دھندھا پانی
پلےبیک آپکے اپکرن پر نہیں ہو پا رہا

دیش میں روزگار کی حالت پچھلے45سالوں میں سب سے خراب ہے?

2019سرکار نے پچھلے دنوں انترم بجٹ پیش کیا...بجٹ بھاشن میں وت منتری نے یہ ضرور کہا که پچھلے دو سالوں میںappxxدو کروڑ نوکریوں کے موقعے بنے,لیکن ایک بار پھر ان آنکڑوں پر سوال اٹھنے لگے.

نیشنل سیمپل سروے آفس یعنی اینئیسئیسؤ کے لیک ہوئے ایک سروے میں دعویٰ کیا گیا ہے که اس وقت دیش میں روزگار کی حالت پچھلے45سالوں میں سب سے خراب ہے.رپورٹ میں کہا گیا ہے کهLFPRنوٹبندی کے بعد کافی گر گیا ہے اور سب سے زیادہ مار پڑی ہے.نیتی آیوگ کا کہنا ہے که یہ رپورٹ فائنل نہیں ہے.

پچھلے دنوں سینٹر فار مانیٹرنگ انڈین اکونامی یعنیCMIEنے بیروجگاری کا ڈیٹا پیش کیا تھا,جسمیں کہا گیا ہے که بیتے ایک سال میں یعنی سال2018میں قریب1.10کروڑ بھارتیوں کو اپنی نوکریوں سے ہاتھ دھونا پڑا,جن میں مہلاؤں کی سنکھیا88لاکھ رہی اور22لاکھ پرش بیروزگار ہوئے.

رپورٹ کے انوسار بھارت میں سال2018میں بیروجگاری کی در7.4فیصدی تھی,یہ پچھلے15مہینے میں سب سے ادھک تھی.

(بی بی سی ہندی کے اینڈرائیڈ ایپ کے لئے آپیہاں کلککر سکتے ہیں.آپ ہمیںفیسبک, ٹوٹّر, انسٹاگراماوریوٹیوبپر فالو بھی کر سکتے ہیں.)

ملتے جلتے مدعے