Loading...
indian king and story, motivational story, inspirational story, life management tips |رنگ روپ سے نہیں گن اور بدھی سے ہوتی ہے اچھے انسان کی پہچان- Dainik Bhaskar

سکھی جیون کی سیکھ/ رنگ روپ سے نہیں گن اور بدھی سے ہوتی ہے اچھے انسان کی پہچان



indian king and story, motivational story, inspirational story, life management tips
X
indian king and story, motivational story, inspirational story, life management tips

  • سندر راجا نے کروپ منتری سے کہا آپ اتنے بدھیمان ہیں,اگر روپ وان بھی ہوتے تو اچھا ہوتا

Dainik Bhaskar

May 20, 2019, 11:26 AM IST

جیون منتر ڈیسک۔ایک لوک کتھا کے انوسار پرانے سمیہ میں ایک راجا بہت سندر تھا۔ اسے اپنے رنگ روپ کا بہت ابھیمان بھی تھا۔ راجا کو اپنی سندرتا کی تاریخ سننا پسند تھا۔ اسکے مہا منتری بہت بدھیمان تھے,لیکن وہ کروپ تھے۔
>راجا کے مہا منتری کا رنگ سانولا تھا,چہرے پر جھریاں تھیں۔ ایک دن راجا نے اپنے منتری سے کہا که مہا منتری آپ بہت بدھیمان ہیں,لیکن آپ سندر بھی ہوتے تو اچھا ہوتا۔ 
>مہا منتری نے کہا که راجن روپ رنگ تو عمر کے ساتھ نشٹ ہو جاتا ہے,اچھے انسان کی پہچان اسکے گن اور بدھی سے ہوتی ہے۔ 
>راجا نے مہا منتری سے کہا که یہ بات آپ کیسے ثابت کر سکتے ہیں؟
>مہا منتری نے کہا که اس بات کو سمجھنے کے لئے کئی اداہرن ہیں۔ منتری نے راجا کو دو گلاس میں پانی بھرکر دیا۔ اسکے بعد مہا منتری نے کہا که راجن ایک گلاس میں سونے کے گھڑے کا پانی ہے,دوسرے گلاس کا میں کالی مٹی کی مٹکی پانی ہے۔ اب آپ بتائیں ان دونوں گلاسوں میں سے کس گلاس کا پانی پینے میں اچھا لگےگا۔
>راجا نے جواب دیا که مٹکی سے بھرے گلاس کا پانی شیتل اور سودشٹ ہوتا ہے۔ اس پانی سے ہی ترپتی بھی ملتی ہے۔
>راجا کے پاس بیٹھی رانی نے نے مسکراکر کہا که مہاراج منتری جی نے آپکے پرشن کا اتر دے دیا ہے۔ بھلا سونے کا خوبصورت گھڑا کس کام کا جس کا پانی اچھا نہ لگے۔
>دوسری اور کالی مٹی سے بنی یہ مٹکی,جو کروپ لگتی ہے,لیکن اس میں گن چھپے ہیں۔ اسکا شیتل پانی پیکر من ترپت ہو جاتا ہے۔ آب آپ ہی بتائیں روپ بڑا ہے یا گن اور بدھی؟
>یہ سن کر راجا کو بات سمجھ آ گئی۔ اسکے بعد اسنے اپنی سندرتا پر ابھیمان کرنا چھوڑ دیا۔
کتھا کی سیکھ
اس کتھا کی سیکھ یہ ہے که ہمارا رنگ روپ تو عمر کے ساتھ کم ہونے لگتا ہے,لیکن گن اور بدھی کی وجہ سے ویکتی کا مان سمان بڑھتا رہتا ہے۔ اسی لئے سندرتا پر گھمنڈ نہیں کرنا چاہئیے۔ یہی سکھی جیون کی سیکھ ہے۔

COMMENT
Web Tranliteration/Translation