Loading...
Madhya Pradesh News In Hindi : Government said - tripping due to bats |بجلی سنکٹ کے لئے سرکار نے چمگادڑوں کو ٹھہرایا ذمیدار,کہا انھیں کے کارن ہو رہی ٹرپنگ- Dainik Bhaskar

مپر/ بجلی سنکٹ کے لئے سرکار نے چمگادڑوں کو ٹھہرایا ذمیدار,کہا انھیں کے کارن ہو رہی ٹرپنگ



Government said - tripping due to bats
X
Government said - tripping due to bats

  • ودھان سبھا میں اور جا منتری پریورت سنگھ نے ایک پرشن کے اتر میں یہ بات کہی
  • بجلی کی لائن میں ٹرپنگ کے مسئلے پر ودھان سبھا میں پکش وپکش میں نوک جھونک

Dainik Bhaskar

Jul 12, 2019, 07:45 AM IST

بھوپال. چمگادڑوں کے کارن بجلی کی لائن میں ٹرپنگ کے مسئلے کو لیکر گرووار کو ودھان سبھا میں پکش وپکش میں جم کر نوک جھونک ہوئی۔ اور جا منتری پریورت سنگھ نے ایک پرشن کے اتر میں یہ بات کہی تھی۔ بھاجپا ودھائکوں نے اس سمبندھ میں کی گئی ایک ٹپنی پر وت منتری ترون بھنوت سے معافی کی مانگ بھی کی۔ 


معاملے کی شروعات یشپال سنگھ سسودیا کے بجلی کٹوتی کو لیکر ایک پرشن پر اور جا منتری پریورت سنگھ کے اتر کے دوران ہوئی۔ نیتا پرتپکش گوپال بھارگو نے کہا که اتر میں چمگادڑ کے کارن ٹرپنگ کی بات کہی گئی ہے۔ منتری یہ بتا دیں که چمگادڑ کتنی تھیں اور انکے کارن کتنی بار ٹرپنگ ہوئی ہے۔ اس پر بھنوت نے ایک ٹپنی کر دی۔ بھاجپا کے بھوپیندر سنگھ نے اس پر آپتی کرتے ہوئے کہا که منتری کو معافی مانگنی چاہئیے۔ ہری شنکر کھٹیک نے بھی آپتی کی۔ ادھیکش این پی پرجاپتی نے بھنوت کی ٹپنی کو ولوپت کروا دیا,لیکن اسے لیکر کافی دیر تک ہنگامہ چلتا رہا۔

 

سنگھ نے اسے گھور آپتیجنک بتایا,وہیں بھنوت کہتے رہے که انہوں نے کچھ آپتیجنک نہیں کہا۔ دونوں کے بیچ جم کر بحث ہوئی۔ بھارگو نے بھی اسے سدن کے سدسیوں کے سمان کا معاملہ بتایا۔ پرجاپتی کے سمجھانے کے بعد اور جا منتری نے جواب دیا۔ انہوں نے معاملے کو سپشٹ کرتے ہوئے کہا که چمگادڑ کی سمسیا صرف اتر بھوپال شیتر میں ہے,باقی جگہ نہیں۔ تالاب کے کنارے کارن وہاں اس طرح کی دقت آتی ہے۔ انہوں نے بجلی کٹوتی کے لئے اپکرنوں کی گنوتا پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا که اسکی وجہ سے پریشانی ہو رہی ہے۔ یہ اپکرن پہلے خریدے گئے تھے۔

 

مینٹین نینس کے نام پر کھاناپورتی کی گئی۔ اپرشکشت لوگوں سے مینٹین نینس کا کام کرانے پر انہوں نے کہا که یہ نیکتیاں ہماری سرکار نے نہیں کی ہیں۔ ایک انیہ پرشن کے اتر میں سنگھ نے بتایا که پردیش کی تینوں ودیت وترن کمپنیوں نے مارچ اپریل2019میں کل225ادھیکاریوںکرمچاری کو وبھن کارنوں سے نلمبت کیا ہے۔

 

کانگریس نے دستاویز جاری کر بھاجپا کو گھیرا: ودھان سبھا میں چمگادڑ کے کارن ٹرپنگ کو لیکر ہنگامہ ہوا اور سدن کے باہر پردیش ادھیکش کے میڈیا سمنویک نریندر سلوجا نے دستاویز جاری کر بھاجپا کو گھیرا۔ انہوں نے کہا که بھاجپا سرکار کے دوران10سے30مئی2018کے دوران کملا پارک شیتر میں رات12سے اپراہن4بجے تک35بار ٹرپنگ ہوئی۔ اور جا منتری نے تتھیاتمک روپ سے ہی اپنی بات سدن میں رکھی ہے۔

COMMENT
Web Tranliteration/Translation