڑھ مانا جاتا ہے۔ یہ انکا گرہ جلا ہے جہاں کرمی جاتی کے ووٹر نرنائک ہوتے ہیں۔ سیاسی گلیارے میں یہ سبھی سویکارتے ہیں که نالندہ میں جدیو کا امیدوار چاہے کوئی ہو,وہ نتیش کمار کا مکھوٹا ہی ہوتا ہے۔

بتا دیں که نالندہ پر نتیش کمار کا قبضہ1996سے برقرار ہے۔ اس سے پہلے تک یہاں کانگریس اور سیپیائی کے امیدوار آپس میں الجھتے تھے۔1991میں سیپیائی امیدوار وجے کمار یادو کو جیت ملی تھی۔

پچھلی بار یعنی2014میں نتیش کمار نے اپنے بوتے چناؤ لڑا تھا اور کیول جن دو شیتروں میں انہیں جیت ملی تھی,انمیں سے ایک نالندہ بھی شامل تھا۔ یہ اسلئے بھی مہتوپورن ہے که تب کتھت طور پر مودی کی سنامی کے کارن بھاجپا کو اوسمرنیہ جیت ملی تھی۔

آنکڑوں کے لحاظ سے بات کریں تو پچھلی بار نتیش کمار کی پارٹی جدیو کے امیدوار کوشلیندر کمار کو3لاکھ21ہزار982ووٹ ملے تھے اور وہ کسی طرح محض لگ بھگ10ہزار ووٹوں کے انتر سے جیت سکے تھے۔ انہیں لوک جن شکتی پارٹی کے ستیانند شرما نے کڑی چنوتی دی تھی۔ انہیں3لاکھ12ہزار355ووٹ ملے تھے۔ جبکہ تیسرے ستھان پر رہے بہار کے پورو ڈی جی پی آشیش رنجن سنہا کو بطور کانگریس امیدوار1لاکھ27ہزار270ووٹ ملے تھے۔

اس بار حالات بدلے ہیں۔ نتیش کمار ایک بار پھر سےنریندر مودی کے ساتھہیں۔ لہٰذا یہ مانا جا سکتا ہے که نالندہ میں نہ کیول نتیش کمار کے امیدوار کے لئے بلکہ سویں نتیش کمار کے لئے راہ آسان ہے۔ حالانکہ نالندہ لوک سبھا شیتر کے متداتاؤں کا موڈ ایک جیسا نہیں ہوتا ہے۔ اس بار مہاگٹھبندھن نے وکاسشیل انسان پارٹی(وی آئی پی)کے امیدوار اشوک کمار آزاد چندرونشی کو جدیو کے امیدوار کوشلیندر کمار کے خلاف امیدوار بنایا ہے۔

جاتگت سمیکرنوں کے لحاظ سے نالندہ میں کرمی جاتی کے متداتاؤں کی سنکھیا ادھک ہو,لیکن دوسرے ستھان پر یادو اور اتی پچھڑی جاتی کے متداتاؤں کی سنکھیا بھی کم مہتوپورن نہیں ہے۔ پچھلی بار وہ اتی پچھڑے ہی تھے جن کے کارن نتیش کمار کے امیدوار10ہزار ووٹوں کے انتر سے جیت درج کر سکے تھے۔ اس بار اشوک کمار آزاد چندرونشی جو که اتی پچھڑا ورگ سے آتے ہیں,یدی یادو,مسلمان اور اتی پچھڑا ورگ کے ووٹروں کا ووٹ پانے میں کامیاب ہو جاتے ہیں تو نالندہ میں اس بار الٹ پھیر کی سنبھاونا سے انکار نہیں کیا جا سکتا ہے۔
وگیاپن
آگے پڑھیں

وگیاپن

Recommended

فیشن کی دنیا کو نیا آیام دیتا یہ خاص فیشن شو
Invertis university

فیشن کی دنیا کو نیا آیام دیتا یہ خاص فیشن شو

سمسیا کیسی بھی ہو,ہمارے جیوتشی سے پوچھیں سوال اور پائیں جواب ماتر99روپے میں
Astrology

سمسیا کیسی بھی ہو,ہمارے جیوتشی سے پوچھیں سوال اور پائیں جواب ماتر99روپے میں

وگیاپن
وگیاپن
امر اجالا کی خبروں کو فیس بک پر پانے کے لئے لائق کریں
وگیاپن

Spotlight

وگیاپن
وگیاپن
وگیاپن

Most Read

Blog

سونبھدر نرسنہار آخر کتنے سرکشت ہیں دیش کے آدیواسی

سونبھدر ضلعے کے امبھا گاؤں کے آدیواسی نرسنہار کو لیکر راجنیتک آروپ پرتیاروپ کا دور جاری ہے۔

23جولائی2019

وگیاپن

کشمیر مدعے پر مدھیہ ستھتا سویکار نہیں راجناتھ سنگھ

کشمیر پر مدھیہ ستھتا بوال پر سدن میں جم کر سنگرام ہوا۔ اس دوران رکشا منتری راجناتھ سنگھ نے کہا که جون میں مودیٹرمپ کی ملاقات ہوئی تھی,لیکن کشمیر مدعے پر ٹرمپ سے کوئی بات چیت نہیں ہوئی۔

24جولائی2019

آج کا مدعا
View more polls

Disclaimer

اپنی ویب سائٹ پر ہم ڈاٹا سنگرہ ٹولس,جیسے کی ککیج کے مادھیم سے آپکی جانکاری ایکتر کرتے ہیں تاکہ آپ کو بہتر انبھو پردان کر سکیں,ویب سائٹ کے ٹریفک کا وشلیشن کر سکیں,کانٹینٹ ویکتیگت طریقے سے پیش کر سکیں اور ہمارے پارٹنرس,جیسے کیGoogle,اور سوشل میڈیا سائٹس,جیسے کیFacebook,کے ساتھ لکشت وگیاپن پیش کرنے کے لئے اپیوگ کر سکیں۔ ساتھ ہی,اگر آپ سائن اپ کرتے ہیں,تو ہم آپ کا ای میل پتہ,فون نمبر اور انیہ وورن پوری طرح سرکشت طریقے سے سٹور کرتے ہیں۔ آپ ککیج نیتی پرشٹھ سے اپنی ککیج ہٹا سکتے ہے اور رجسٹرڈ یوجر اپنے پروفائل پیج سے اپنا ویکتیگت ڈاٹا ہٹا یا ایکسپورٹ کر سکتے ہیں۔ ہماریCookies Policy, Privacy PolicyاورTerms & Conditionsکے بارے میں پڑھیں اور اپنی سہمتی دینے کے لئےAgreeپر کلک کریں۔

Agree
Web Tranliteration/Translation