Loading...
Chandrayaan 2 Moon Mission: ISRO Chandrayaan 2 Launch Latest News, First time a spacecraft will land on lunar South Pole |پہلی بار کوئی یان چاند کے دکشنی دھرو پر اتریگا,بھارت کی کامیابی سے وہاں بیس کیمپ بنانے کی سنبھاونائیں بڑھینگی- Dainik Bhaskar
  • Hindi News
  • National
  • Chandrayaan 2 Moon Mission: ISRO Chandrayaan 2 Launch Latest News, First time a spacecraft will land on lunar South Pole

چندریان 2 / پہلی بار کوئی یان چاند کے دکشنی دھرو پر اتریگا,بھارت کی کامیابی سے وہاں بیس کیمپ بنانے کی سنبھاونائیں بڑھینگی



Chandrayaan 2 Moon Mission: ISRO Chandrayaan 2 Launch Latest News, First time a spacecraft will land on lunar South Pole
X
Chandrayaan 2 Moon Mission: ISRO Chandrayaan 2 Launch Latest News, First time a spacecraft will land on lunar South Pole

  • شریہرکوٹا کے ستیش دھون انترکش کیندر سے15جولائی کو تڑکے2:51بجے چندریان 2اڑان بھریگا
  • یہ53سے54دن کے سفر کے بعد چندرما کے دکشنی دھرو پر اتریگا اور 14دن تک ڈیٹا جٹائیگا
  • چندریان 2کی سپھل لینڈنگ کے ساتھ ہی بھارت چاند کی سطح پر پہنچنے والا دنیا کا چوتھا دیش بنےگا
  • ایکسپرٹ ترون شرما کے مطابق دکشنی دھرو پر پانی ملنے کی سنبھاونا سب سے زیادہ

Dainik Bhaskar

Jul 20, 2019, 09:26 PM IST

نئی دہلی.چندریان 2دنیا کا پہلا ایسا یان ہوگا,جو چاند کے دکشنی دھرو پر اتریگا۔ اس سے پہلے چین کے چانگ'ای4یان نے دکشنی دھرو سے کچھ دوری پر لینڈنگ کی تھی۔ اب تک یہ شیتر وگیانکوں کے لئے انجان بنا ہوا ہے۔ چاند کے باقی حصے کی تلنا میں زیادہ چھایا ہونے کی وجہ سے اس شیتر میں برف کے روپ میں پانی ہونے کی سنبھاونا زیادہ ہے۔ اگر چندریان 2چاند کے دکشنی دھرو پر برف کی کھوج کر پاتا ہے,تو یہاں انسانوں کے رکنے لائق ویوستھا کرنے کی سنبھاونائیں بڑھ جائینگی۔ یہاں بیس کیمپ بنائے جا سکیں گے۔ ساتھ ہی انترکش میں نئی کھوج کا راستہ کھلیگا۔

 

چندرما کا دکشنی دھرو:ایسی جگہ جہاں بڑے کریٹرس ہیں اور سوریہ کی کرنیں نہیں پہنچ پاتیں

 

  • چاند کے دکشنی دھرو پر اگر کوئی انترکش یاتری کھڑا ہوگا تو اسے سوریہ شتج ریکھا پر دکھائی دیگا۔ وہ چاند کی سطح سے لگتا ہوا اور چمکتا نظر آئیگا۔ سوریہ کی کرنیں دکشنی دھرو پر ترچھی پڑتی ہیں۔ اس کارن یہاں تاپمان کم ہوتا ہے۔
  • سپیس انڈیا کے ٹریننگ انچارج ترون شرما بتاتے ہیں که چاند کا جو حصہ سورج کے سامنے آتا ہے,وہاں کا تاپمان130ڈگری سیلسیس سے اوپر پہنچ جاتا ہے۔ اسی طرح چاند کے جس حصے پر سورج کی روشنی نہیں آتی,وہاں تاپمان130ڈگری سیلسیس سے نیچے چلا جاتا ہے۔ لہٰذا,چاند پر ہر دن(پرتھوی کے14دن)تاپمان بڑھتا چڑھتا رہتا ہے,لیکن دکشنی دھرو پر تاپمان میں زیادہ بدلاؤ نہیں ہوتا۔ یہی کارن ہے که وہاں پانی ملنے کی سنبھاونا سب سے زیادہ ہے۔

 
چندریان 2کی کامیابی سے انترکش وگیان کے لئے نئے راستے کھلینگے 


1)پانی اور کھنجوں کی کھوج 
چندریان 2چاند کے دکشنی دھرو پر میگنیشیم,کیلشیم اور لوہے جیسے کھنجوں کو کھوجنے کا پریاس کریگا۔ وہ چاند کے واتاورن اور اسکے اتہاس پر بھی ڈیٹا جٹائیگا۔ لیکن اسکا سب سے خاص مشن وہاں پانی یا اسکے سنکیتوں کی کھوج ہوگی۔ اگر چندریان 2یہاں پانی کے ثبوت کھوج پاتا ہے تو یہ انترکش وگیان کے لئے ایک بڑا قدم ہوگا۔ دکشنی دھرو کے کریٹرس میں سوریہ کی کرنیں نہیں پہنچ پاتیں۔ اسکے کارن ان میں جمع پانی اربوں سالوں سے ایک جیسا ہو سکتا ہے۔ اسکا ادھئین کر شروعاتی سولر سسٹم کے بارے میں اہم جانکاری مل سکتی ہے۔ 

 

2)بیس کیمپ بنانے کی سنبھاونائیں مضبوط ہونگی 
ایسٹرونامی ایکسپرٹ ترون شرما بتاتے ہیں که چاند پر پانی نہ ہونے کے چلتے وہاں ابھی انترکش یاتری زیادہ دن نہیں رہ سکتے۔ چندریان 2اگر یہاں برف کھوج پاتا ہے,تو یہ سمسیا ختم ہو جائیگی۔ برف سے پینے کے پانی اور آکسیجن کی ویوستھا ہو سکیگی۔ ترون کہتے ہیں که پانی اور آکسیجن کی ویوستھا ہوگی تو چاند پر بیس کیمپ بنائے جا سکیں گے,جہاں چاند سے جڑے شودھکاریہ کے ساتھ ساتھ انترکش سے جڑے انیہ مشن کی تیاریاں بھی کی جا سکینگی۔ 

 

3)چندرما انترکش میں نیا لانچ پیڈ بن سکےگا
ترون کا کہنا ہے که انترکش ایجنسیاں منگل گرہ تک پہنچنے کے لئے چاند کو لانچ پیڈ کی طرح استعمال کر پائینگی۔ اسکے علاوہ یہاں پر جو بھی منرلس ہو نگے,انکا بھوشیہ کے مشن میں استعمال کر سکیں گے۔ اس سے انترکش مشن کا خرچ کم ہوگا۔ چاند سے منگل گرہ پر پہنچنے میں سمیہ بھی کم لگےگا۔ اسی طرح باقی گرہوں کے لئے بھی مشن لانچ کرنے میں آسانی ہوگی۔

 

4)چاند پر اور جا پیدا کی جا سکیگی
دکشنی دھرو میں ایک حصہ ایسا بھی ہے,جو نہ تو زیادہ ٹھنڈا ہے اور نہ ہی اندھیرے میں رہتا ہے۔ یہاں کے شیکلٹن کریٹرس کے پاس والے حصوں میں سوریہ لگاتار200دنوں تک چمکتا ہے۔ یہاں پر انترکش وگیانکوں کو شودھکاریہ میں بڑی مدد مل سکتی ہے۔ یہاں وگیانک سوریہ کی کرنوں کا اپیوگ کر اور جا کی آپورتی کر سکتے ہیں,جو مشینوں اور انیہ شودھکاریہ کے لئے ضروری ہوگی۔

 

امریکہ2024میں دکشنی دھرو پر بھیجیگا مانو مشن
امریکہ کی انترکش ایجینسی ناسا بھی دکشنی دھرو پر جانے کی تیاری کر رہی ہے۔2024میں ناسا چاند کے اس حصے پر انترکش یاتریوں کو اتاریگا۔ اپریل2019میں آئی ناسا کی ایک رپورٹ کے انوسار,چاند کے اس ان دیکھے حصے پر پانی ہونے کی سنبھاوناؤں کے کارن ہی ناسا یہاں انترکش یاتری بھیجیگا۔ رپورٹ کے مطابق,چاند پر لمبے سمیہ تک شودھکاریہ کرنے کے لئے پانی بہت ضروری سنسادھن ہے۔ ناسا کے مطابق,آربٹروں سے پریکشنوں کے آدھار پر ہم کہہ سکتے ہیں که چاند کے دکشنی دھرو پر برف ہے اور یہاں انیہ کئی پراکرتک سنسادھن بھی ہو سکتے ہیں۔ پھر بھی اس حصے کے بارے میں ابھی بہت سی جانکاریاں جٹانا ہے۔

 

چندریان 2

COMMENT

آج کا راشی پھل

پائیں اپنا تینوں طرح کا راشی پھل,روزانہ
Web Tranliteration/Translation