Loading...
Himachal chandigarh News In Hindi : Ramchandra Chhatrapati Case Verdict from panchkula CBI court live and update |رام رحیم سے جڑے ایک اور معاملے میں فیصلہ آج, 16سال پہلے ہوئی تھی پترکار کی ہتیا- Dainik Bhaskar

ہریانہ/ رام رحیم سے جڑے ایک اور معاملے میں فیصلہ آج, 16سال پہلے ہوئی تھی پترکار کی ہتیا



Ramchandra Chhatrapati Case Verdict from panchkula CBI court live and update
Ramchandra Chhatrapati Case Verdict from panchkula CBI court live and update
Ramchandra Chhatrapati Case Verdict from panchkula CBI court live and update
X
Ramchandra Chhatrapati Case Verdict from panchkula CBI court live and update
Ramchandra Chhatrapati Case Verdict from panchkula CBI court live and update
Ramchandra Chhatrapati Case Verdict from panchkula CBI court live and update

  • اکتوبر2002میں پترکار رامچندر چھترپتی حملہ ہوا تھا,ایک مہینے بعد موت ہوئی
  • رام رحیم مکھیہ آروپی,معاملے میں تین انیہ لوگوں پر بھی آروپ
  • سادھوی یون شوشن معاملے میں20سال کی سجا کاٹ رہا رام رحیم

Dainik Bhaskar

Jan 11, 2019, 07:07 AM IST

پنچکولہ/پانی پت(امت شرما). سرسہ کے پترکار رامچندر چھترپتی کی ہتیا کے معاملے میں شکروار کو سی بی آئی کی وشیش عدالت نے رام رحیم سمیت چار کو دوشی قرار دیا۔17جنوری کو چاروں کو سجا سنائی جائیگی۔2جنوری کو سی بی آئی کورٹ نے16سال پرانے اس معاملے کے آروپی گرمیت رام رحیم,نرمل,کلدیپ اور کشن لال کو کورٹ میں پیش ہونے کے آدیش دیئے تھے۔ فیصلہ جج جگدیپ سنگھ نے سنایا۔ انہوں نے ہی سادھوی یون شوشن معاملے میں رام رحیم کو سجا سنائی تھی۔

 

رام رحیم کو کم سے کم عمر قید کی سجا سنائی جا سکتی ہے
پنچکولہ کورٹ میں رام رحیم ویڈیو کانپھرینسنگ کے ذریعے پیش ہوا۔ کورٹ نے رام رحیم اور کشن لال کو آئی پی سی کی دھارا120بی, 302کا دوشی ٹھہرایا۔ وہیں,کلدیپ اور نرمل کو120بی, 302اور آرمس ایکٹ کا دوشی ٹھہرایا ہے۔ دھارا302میں کم سے کم عمر قید اور زیادہ سے زیادہ پھانسی کی سجا ہو سکتی ہے۔ فیصلے کے بعد پترکار چھترپتی کے بیٹے انشل نے کہا که ہمیں لمبے سنگھرش کے بعد نیائے ملا۔ ہم نے ویڈیو کانپھرینسنگ سے رام رحیم کو دیکھا۔ اسکی داڑھی سفید ہو چکی ہے۔ چہرہ ڈھل چکا ہے۔ اسنے پتہ نہیں کتنے غلط کام کئے ہیں۔ اسے پھانسی کی سجا دی جانی چاہئیے۔

 

رامچندر کے ذریعے ہی یون شوشن معاملہ سامنے آیا تھا
سادھوی یون شوشن معاملے میں جو لیٹر لکھے گئے تھے, انہیں کے آدھار پر رامچندر چھترپتی نے اپنے اخبار میں خبریں پرکاشت کی تھیں۔ چھترپتی پر پہلے دباوٴ بنایا گیا۔ جب وہ دھمکیوں کے آگے نہیں جھکے تو24اکتوبر2002کو ان پر حملہ کر دیا گیا۔21نومبر2002کو دہلی کے اپولو اسپتال میں انکی موت ہو گئی۔ 

 

ایسے دیا گیا تھا ہتیا کو انجام
بائک پر آئے کلدیپ نے گولی مارکر رامچندر کی ہتیا کر دی تھی۔ اسکے ساتھ نرمل بھی تھا۔ جس روالور سے رامچندر پر گولیاں چلائی گئیں,اسکا لائسینس ڈیرا سچا سودا کے منیجر کشن لال کے نام پر تھا۔ گرمیت رام رحیم پر ہتیا کی سازش رچنے کا آروپ تھا۔ رام رحیم فی الحال دو سادھویوں سے یون شوشن معاملے میں20سال کی سجا کاٹ رہا ہے۔ 

 

سرسہ روہتک میں سرکشا کڑی,ڈیرے کے سبھی کاریہ کرم ردّ
سنوائی کے مد نظر ہریانہ پولیس نے روہتک کی سناریا جیل اور سرسہ شہر میں سرکشا ویوستھا کڑی کر دی گئی تھی۔ سرسہ میں ہریانہ پولیس کی12کمپنیاں ڈیرا سچا سودا سے سرسہ شہر تک تعینات کی گئی ہیں۔ اسکے اترکت10ڈی ایس پی, 12انسپیکٹر لگائے گئے۔ ڈیرا سچا سودا کو14پولیس ناکوں سے گھیرا گیا ہے۔ ڈیرے میں سبھی گتیودھیاں بند کی گئی ہیں,انہیں آدیش دیئے گئے ہیں که ڈیرے کی ویڈیوگراپھی کروائی جائے۔

COMMENT
Web Tranliteration/Translation