Loading...
Guru Gobind Singh jubilee on 13th January, Guru Gobind Singh, the last guru of the Sikhs |سکھوں کے انتم گرو گووندسنہ کی جینتی13جنوری کو,انہوں نے ہی بنائے تھے پنچ پیارے- Dainik Bhaskar

سکھوں کے انتم گرو گووندسنہ کی جینتی13جنوری کو,انہوں نے ہی بنائے تھے پنچ پیارے/سکھوں کے انتم گرو گووندسنہ کی جینتی13جنوری کو,انہوں نے ہی بنائے تھے پنچ پیارے

9سال کی عمر میں گرو بن گئے تھے گووندسنہجی,کی تھی خالصہ پنتھ کی ستھاپنا

Dainik Bhaskar

Jan 11, 2019, 06:00 PM IST
Guru Gobind Singh jubilee on 13th January, Guru Gobind Singh, the last guru of the Sikhs

رلجن ڈیسک۔کل(13جنوری,رویوار)سکھّوں کے انتم گرو گووندسنہجی کی جینتی ہے۔ جب اورنگجیب نے گرو تیگبہادر کا قتل کروا دیا,تو انکی شہادت کےبعدانکی گدی پر گرو گووند سنگھ کو بیٹھایا گیا۔ اس سمیہ انکی عمر ماتر9ورش تھی۔ گرو کی گرما بنائے رکھنے کے لئے انہوں نے اپنا گیان بڑھایا اور سنسکرت,فارسی,پنجابی اور عربی بھاشائیں سیکھیں۔ گرو گووند سنگھ نے دھنش بان,تلوار,بھالا آدی چلانے کی کلا بھی سیکھی۔
انہوں نے سکھوں کو اپنے دھرم,جنم بھومی اور سویں اپنی رکشا کرنے کے لئے سنکلپبدھ کیا اور انہیں مانوتا کا پاٹھ پڑھایا۔ پنچ پیارے بھی گرو گووند سنگھ کی ہی دین ہے۔ کیشگڑھساہب میں آیوجت سبھا میں گرو گووند سنگھ نے ہی پہلی بار پنچ پیاروں کو امرت چھکایا تھا۔ اس گھٹنا کو دیش کے اتہاس میں بہت مہتوپورن مانا جاتا ہے,کیونکہ اس سمیہ دیش میں دھرم,جاتی جیسی چیزوں کا بہت زیادہ بول بالا تھا۔
اس سبھا میں موجود سبھی لوگوں نے نہ صرف سکھ دھرم کو اپنایا,بلکہ سبھی نے اپنے نام کے آگے سنگھ بھی لگایا۔ گرو گووند سنگھ بھی پہلے گووند رائے تھے۔ اس سبھا کے بعد ہی وہ گرو گووند سنگھ کہلائے۔ تبھی سے یہ دن خالصہ پنتھ کی ستھاپنا کے اپلکشیہ میں ویشاکھی کے طور پر منایا جاتا ہے۔


گرو گووندسنہ نے ایسے بنائے پنچپیارے
-گرو گووندسنہ نے لوگوں میں بلیدان دینے اور سنگھرش کی بھاونا بڑھانے کے لئے کیشگڑھ صاحب کے پاس آنندپر میں ایک سبھا بلائی۔ اس سبھا میں ہزاروں لوگ اکٹھا ہوئے۔
-گرو گووندسنہ نے یہاں پر لوگوں کے من میں ساہس پیدا کرنے کے لئے جوش اور ہمت کی باتیں کیں۔ انہوں نے لوگوں سے کہا که جو لوگ اس کاریہ کے لئے اپنا جیون بلیدان کرنے کے لئے تیار ہیں,وہ ہی آگے آئیں۔
-اس سبھا میں گرو گووندسنہ جی اپنے ہاتھ میں ایک تلوار لیکر آئے تھے۔ انکے باربار آہوان کرنے پر بھیڑ میں سے ایک جوان لڑکا باہر آیا۔ گرو جی اسے اپنے ساتھ تمبو کے اندر لے گئے اور خون سے سنی تلوار لیکر باہر آئے۔
-انہوں نے لوگوں سے کہا که جو بلیدان کے لئے تیار ہے,وہ آگے آئے۔ ایک لڑکا پھر آگے بڑھا۔ گرو اسے بھی اندر لے گئے اور خون سے سنی تلوار کے ساتھ باہر آئے۔ انہوں نے ایسا پانچ بار کیا۔
-آخر میں وہ ان پانچوں کو لیکر باہر آئے۔ انہوں نے سفید پگڑی اور کیسریا رنگ کے کپڑے پہنے ہوئے تھے۔ یہی پانچ یووک اس دن سے'پنچ پیارے'کہلائے۔
-ان پنچ پیاروں کو گرو جی نے امرت(امرت یعنی پوتر جل جو سکھ دھرم دھارن کرنے کے لئے لیا جاتا ہے)چکھایا۔
-اسکے بعد اسے باقی سبھی لوگوں کو بھی پلایا گیا۔ اس سبھا میں موجود ہر دھرم کے انویائی نے امرت چکھا اور خالصہ پنتھ کا سدسیہ بن گیا۔


X
Guru Gobind Singh jubilee on 13th January, Guru Gobind Singh, the last guru of the Sikhs
COMMENT
Web Tranliteration/Translation