Loading...
Ambala News In Hindi, Latest Ambala Headlines - Amarujala.com
وگیاپن
وگیاپن
وگیاپن
سمسیا کیسی بھی ہو,پائیں اسکا اچوک سمادھان پرسدھ جیوتشاچاریوں سے کیول99روپے میں
Astrology Services

سمسیا کیسی بھی ہو,پائیں اسکا اچوک سمادھان پرسدھ جیوتشاچاریوں سے کیول99روپے میں

وگیاپن
وگیاپن
وگیاپن
وگیاپن
وگیاپن

خون سے پتر لکھ کر ساموہک گرفتاریاں دینگے شکشا پریرک,آمرن انشن کی چیتاونی

ہریانہ کے51سو شکشا پریرک روزگار بچاؤ ابھیان کے تحت28اگست کو خون سے پتر لکھ کر ساموہک گرفتاریاں دینگے۔

26اگست2019

وگیاپن
وگیاپن

امبالہ

سوموار, 26اگست2019

اویدھ سمبندھوں کا ورودھ کرنے پر پتنی کو بولا تین طلاق,دوسری مہلا سے کیا نکاح

امبالہ شہر میں اویدھ سمبندھ کا ورودھ کرنے پر ایک یووک نے پتنی کو تین طلاق کہ کر دوسری مہلا سے نکاح کر لیا۔ پولیس نے پیڑت مہلا کی شکایت پر آروپی پر پتنی کو تین طلاق دیکر دوسرا نکاح کرنے اور دہیج اتپیڑن کے آروپ میں کیس درج کیا ہے۔

پولیس کو دی شکایت میں یمنانگر کے سڑھورا,قصبہ بلاسپور نواسی پیڑت سییدا نے بتایا که10سال پہلے گاؤں کاکڑو نواسی نویل احمد کے ساتھ اسکا نکاح ہوا تھا۔

اسکے تین بچے بھی ہیں۔ آروپ ہیں که ورش2015سے نویل نے ایک یوتی سے اویدھ سمبندھ بنا لئے۔22مئی2019کو وہ اسے مرادآباد سے بھگا کر امبالہ لایا تھا۔ یہاں کی گیتا کالونی کے گھر میں رکھا۔ اسی کارن آروپی نے26جون کو پتنی سییدا و بیٹیوں کو مائکے چھوڑ دیا۔ پیڑتا نے بتایا که اسے پورے معاملے میں شک ہوا تو اسنے اپنے سطر پر جانچ کروائی۔

یہ بھی پڑھیں
پریمی جوڑے کو جوتوں کی مالا پہنا گاؤں سے نکالا,گپتانگ میں سریا ڈالنے سمیت لگے یہ آروپ

اس پر پتہ چلا که اسکے دوسری مہلا کے ساتھ اویدھ سمبندھ ہیں۔ نویل نے ہی اس مہلا کا پہلے پتی سے لالڑو تھانے میں طلاق کرایا تھا۔ جب اس بارے میں اسنے نویل سے بات کرنے کی کوشش کی تو9اگست کو اسنے سییدا کو تین طلاق بول دیا۔ اسکے بعد اسنے دوسری مہلا سے نکاح کر لیا۔

پیڑتا نے سویں و اسکی بیٹیوں کو جان کا خطرہ بتاتے ہوئے کارروائی کی مانگ کی۔ مہلا تھانے میں مسلم ومن پروٹیکشن آف رائٹس آف میرج ایکٹ2019,سیکشن 4کے تحت ایف آئی آر کی گئی ہے۔ بتا دیں که امبالہ میں تین طلاق کا یہ پہلا معاملہ ہے۔

پتنی کو تین طلاق دیکر دوسرا نکاح کرنے اور دہیج اتپیڑن کے آروپ میں کیس درج کیا گیا ہے۔ آروپی کو جلد گرفتار کر لیا جائیگا۔-سنیتا ڈھاکہ,انسپیکٹر
... اور پڑھیں

امبالہ میں پکڑا گیا پاک ناگریک,بھارتیہ سم ملنے سے گہرایا شک,جانیں گجرات کنیکشن

امبالہ میں15اگست کی پورو سندھیا پر آئی ایس آئی کا ایجینٹ ہونے کے شک میں امبالہ سے پکڑا گیا پاکستانی ناگریک امبالہ آنے سے پہلے حیدرآباد بھی گیا تھا۔ پاک ناگریک علی مرتضیٰ اصغر سے ابھی تک کی جانچ میں پولیس کو تین بھارتیہ موبائل سم ملے ہیں۔

پولیس تینوں سموں کی کال ڈٹیل کھنگال رہی ہے۔ ساتھ ہی گجرات سمیت ان جگہوں پر بھی آروپی کی نشاندیہی پر پوچھ تاچھ کی ہے,جہاں وہ ابھی تک رہا ہے۔

آروپی پاک ناگریک گھورا ورگ سے تعلق رکھتا ہے۔ یہ ورگ پیر پینگبنروں کو مانتا ہے۔ وہ ماتھا ٹیکنے کے لئے بھارت آیا تھا۔ اسکے لئے اسے انہیں شہروں کا ویجا ملا تھا,جہاں اسے ماتھا ٹیکنا تھا۔ وہ ابھی تک کئی شہروں میں داخل ہو چکا ہے۔ گجرات اور حیدرآباد دونوں شہروں میں اسے جانے کی اجازت نہیں ہے۔
 
اسے بھی پڑھیں ہریانہ میں مہلا سے آٹھ یووکوں نے کیا ساموہک دشکرم,پائپ سے پیٹا بھی,حالت گمبھیر

حالانکہ ابھی یہ سپشٹ نہیں ہو سکا ہے که وہ آئی ایس آئی کا ایجینٹ ہے یا نہیں۔ پولیس آروپوں کی سچائی کھنگال رہی ہے۔ ایس پی ابھیشیک جوروال نے مانا که آروپی نے ودیشی ادھنیم کا النگھن کیا ہے۔ اسی آدھار پر اسکے کیس درج کر جانچ شروع کی گئی ہے۔

14کو چڑھا تھا پولیس کے ہتھے
سی آئی اے سٹاپھ 2نے14اگست کو سوتنترتا دوس کو لیکر چلائے جا رہے چیکنگ ابھیان کے دوران پاک ناگریک علی مرتضیٰ اصغر کو گرفتار کیا تھا۔ جانچ ٹیم کو سوچنا ملی تھی که بس سٹینڈ کے پاس ایک سندگدھ ویکتی گھوم رہا ہے۔ اسکے بعد سی آئی اے نے اسے حراست میں لے لیا۔ شروعاتی جانچ میں ہی پولیس کو آروپی کے پاک ناگریک ہونے کے پختہ ثبوت مل گئے۔
... اور پڑھیں

گاؤں کھیڑا میں گھر میں جلی حالت میں ملا شو

ملانا۔ کھیڑا گاؤں کی ایک وواہتا نے ناراینگڑھ ستھت ایک سویٹ ہاؤس کے مالک پر اسکے پتی کو جلاکر مارنے کا آروپ لگایا ہے۔ مہلا نے بتایا که اسکا پتی اسی سویٹ ہاؤس میں کام کرتا تھا۔ وہیں گھٹنا کی سوچنا ملتے ہی ملانا پولیس معاملے کی جانچ میں جٹ گئی۔ کھیڑا گاؤں نواسی ریکھا کے انوسار اسکا38ورشیہ پتی مایارام پچھلے چھہ مہینے سے ناراینگڑھ میں ایک سویٹ ہاؤس میں کام کرتا تھا۔ ریکھا نے پولیس کو بتایا که بدھوار صبح اسکا پتی کام پر چلا گیا اور کچھ دیر بعد وہ بھی کہیں چلی گئی۔ وہ دوپہر قریب1بجے گھر پہنچی تو دیکھا که اسکے پتی کا شو جلی اوستھا میں پڑا تھا۔ وواہتا نے سویٹ ہاؤس کے مالک پر آروپ لگاتے ہوئے کہا که انہوں نے اسکے پتی کی جلاکر ہتیا کی اور شو کو اسکے گھر پر چھوڑ دیا۔ سوچنا ملتے ہی ڈی ایس پی ناراینگڑھ امت کمار موقعے پر پہنچ گئے۔ وہیں مرتک کے چچیرے بھائی سومناتھ نے بتایا که وہ بدھوار کو سویٹ ہاؤس پر نہیں گیا تھا۔
سوچنا ملتے ہی پولیس موقعے پر پہنچ گئی تھی۔ مرتک کے چچیرے بھائی سومناتھ نے ایسی کوئی شکایت نہیں دی ہے۔ موت کے کارنوں کا پتہ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد پتہ چلیگا۔
-امرجیت سنگھ,اچارج,کلالٹی چوکی۔
... اور پڑھیں

سٹینٹ ڈالنے کے بعد ایک مریض کی موت,دوسرے کو ڈاکٹروں نے وینٹیلیٹر پر رکھا

امبالہ کینٹ۔ ناگریک اسپتال کینٹ میں اپچار کے دوران ایک مریض نے رویوار کو دم توڑ دیا۔ وہیں آپریشن کے بعد ایک انیہ مریض کی صحت اچانک بگڑ گئی۔ ڈاکٹروں کے انوسار اسے وینٹیلیٹر پر رکھا جبکہ پرجن مریض کی موت ہونے کی بات کہ کر سینٹر کے باہر ہنگامہ کرتے رہے۔ پرجنوں نے سینٹر کی ویوستھا پر سوال اٹھاتے ہوئے اپچار کے دوران چکتسکوں پر بھی لاپرواہی کا آروپ لگایا۔ ادھر,سینٹر کی اور سے سبھی آروپوں کو سرے سے خارج کر دیا گیا۔
400شوگر لیول میں کر دیا آپریشن
سہارنپور کے جاپھرنواج کا63ورشیہ راجندر کمار شکروار کو ہارٹ سینٹر میں بھرتی ہوا تھا۔ بیٹے شینکی گمبر نے بتایا که اسکے پتا کے دماغ سے گلے تک آنے والی نس بلاک تھی۔ چار مہینے پہلے انہیں پیرالائج کا اٹیک ہوا تھا۔ ہارٹ کا بہتر اپچار ہونے کی سوچنا کے بعد وہ پتا راجندر کو یہاں لیکر آئے تھے۔ شینکی کا آروپ ہے که شنیوار کو انکے پتا کا شوگر لیول400پار تھا۔ پھر بھی چکتسکوں نے آپریشن کر سٹینٹ ڈال دیا۔ بیٹے نے بتایا که بعد میں اسکے پتا کی طبیعت خراب ہو گئی۔ تب انہیں وینٹیلیٹر پر ڈال دیا گیا۔ کئی گھنٹے تک اسکے پتا وینٹیلیٹر پر ہی بیسدھ پڑے رہے۔ اس کارن پرجنوں کو انکی موت ہونے کی آشنکا ہوئی۔ شینکی نے بتایا که پتا کو انہوں نے کئی طرح سے جگانے اور اٹھانے کا پریاس کیا,لیکن کوئی رسپانس نہیں ملا۔ تب پرجنوں نے سینٹر کے باہر ہنگامہ کر دیا۔ اپچار کرنے والے چکتسکوں سے بھی انکی تیکھی بحث ہوئی۔ انہوں نے ترنت شو انکے حوالے کرنے کی بات کہی۔
ایک لاکھ کی ڈیمانڈ پر بھڑکے پرجن
راجندر کے پرجن شام کو تب بھڑک اٹھے جب سینٹر کی اور سے انہیں ایک لاکھ روپے جمع کروانے کے آدیش دیئے جبکہ پرجنوں کا کہنا ہے که آپریشن سے پہلے انکی بات46112روپے میں ہوئی تھی۔ شینکی نے بتایا که اپچار سے پہلے انہیں سٹینٹ ڈالنے کا خرچ46,112روپے بتایا تھا۔ تب38ہزار روپے جمع کروا دیئے گئے تھے۔ تین چار ہزار روپے دواؤں پر بھی خرچ ہوئے۔ شینکی نے بتایا که انہوں نے اپنے پتا کو جندا یا پھر مردہ ہونے پر ترنت حوالے کرنے کی بات کہی,لیکن چکتسک ایک لاکھ جمع کروانے پر اڑ گئے۔ حالانکہ بعد میں50ہزار روپے جمع کروانے کے بعد مریض پریوار کے حوالے کر دیا گیا۔ شینکی نے بتایا که انکے پتا کے شریر میں کوئی حرکت نہیں ہے۔ ہمیں لگتا ہے که انکی موت ہو چکی ہے۔ پھر وہ انہیں لیکر سہارنپور روانہ ہو گئے۔
ڈیڑھ مہینے پہلے ڈلوایا تھا سٹینٹ,اب توڑا دم
ببیال کے45ورشیہ راکیش کمار نے رویوار کو ہارٹ سینٹر میں دم توڑ دیا۔ قریب ڈیڑھ مہینے پہلے ہی راکیش نے سینٹر سے سٹینٹ ڈلوایا تھا۔ شکروار کو اسکی اچانک طبیعت بگڑ گئی۔ پرجن اسے لیکر دوبارہ سینٹر آئے۔ رویوار کو اپچار کے دوران اسنے آخری سانس لی۔ بھائی جرنیل سنگھ نے بتایا که ایک سال پہلے ہی راکیش کو ہارٹ پرابلم ہوئی تھی۔ تب اسے یہاں بھرتی کروایا تھا۔ اس سمیہ بھی چکتسکوں اسے سٹینٹ ڈالا تھا۔ اس پر قریب ایک لاکھ روپے خرچ ہوئے تھے۔ ڈیڑھ مہینے پہلے بھی طبیعت خراب ہونے پر راکیش کو سٹینٹ ڈالا گیا تھا۔ تب75ہزار روپے خرچ ہوئے تھے۔ جرنیل کا آروپ ہے که سینٹر میں بہتر اپچار نہ ملنے کے کارن اسکے بھائی کی موت ہوئی ہے۔
ڈیڑھ سال پہلے ہوئی تھی شروعات,سپتاہ میں اوسطاً ایک موت
چھاونی ناگریک اسپتال میں قریب ڈیڑھ سال پہلے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ(پی پی پی موڈ)پر ہارٹ کیئر سینٹر کی شروعات ہوئی تھی۔ لیکن ابھی تک یہاں درجنوں موتیں ہو چکی ہیں۔ ایک سپتاہ میں اوسطاً یہاں آنے والے مریضوں میں سے ایک مریض کی موت ہو جاتی ہے۔ حالانکہ اسکے کارن کیا ہیں,یہ آج تک سپشٹ نہیں ہو سکا۔
سبھی آروپ غلط,سینٹر میں بہتر اپچار کی ویوستھا:راجیو
ہارٹ سینٹر کے ویوستھاپک راجیو کمار نے راجندر کی موت ہونے سے صاف انکار کر دیا۔ انہوں نے بتایا که وہ جندا ہے۔ آپریشن کے بعد اسکی حالت خراب ہو گئی تھی۔ تب اسے وینٹیلیٹر پر رکھا گیا تھا۔ نیورو اوپینین کے لئے پرجن اسے سہارنپور لے گئے ہیں۔ پریوار کو اپچار پر1.80لاکھ روپے خرچ ہونے کی بات پہلے بتائی گئی تھی۔ وہیں دوسرے مریض راکیش کی موت اسکی لاپرواہی سے ہوئی۔ سٹینٹ ڈالنے کے بعد اسنے دوائی لینا چھوڑ دیا تھا۔ جسکے کارن اسکی طبیعت بگڑ گئی۔ ہارٹ سینٹر میں مریضوں کو سستے دام پر بہترین اپچار کی سودھا مل رہی ہے۔
... اور پڑھیں

پاک ناگریک انہیں شہروں میں گیا,جہاں سینا مکھیالیہ

امبالہ۔ پاک ناگریک علی مرتضیٰ اصغر سے پولیس پوچھ تاچھ پوری کر چکی ہے۔ پولیس نے رویوار کو اسے عدالت میں پیش کیا,جہاں سے اسے جیل بھیج دیا گیا۔ ابھی تک کی جانچ میں یہ خلاصہ نہیں ہو پایا که وہ آئی ایس آئی کا ایجینٹ ہے یا نہیں۔ حالانکہ جانچ کے دوران پولیس کو یہ پتہ چلا ہے که بھارت آنے کے بعد وہ اسی شہر میں گیا جہاں سینا مکھیالیہ ہیں۔ اسکے قبضے سے ملے تین سم کارڈوں کی ڈٹیل کو پولیس اب کھنگال رہی ہے۔ کال ڈٹیل سے ہی اسکا پتہ چل پائیگا۔ انٹرنیٹ کے ذریعے بھی اس پر سوچنائیں پاک بھیجنے کا شک جتایا جا رہا ہے۔
تین راجیوں کے چنندہ شہروں کا ملا تھا ویجا
32سال کا علی مرتضیٰ2015-16سے آٹھ بار بھارت آ چکا ہے۔ اس بار اسے گجرات,مہاراشٹر اور راجستھان کے چنندہ شہروں کا ہی ویجا ملا تھا۔ اسکے باوجود وہ امبالہ و حیدرآباد چلا چلا گیا۔ اسی نیم کو توڑنے کی وجہ سے وہ پولیس کے ہتھے چڑھ گیا۔ جانچ کے دوران یہ بھی پتہ چلا که اس بار وہ اسی شہر میں گیا تھا,جہاں پر سینا مکھیالیہ ہے۔ پولیس نے ریمانڈ کے دوران تینوں راجیوں میں جاکر اس سے پوچھ تاچھ کی ہے۔ حالانکہ پتہ چلنے کے باوجود ابھی تک ان لوگوں کے نام ساروجنک نہیں کر رہی ہے جن کے نام پر موبائل سم علی مرتضیٰ کے قبضے سے ملے ہیں۔ اسکے لئے پولیس سرکشا کا حوالہ دے رہی ہے۔
آروپی علی مرتضیٰ سے پوچھ تاچھ پوری ہو چکی ہے۔ ابھی ہم سیدھیتور پر یہ نہیں کہہ سکتے ہیں که وہ آئی ایس آئی کا ایجینٹ ہیں۔ اسکے قبضے سے ملے موبائل سموں کی ڈٹیل کھنگالی جا رہی ہے۔ اسنے کئی جگہ انٹرنیٹ کا بھی استعمال کیا ہے۔ سبھی پہلوؤں پر جانچ چل رہی ہے۔ جلد ہی اسکا خلاصہ کر دیا جائیگا۔ ابھی عدالت نے اسے جیل بھیجنے کے آدیش دے دیئے ہیں۔
-سندیپ کمار,پر بھاری,سی آئی اے سٹاپھ 2
... اور پڑھیں

گیتا گوپال چوک سے کینٹونمینٹ ایریا میں45دن تک راہگیروں کی نو اینٹری

امبالہ۔ گیتا گوپال چوک سے کینٹونمینٹ ایریا میں جانے والی مکھیہ سڑک45دن بند رہیگی۔ اس سڑک سے روز گجر نے والے لوگوں کو اب ویکلپک سڑکوں کا استعمال کرنا پڑےگا۔ سڑک پر بن رہے پرویش دوار کی وجہ سے سڑک بند کرنے کا نرنیہ لیا گیا ہے۔ رویوار کو سڑک بند کر اس پر نوٹس چسپا دیا گیا ہے۔ سڑک بند کرنے سے پہلے بھی کینٹونمینٹ بورڈ کی اور سے اس سلسلے میں پبلک نوٹس جاری کئے جا چکے ہیں۔ بورڈ کے وائس پریجیڈینٹ اجے بویجا نے کہا که پرویش دوار کے نرمان کی وجہ سے لوگوں کو کچھ دن دقت رہیگی۔
ایک کروڑ روپے میں تیار ہو نگے پرویش دوار
کینٹونمینٹ بورڈ کی اور سے ابھی پورے ایریا کو وکست کرنے کا کام چل رہا ہے۔ ایریا کی خوبصورتی کے لئے ابھی دو جگہ پرویش دواروں کا نرمان کیا جا رہا ہے۔ ایک پرویش دوار کا نرمان کاریہ ابھی گیتا گوپال چوک سے کینٹونمینٹ ایریا کو جانے والی مکھیہ سڑک پر کیا جا رہا ہے جبکہ دوسرا پرویش دوار مال روڈ پر بن رہا ہے۔ دونوں کے نرمان کاریہ پر قریب ایک کروڑ روپے خرچ کئے جا ئینگے۔ گیتا گوپال چوک کے پاس بن رہے پرویش دوار کا نرمان کاریہ40فیصدی پورا ہو چکا ہے۔ بچا کاریہ بھی اگلے45دن میں پورا کر لیا جائیگا۔ دوار کے نرمان کی وجہ سے کسی کو کوئی دقت نہ ہو اسی وجہ سے سڑک کو بند کرنے کا نرنیہ لیا گیا ہے۔ اگلے کچھ دن میں دوار کا لینٹر ڈالا جائیگا۔ پھر فنشنگ کا کام ہوگا۔
ان ویکلپک سڑکوں کا کریں استعمال
اس مکھیہ سڑک کا استعمال لوگ کینٹونمینٹ بورڈ آفس,پی ڈبلیو ڈی آفس,انکم ٹیکس آفس,ڈی ای او آفس,پٹیل پارک اور رانی کا تالاب مندر میں جانے کے لئے کرتے ہیں۔ سڑک بند ہونے سے اب لوگوں کو ان آفس میں جانے لئے ناگریک اسپتال سے سٹی سڑک,کیپٹل چوک یا پھر بھگوان والمیکی چوک والی سڑک کا استعمال کرنا ہوگا۔
پرویش دواروں سے ایریا کو ملے گی پہچان
کینٹونمینٹ ایریا کو پرویش دواروں کی وجہ سے الگ پہچان ملے گی۔ یہ پرویش دوار نہ کیول کینٹونمینٹ ایریا کی پہچان بنینگے بلکہ خوبصورتی بھی بڑھائینگے۔ ان پر وشیش لائٹنگ کے ساتھ آس پاس ہریالی بھی بکھیری جائیگی۔ اس سے پہلے بورڈ نے ابھینندن دوار کا نرمان کیا ہے۔
پرویش دوار کے نرمان کی وجہ سے گیتا گوپال چوک سے کینٹونمینٹ ایریا میں جانے والی سڑک45دن کے لئے بند کی ہے۔ بورڈ کی اور سے پبلک نوٹس جاری کیا جا چکا ہے۔ سڑک بند ہونے سے لوگوں کو دقت ہوگی,لیکن ایریا کے وکاس کے لئے یہ ضروری ہے۔ ہم نہیں چاہتے که نرمان کے دوران یہاں سے گجر نے والے کسی راہگیر کو کوئی ہانی ہو۔
-اجے بویجا,وائس پریجیڈینٹ,کینٹونمینٹ بورڈ
... اور پڑھیں

میسیج بھیج لکھا 'ہیلو انکل,دو بار آپکی بیٹی کا گربھ پات کروایا,اب نہیں کراؤنگا'

ہیلو انکل۔ میں پرنس ہوں۔ میں نے آپکی بیٹی کا دو بار گربھ پات کروا دیا ہے۔ اب نہیں کرواؤنگا آپ اب بیٹی کو سنبھال لو۔ ہیلتھ کیئر سینٹر میں کام کرنے والی ایک یوتی کی ماں کے موبائل فون پر آئے اس میسیج سے پریوار میں ہڑکمپ مچ گیا۔

میسیج کے ساتھ ہی یوتی کی فوٹو بھی اسکے فرینڈ کے ساتھ بھیجی تھی۔ یوتی نے جب خود معاملے کی جانچ کی تو پتہ چلا که بدنام کرنے کی نیت سے اسکی بوا کی بیٹی نے یہ سازش رچی تھی۔ اب پولیس نے اسکے خلاف کیس درج کر جانچ شروع کی ہے۔

رشتیداروں نے نہیں کی مدد
کینٹ پولیس کو دی شکایت میں یوتی نے بتایا که وہ ہیلتھ کیئر سینٹر میں کام کرتی ہے۔16.08.2019کو اسکی ماں کے موبائل فون پر میسیج آیا تھا۔ میسیج کے ساتھ اسکی فرینڈ کے ساتھ فوٹو بھی بھیجی گئی تھی۔ میسیج میں لکھا تھا که که ہیلوانکل جی نمسکار,یہ آپکی لڑکی کا میں نے دو بار گربھ پات کروا دیا ہے۔

اب نہیں کرواؤنگا اپنی لڑکی کو سنبھال لو۔ میں پرنس ہوں۔ یوتی نے بتایا که ٹرو کالر کے ذریعے جب اسنے میسیج والے موبائل نمبر کا پتہ لگایا تو اس میں ایک لڑکی کے نامکے ساتھ اس پر پنجاب لکھا آیا۔ یہ نمبر پہلے سے ہی میرے فون میںسیو تھا۔ یہ میری بوا کی لڑکی کا نمبر تھا۔

یوتی نے بتایا کهبوا سے اسکی شکایت کی تو انہوں نے کوئی رسپانس نہیں دیا۔ پیڑتا کا آروپ ہے که اسے بدنام کرنے کی نیت سے اسکی بوا کی بیٹی نے یہ میسیج بھیجا تھا۔ پولیس نے یوتی کی شکایت پر معاملہ درج کر جانچ شروع کر دی ہے۔ ایس ایچ او نریندر سنگھ نے بتایا که جلد ہی آروپی کو قابو لیا جائیگا۔
... اور پڑھیں

اسپتال میں دو موتوں کے بعد پرجنوں کا ہنگامہ

امبالہ سٹی ناگریک اسپتال میں شنیوار کو اس سمیہ جم کر ہنگامہ ہوا جب دو الگ الگ معاملوں میں دو مریضوں کی موت کے بعد پرجن بھڑک گئے۔ گسائے پرجنوں نے آروپ لگاتے ہوئے کہا که وہ صبح ہی مریض کو اسپتال میں لیکر پہنچے تھے۔ جہاں ٹراما سینٹر میں ڈاکٹر نے اسے ڈرپ لگا دی اسکے بعد اسکا اپچار نہیں کیا۔ نہ ہی ڈاکٹر نے اسکی طرف دھیان دیا۔ جبکہ وہ باربار علاج کی گہار لگاتے رہے۔ جب پرجنوں کو پتہ چلا که انکے مریض کی موت ہو گئی تو انہوں نے ہنگامہ شروع کر دیا۔ ستھتی سنبھالنے کے لئے ڈاکٹر نے پولیس کو موقعے پر بلایا تب معاملہ شانت ہوا۔ اس دوران پرجنوں نے مہلا ڈاکٹر پر علاج میں لاپرواہی برتنے کا آروپ لگایا۔ معاملہ بڑھتا دیکھ مہلا ڈاکٹر نے اسپتال سے نکلنا ہی لازمی سمجھا۔ دوسرا معاملہ شکروار رات کا ہے۔
کینٹ کی ڈیفینس کالونی نواسی69ورشیہ جسمیر کو سانس لینے میں دقت ہوئی تو شنیوار صبح قریب9بجے اسکی پتنی سلوچنا و بیٹا قیصر سنگھ اسے لیکر شہر ناگارک اسپتال پہنچے۔ جہاں ڈاکٹرس نے اسے ڈرپ لگا دی۔ سلوچنا و قیصر سنگھ نے آروپ لگایا که دوپہر تک جسمیر سنگھ کی طبیعت ٹھیک نہیں ہوئی تو وہ باربار ڈیوٹی پر تعینات ڈاکٹر دیپکا گرگ کے پاس علاج کی گہار لگانے پہنچے۔ جہاں ڈاکٹر دیپکا گرگ نے بڑے ڈاکٹر کے آنے کی بات کہ کر علاج کرنے سے منا کر دیا۔
موت کا ذمیدار کون
جسمیر کے بیٹے و پتنی نے جب پریشان ہوکر ڈاکٹر دیپکا گرگ سے کہا که اگر آپ کا اپنا مریض ہوتا تو کیا اسکے ساتھ بھی ایسا ہی کرتے,اگر مریض کی طبیعت زیادہ خراب تھی تو اسے پی جی آئی ریفر کیوں نہیں کیا گیا۔ اس پر ڈاکٹر نے صفائی دیتے ہوئے کہا که مریض کو اسلئے ریفر نہیں کیا گیا که کہیں مریض راستے میں دم نہ توڑ دے۔ اسکے بعد ڈاکٹر نے سیکورٹی گارڈ و پولیس کو موقعے پر بلا لیا۔ اس بیچ ہنگامہ بڑھتا گیا اور مریض کے پرجنوں نے ڈاکٹر سے کہا که مریض کی موت کا ذمیدار کون ہے۔ غورطلب ہو که ڈاکٹر دیپکا پہلے بھی اسپتال میں کئی معاملوں کو لیکر ووادوں میں رہی ہیں۔ کچھ دن پورو پنا پرمکھ رام رتن گرگ پر بھی انہوں نے کئی آروپ جڑے تھے۔
دوسرے معاملے میں جاگرن میں جھانکیوں میں کام کرنے والا گاؤں سونڈا نواسی23ورشیہ گرجنٹ سنگھ اپنے چھوٹے بھائی نشو و جنڈلی نواسی دوست بھرت کے ساتھ بائک پر سوار ہوکر شکروار صبح ساڑھے11بجے اپنے دوست آشیش کے جھنڈلی ستھت گھر پر جا رہا تھا تو اسی بیچ حصار روڈ پر سیٹھی مارکیٹ کے پاس انکی بائک انینترت ہوکر ایک کار سے ٹکرا گئی۔ اسی بیچ بائک کار سے ٹکرانے کے بعد وہاں کھڑے ایک ٹرک سے ٹکرا گئی۔ حادثے میں گرجنٹ کو گمبھیر حالت میں ہی کار چالک نے ایک نجی اسپتال میں بھرتی کروایا,جہاں سے اسے شہر ناگریک اسپتال میں لایا گیا۔ گرجنٹ کے پتا کلدیپ سنگھ نے کہا که ڈاکٹروں نے گرجنٹ کو پراتھمک اپچار دینے کے بعد شام قریب5بجے اسے چھٹی دے دی۔ انہوں نے آروپ لگاتے ہوئے کہا که گرجنٹ کو جب وہ گھر لیکر پہنچے تو اسکی طبیعت اور زیادہ خراب ہو گئی۔ دیر شام قریب8بجے پرجن جب دوبارہ سٹی سول اسپتال لیکر جا رہے تھے که راستے میں ہی گرجنٹ نے دم توڑ دیا۔ شنیوار کو دوپہر تک جب اسکے شو کا پوسٹ مارٹم نہیں کیا گیا تو پرجنوں کا آکروش پھوٹ پڑا اور انہوں نے ہنگامہ کیا۔
آج تھی سگائی
گرجنٹ کے پتا کلدیپ سنگھ نے بتایا که کچھ دن پورو ہی انکے پریوار میں سے ہی5ورشیہ ایک بچی کی بھی اسپتال میں موت ہو گئی تھی۔ انہوں نے آروپ که اس بچی کو چکر آنے پر اسے سٹی سول اسپتال بھرتی کروایا گیا,لیکن اسکا بھی صحیح اپچار نہیں ہونے پر بچی کی بھی جان چلی گئی۔ کلدیپ سنگھ نے بتایا که گرجنٹ کا رایپررانی میں رشتہ ہوا تھا اور رویوار کو اسکی سگائی تھی۔
میڈیا کرمیوں کے سوالوں سے بچتی دکھی ڈاکٹر
شنیوار کو اسپتال میں جم کر ہوئے ہنگامے کے بعد جب پترکاروں نے ڈاکٹر دیپکا سے بات کرنی چاہی تو انہوں نے کچھ بھی کہنے سے منا کر دیا۔ میڈیا کرمیوں کو فوٹو کھینچنے سے انکار کرتے ہوئے آئی کارڈ دکھانے کے لئے کہہ دیا۔ لیکن اس سے جب ستھتی بگڑ گئی تو انہوں نے وہاں سے چپ چاپ نکلنا ہی لازمی سمجھا۔
دونوں معاملے میرے سنگیان میں ہیں۔ میرے پاس ابھی کسی کی شکایت نہیں آئی ہے۔ گرجنٹ کا پوسٹ مارٹم کرواکر پرجنوں کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ دونوں معاملوں میں جانچ شروع کر دی گئی ہے۔ جو بھی دوشی پایا جائیگا اسکے خلاف کارروائی اوشیہ کی جائیگی۔ میڈیا کرمیوں سے ابھدر ویوہار کو لیکر مجھے اگر کوئی شکایت آتی ہے تو اسکی بھی جانچ کروائی جائیگی۔
-پونم جین,سی ایم او,امبالہ
... اور پڑھیں

پنجاب اور چنڈیگڑھ جانا ہوا مہنگا,ہریانہ روڈ ویز نے بڑھایا کرایا,جانیں کتنی ہوئی وردھی

hospital
اگر آپ کو پانی پت ڈپو سے پنجاب یا چنڈیگڑھ جانا ہے تو اسکے لئے آپ کو اپنی جیب ڈھیلی کرنی ہوگی,کیونکہ روڈ ویز نے ٹول ٹیکس کی دروں کے بڑھائے جانے کے بعد اپنے کرائے میں کلومیٹر کے حساب سے بڑھوتری کر دی ہے۔ پنجاب روڈ ویز یہ بڑھوتری پہلے ہی کر چکا ہے۔ اس میں خاص بات یہ رہیگی که یہ کرایا کیول امبالہ تک سامانیہ یعنی پہلے جتنا ہی رہیگا۔

جیسے ہی بس پنجاب یا چنڈیگڑھ سیما میں پرویش کریگی,وہیں کلومیٹر کے حساب سے آپ کو زیادہ کرایا چکانا ہوگا۔ پرتی کلومیٹر کے حساب سے اس میں5روپے سے لیکر12روپے تک بڑھوتری کی گئی ہے۔ یہ بڑھوتری شکروار سے روڈ ویز نے لاگو کر دی گئی ہے۔ پہلے پانی پت سے چنڈیگڑھ کا کرایا170روپے تھا,لیکن نئی دروں کے بعد اب کرایا175روپے ہو گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں
امبالہ میں پکڑا گیا پاک ناگریک,بھارتیہ سم ملنے سے گہرایا شک,جانیں گجرات کنیکشن

اس نئے نیم کے انوسار اگر روڈ ویز بس1سے15کلومیٹر کے بیچ کا سفر تے کرتی ہے تو کرایے کے علاوہ دو روپے کا ٹیکس وصولا جائیگا۔ جیسے جیسے دوری بڑھےگی,ٹول کی راشی بھی کرائے میں بڑھتی ہوگی۔ یاتریوں پر50کلومیٹر تک کا سفر تے کرنے کے لئے پانچ روپے کا اترکت شلک دینا ہوگا۔ کوئی یاتری170کلومیٹر سے ادھک کا سفر تے کریگا تو اسے کرائے کے علاوہ12روپے زیادہ دینے ہو نگے۔
اتنا ہوگا کرایا

یہ تے کی گئی ہے دریں

کلومیٹر اتنی بڑھوتری
1سے15                     2روپے
16سے25                   3روپے
26سے30                  4روپے
31سے50                  5روپے
51سے70                 6روپے
71سے90                7روپے
91سے110              8روپے
111سے130             9روپے
131سے150            10روپے
151سے170            11روپے
171سے ادھک 12روپے

پنجاب کی طرف جانے والی بسوں کا کرایا بڑھا ہے۔ امبالہ تک یہ کرایا سامانیہ یعنی پہلے جتنا رہیگا۔ امبالہ سے چنڈیگڑھ یا پنجاب کی طرف جانے پر پرتی کلومیٹر کے حساب سے بڑھوتری کی گئی ہے۔کرمویر,ٹریفک منیجر,پانی پت ڈپو۔
... اور پڑھیں

بقایا بھگتان کے لئے کسانوں کا جل ستیاگرہ دوسرے دن بھی جاری

شہجادپر۔ ناراینگڑھ شوگر مل سے گنے کی بقایا راشی کی مانگ کو لیکر کسانوں کا جل ستیاگرہ شکروار کو دوسرے دن بھی جاری رہا۔ بھارتیہ کسان یونین و کسان سنگھرش سمتی کے بینر تلے کسان موجودہ پرائی ستر کی لگ بھگ100کروڑ روپے کی بقایا راشی کی مانگ کر رہے ہیں۔ کسانوں نے بیتے دن گاؤں بڑا گڑھ کے نکٹ بہہ رہی بیگنا ندی میں جل ستیاگرہ شروع کیا تھا جو ابھی جاری ہے۔ کسانوں کا کہنا تھا که جب تک انکی مانگ نہیں معنی جاتی تب تک جل ستیاگرہ جاری رہیگا۔
بھاکیو کے پردیش ادھیکش گرنام سنگھ چڈھونی نے کہا که کسان سرکار یا شوگر مل سے کوئی خیرات نہیں مانگ رہے,وہ اپنی فصل کا دام مانگ رہے ہیں۔ کسانوں کے خون پسینے کی کمائی آج شوگر مل مالک کے قبضے میں ہے اور وہ ایئر کنڈیشنڈ میں بیٹھ کر موج کر رہے ہیں۔ جبکہ کسان دھوپ و گرمی کے بیچ ندی میں جل ستیاگرہ کرنے کو مجبور ہیں۔ سرکار کا کوئی بھی نمائندہ انکی بات سننے نہیں آ رہا۔ سرکار کو کوئی چنتا نہیں وہ کیول ووٹ کے لئے ہی کسان ہتیشی بنی ہوئی ہے۔ کہا که کسانوں کی موجودہ پرائی ستر کی لگ بھگ100کروڑ روپے کی پیمینٹ بقایا ہے جبکہ آگامی سیزن کے لئے لگ بھگ300کروڑ روپے کا گنا کسان کے کھیت میں کھڑا ہے۔ مکھیہ منتری کو چاہئیے تھا که وہ کسانوں کی سمسیا کا حل کرتے۔ دھرناستھل پر الگ الگ پارٹیوں کے نیتاؤں نے بھی کسانوں کو سمرتھن دیا,جہاں کانگریس پردیش پروکتا سکھوندر نعرہ,ناراینگڑھ بار ایسوسی ایشن کے ادھوکتا دھرم ویر ڈھینڈسا,ججپا نیتا رام سنگھ کوڑوا,جلا پریشد کے وائس چیئرمین رجنیش شرما,انیلو نیتا تیجپال شرما پتریہڑی,ٹپر ایسوسی ایشن ناراینگڑھ کے سدسیہ آدی بھی دھرناستھل پر موجود رہے۔ وہیں بیمار کسانوں کو سی ایچ سی شہجادپر سے پہنچے ڈاکٹروں کی ٹیم نے دوا دی اور انکا سواستھیہ جانچا۔
... اور پڑھیں

59ایم ایم بارش سے شہر میں بھرا پانی

امبالہ سٹی۔ ضلعے میں شکروار کو دوپہر بعد رک رک کر ہوئی قریب2گھنٹے ہوئی59ایم ایم بارش سے سیکٹروں سمیت پاش علاقوں میں بھی پانی بھر گیا۔ سیکٹر 9و10کی ستھتی سب سے زیادہ خراب رہی۔ یہاں سڑکوں پر کئی کئی فٹ پانی جمع ہو گیا۔ ادھر بارش کے کارن کئی رہایشی کالونیوں میں بھی پانی بھر گیا۔ کئی بازاروں کی دوکانوں میں بھی پانی گھس گیا,جسکے کارن دوکانداروں کو نقصان ہوا۔ حیرانی کی بات تو یہ ہے که ودھایک کے گھر کے چند قدموں کی دوری پر ستھت روڈ ویز کاریالیہ کے پاس ہلکی برسات میں بھی پانی جمع ہو جاتا ہے۔ وہیں شکروار شام شہر بس سٹینڈ میں جمع کیچڑ میں ایک بس دھنس گئی,جسے جیسیبی کی مدد سے باہر نکالنے میں تین گھنٹے سے بھی زیادہ سمیہ لگا۔ یہ امبالہ سے ناراینگڑھ روٹ کی یہ بس شام4بجے بس سٹینڈ میں آئی تو آدھے گھنٹ بعد اسے واپس روٹ پر نکلنا تھا,لیکن اس دوران بس سٹینڈ میں جمع کیچڑ کی وجہ سے بس وہیں جام ہو گئی۔ جسکے بعد انیہ گاڑی کو موقعے پر منگوا کر روٹ پر بھیجا گیا۔
پاش علاقے بھی ہوئے لبالب
برسات کے کارن سیکٹر 8, 9و10سہت شہر کے پاش علاقوں میں بھی کئی فٹ پانی جمع ہو گیا۔ ان سیکٹرس میں پانی نکاسی کی بہتر ویوستھا نہ ہونے کے کارن اکثر بارش میں جلبھراو ہوتا ہے۔ سیکٹرواسی اس سمسیا سے بیحد پریشان ہیں۔ مگر ہڈا کی اور سے کبھی اس سمسیا کا سمادھان نہیں ہو پایا ہے۔
یہاں ہے زیادہ پریشانی
شہر میں ان کو پل,چھوٹا بازار,جگادھری گیٹ پلی,پٹیل روڈ,کچہری روڈ,چرخی موہلہ,ٹی بی اسپتال روڈ,نصیرپور,درگا نگر کیتھ ماجری,ناہن ہاؤس میں بارش کا پانی جمع ہو گیا۔ یہاں برساتی سیزن میں ایسی ہی ستھتی بنتی ہے۔ یہاں نکاسی کا کوئی پربندھ نہیں ہے,جسکے کارن پانی کی سمسیا گمبھیر ہو گئی ہے۔
کسانوں کے لئے فائدےمند رہی برسات
شکروار کو ہوئی برسات سے جہاں موسم خوشگوار ہو گیا۔ وہیں برسات کسانوں کے لئے فائدےمند رہی۔ قریب دو ماہ پورو کھیتوں میں جوتی گئی دھان کی فصل کو ادھک پانی کی ضرورت ہے۔ اسی کے تحت شکروار کو رک رک کر ہوئی برسات سے دھان کے کھیتوں میں پانی کی ضرورت کو پورا کرنے میں مدد کی۔
... اور پڑھیں

کینٹ میں77.44کروڑ کی لاگت سے بنےگا100بیڈ کا نیا اسپتال

امبالہ۔ ودھان سبھا چناؤ سے پہلے کینٹ کے لوگوں کو نئے ناگریک اسپتال کی سوغات مل گئی ہے۔ کینٹ کے ناگریک اسپتال میں77.44کروڑ روپے کی لاگت سے100بیڈ کے نئے آٹھ منزلہ اسپتال کا نرمان کیا جائیگا۔ نئے بھون میں دو بیسمینٹ ہونگی,جسمیں ایک کار پارکنگ اور چھہ منزلہ عمارت ہوگی۔ نئے بھون کا نرمان کاریہ دو ورش میں پورا ہوگا۔ سواستھیہ منتری انل وج نے شکروار کو کسی چلاکر اسپتال کے نئے بھون نرمان کا شلانیاس کیا۔
غور ہو که کینٹ میں ابھی100بیڈ کا اسپتال ہے۔ یہاں مریضوں کو سیٹی سکین,ڈایلسس,کیتھ لیب سمیت کئی طرح کی اتیادھنک سودھائیں مل رہی ہیں۔ اسی وجہ سے اب اسپتال میں روزانہ2500سے زیادہ مریض اپچار کے لئے پہنچ رہے ہیں۔ مریضوں کی بڑھتی سنکھیا کی وجہ سے ہی کینٹ کے ناگریک اسپتال میں100بیڈ کے نئے اسپتال کے نرمان کا نرنیہ لیا گیا۔ اسپتال پرسر میں پہلے سے ہی کینسر کیئر اسپتال کا نرمان چل رہا ہے۔ اگلے مہینے میں اسکا نرمان پورا ہونے کے بعد کیں ناگریک اسپتال میں کل ملاکر250بیڈوں کی ویوستھا ہوگی۔ نئے اسپتال کے نرمان کاریہ کے شبھ ارمبھ پر ڈی جی ہیلتھ ڈا.ستیش اگروال,ایس ڈی ایم سبھاش چند,سی ایم او ڈا.پونم جین,ایسئیمؤ ڈا.ستیش,بھاجپا نیتا سوم چوپڑا,جسبیر سنگھ جسی,راجیو ڈمپل,للت چودھری,میڈیا پر بھاری وجیندر چوہان,مستان سنگھ,سنجے لاکڑا,تشار,مدن لال شرما,بلکیش وتس,ردھنیر سنگھ,شمشیر,ونت گپتا,رام بابو,پرمجیت,گروندر گرنالا,اوم پرکاش سکھوجا,بھرت کوچھڑ بھی موجود رہے۔
نئے بھون میں یہ ملینگی سودھائیں
آٹھ منزلہ بھون میں دو بیسمینٹ ہونگی۔ اس میں46کاروں کو ایک ساتھ پارک کرنے کی ویوستھا ہوگی۔ گرانؤڈ پھلور پر ڈاکٹروں کے لئے سٹیلٹ پارکنگ(16کار)ہوگی۔ اسکے ساتھ ہی یہاں پر رجسٹریشن کے ساتھ رسیپشن سینٹر کی بھی سودھا ملے گی۔ پہلے پھلور پر گاینی وارڈ,لیبر روم کی ویوستھا ہوگی۔ دوسرے پھلور پر آئیبیو اور بال چکتسا کی ویوستھا ہوگی۔ تیسرے پھلور پر پرائیویٹ وارڈ اور سامانیہ وارڈ بنائے جا ئینگے۔ چوتھے پھلور پر وارڈ ایوں آپریشن تھئیٹر اور پانچویں پھلور پر کینٹین ایوں پرشاسنک بھون کی ویوستھا ہوگی۔
اسپتال کا اپنا ہوگا بجلی اسٹیشن
نئے بھون میں اسپتال میں بجلی آپورتی کے لئے سب اسٹیشن کی ستھاپنا بھی ہوگی۔ اسکے علاوہ پوسٹ مارٹم روم کے ساتھ یہاں پانی آپورتی کے لئے ٹیوبویل بھی لگایا جائیگا۔ مریضوں و دوسرے لوگوں کے یہاں مندر کا بھی نرمان کیا جائیگا۔ ایئر کنڈیشنڈ,میڈکل و گیسیج سے جڑی سودھاؤں کی بھی یہاں ویوستھا ہوگی۔
یہ بالکل صحیح ہے که مریضوں کی بڑھتی سنکھیا کی وجہ سے ناگریک اسپتال کو اپ گریڈ کرنے کا نرنیہ لیا گیا ہے۔ قریب دو سال میں یہ بھون بن کر پوری طرح تیار ہو جائیگا۔ اس میں مریضوں کو اتیادھنک سودھائیں ملینگی۔ میں چاہتا ہوں که میری ودھان سبھا کے لوگوں کو اپچار کے لئے کہیں دوسری جگہ بھٹکنا نہ پڑے۔ اسی وجہ سے اسپتال کو اپ گریڈ کرنے کا نرنیہ لیا گیا۔
-انل وج,سواستھیہ منتری,راجیہ سرکار
----
ادھر, 72کروڑ سے اپ گریڈ ہوگا سٹی اسپتال
سٹی کا سول اسپتال بھی اپ گریڈ ہونے جا رہا ہے۔ حالانکہ یہاں چھہ مہینے پہلے100بیڈ کے نئے اسپتال کا نرمان شروع ہوا تھا۔ مگر ابھی تک10فیصدی کاریہ ہی ہو پایا ہے۔ بھون کے لئے ابھی بیسمینٹ کی کھدائی کا ہی کام چل رہا ہے۔72کروڑ کی لاگت سے بننے والے اس اسپتال میں بھی مریضوں کو اتیادھنک سودھائیں دینے کی بات کہی جا رہی ہے۔ ابھی سٹی کا اسپتال200بیڈ کا ہے۔ یہاں روزانہ مریضوں کی او پی ڈی ایک ہزار سے زیادہ ہے۔ اسی وجہ سے اپچار کے لئے داخل ہونے والے مریضوں کو خاصی دقت ہوتی ہے۔ نئے بھون میں زچہ بچہ وارڈ کے ساتھ پرشاسنک بھون کے ساتھ پرانے نیا آپریشن تھئیٹر بھی بنایا جائیگا۔ پانچ منزلہ نئے بھون میں بیسمینٹ کے ساتھ مریضوں کو کئی طرح کی سودھائیں ملینگی۔
سٹی کے سول اسپتال کو بھی اپ گریڈ کرنے کا کام چل رہا ہے۔ چھہ مہینے پہلے شروع ہوئے نئے بھون میں مریضوں کے لئے100بیڈ کی ویوستھا ہوگی۔ زچہ بچہ سمیت کئی وارڈ یہاں شفٹ کئے جا ئینگے۔ مریضوں کو یہاں اتیادھنک سودھائیں ملینگی۔ یہ اسپتال ابھی200بیڈ کا ہے۔ یہاں روزانہ مریضوں کی او پی ڈی1500سے زیادہ ہیں۔ نئے بھون میں مریضوں کو سپر سپیشلسٹی اسپتال جیسی سودھائیں ملینگی۔-اثیم گوئل,ودھایک,امبالہ سٹی
... اور پڑھیں

کھانے کو لیکر وواد میں بالبندی پر نکیلی چیز سے حملہ,گھائل

امبالہ سٹی۔ بال سدھار گرہ میں کھانے کو لیکر ایک بار پھر بوال ہوا۔ ہتیاروپی بالبندی پر اسکے دو ساتھیوں نے کیلنما چیز سے حملہ کر اسے گھائل کر دیا گیا۔ آروپتوں نے ہتیاروپی بال بندی کی کمر اور چہرے پر وار کر اسے لہولہان کر دیا۔ گھائل کو سٹی کے ناگریک اسپتال لے جایا گیا۔ پراتھمک اپچار کے بعد اسکی حالت میں سدھار ہے۔ میڈکل رپورٹ کے آدھار پر بال سدھار گرہ کے ہیڈ وارڈر رامرتن نے چوکی نمبر پانچ میں شکایت دی۔ اسی آدھار پر کوتوالی تھانے میں دو بال بندیوں کے خلاف کیس درج کر تفتیش شروع کر دی گئی۔ پولیس آروپیوں کو پروڈیکشن وارنٹ پر لیکر معاملے کی تفتیش کریگی۔ وہیں سدھار گرہ میں سوئے جیسے نکیلی چیز کیسے پہنچی یہ بھی جانچ کی جائیگی۔
اس طرح ہوئی واردات
جانکاری کے انوسار بال سدھار کے ادھیکشک کچھ دنوں سے چھٹی پر ہیں۔ جیل کا کاریبھار ہیڈوارڈر رامرتن سنبھال رہے ہیں۔ رامرتن نے پولیس کو بتایا که صبح قریب آٹھ بجے ایک بالبندی انکے پاس آیا۔ یہ بالبندی کیتھل میں ہوئی ہتیا کے معاملے میں یہاں بند ہے۔ اسکے کپڑوں پر خون لگا تھا۔ انہیں بتایا که اسکے ساتھ بند دو انیہ سہیوگیوں نے اسکی کمر و چہرے پر سوئے سے وار کر اسے گھائل کر دیا۔ ہیڈوارڈر نے سہیوگی روی کے ساتھ ملکر اسے اسپتال پہنچایا۔ میڈکل رپورٹ میں تین چوٹیں لگی بتائی گئی ہیں۔ پرارمبھک جانچ میں سامنے آیا ہے که کھانے کو لیکر بالبندیوں میں وواد ہوا۔
14اپریل کو ہو چکی بڑی واردات
14اپریل کو امبالہ کے ہی بال سدھار گرہ میں بال بندیوں نے جم کر ہنگامہ کیا تھا۔ اس معاملے میں پولیس نے آتے ہی اتپات مچانے والے بال بندیوں کے ساتھ انکے ساتھ کھڑے انیہ بال بندیوں پر بھی لاٹھیاں تک برسا دی تھیں۔۔ گھٹنا میں20بال بندیوں کو چوٹیں آئیں تھیں۔ اس دوران بال سدھار گرہ میں ٹی وی کو لیکر وواد ہوا تھا۔
کھانے کو لیکر وواد ہونا بتایا جا رہا ہے۔ لیکن صحیح کارن جانچ کے بعد ہی سپشٹ ہو سکیں گے۔ آروپیوں کو پروڈیکشن وارنٹ پر لانے کے بعد آروپی بندیوں سے پوچھ تاچھ کی جائیگی۔
-اجیب سنگھ,انسپیکٹر,کوتوالی تھانہ۔
... اور پڑھیں
اپنے شہر کی سبھی خبر پڑھنے کے لئےamarujala.comپر جائیں

Disclaimer

اپنی ویب سائٹ پر ہم ڈاٹا سنگرہ ٹولس,جیسے کی ککیج کے مادھیم سے آپکی جانکاری ایکتر کرتے ہیں تاکہ آپ کو بہتر انبھو پردان کر سکیں,ویب سائٹ کے ٹریفک کا وشلیشن کر سکیں,کانٹینٹ ویکتیگت طریقے سے پیش کر سکیں اور ہمارے پارٹنرس,جیسے کیGoogle,اور سوشل میڈیا سائٹس,جیسے کیFacebook,کے ساتھ لکشت وگیاپن پیش کرنے کے لئے اپیوگ کر سکیں۔ ساتھ ہی,اگر آپ سائن اپ کرتے ہیں,تو ہم آپ کا ای میل پتہ,فون نمبر اور انیہ وورن پوری طرح سرکشت طریقے سے سٹور کرتے ہیں۔ آپ ککیج نیتی پرشٹھ سے اپنی ککیج ہٹا سکتے ہے اور رجسٹرڈ یوجر اپنے پروفائل پیج سے اپنا ویکتیگت ڈاٹا ہٹا یا ایکسپورٹ کر سکتے ہیں۔ ہماریCookies Policy, Privacy PolicyاورTerms & Conditionsکے بارے میں پڑھیں اور اپنی سہمتی دینے کے لئےAgreeپر کلک کریں۔

Agree
Web Tranliteration/Translation