Loading...
world cup 2019 seven players including dhoni and Gayle last world cup appearance |گیل ملک سمیت7کھلاڑیوں نے آخری ٹورنامینٹ کھیلا,ان میں دھونی کے سب سے زیادہ273رن- Dainik Bhaskar

ورلڈ کپ/ گیل ملک سمیت7کھلاڑیوں نے آخری ٹورنامینٹ کھیلا,ان میں دھونی کے سب سے زیادہ273رن



world cup 2019 seven players including dhoni and Gayle last world cup appearance
X
world cup 2019 seven players including dhoni and Gayle last world cup appearance

  • دھونی نے8پاریوں میں45.50کی اوسط سے رن بنائے,انہوں نے2اردھشتک لگائے
  • شعیب ملک,جیپی ڈمنی اور عمران طاہر نے ون ڈے سے سننیاس لیا
  • کرس گیل نے8پاریوں میں242رن بنائے,انہوں نے2وکیٹ بھی لئے

Dainik Bhaskar

Jul 12, 2019, 09:31 AM IST

کھیل ڈیسک. ورلڈ کپ اب آخری دور میں پہنچ چکا ہے۔ نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کی ٹیمیں فائنل مقابلے میں آمنے سامنے ہونگی۔ اس سے پہلے سیمی فائنل تک7کھلاڑیوں نے اپنا آخری ورلڈ کپ کھیلا۔ ان میں ٹیم انڈیا کے پورو کپتان مہیندر سنگھ دھونی بھی شامل ہیں۔ اس لسٹ میں دھونی کے علاوہ ویسٹئنڈیج کے کرس گیل,شری لنکا کے لستھ ملنگا,دکشن افریقہ کے جیپی ڈمنی اور عمران طاہر,پاکستان کے شعیب ملک اور بانگلادیش کے مشرپھے مرتضیٰ ہیں۔ گیل,ملنگا اور طاہر کا پردرشن اس ورلڈ کپ میں اوسط رہا۔ وہیں,ڈمنی,ملک اور مرتضیٰ کا پردرشن نراشاجنک رہا۔

 

1.مہیندر سنگھ دھونی: پورو بھارتیہ کپتان دھونی نے اس ورلڈ کپ میں9میچ میں273رن بنائے۔ رنوں کے لحاظ سے یہ انکا سب سے بہترین ورلڈ کپ ثابت ہوا۔ انہوں نے2011ورلڈ کپ میں241رن بنائے تھے۔38سال کے دھونی نے اپنے آخری ورلڈ کپ میچ میں نیوزی لینڈ کے خلاف50رن بنائے,لیکن ٹیم کو جیت نہیں دلا سکے۔ انہیں مارٹن گپٹل نے رناؤٹ کر دیا۔ اس ہار کے ساتھ ہی ٹیم انڈیا کا ورلڈ کپ جیتنے کا سپنا بھی ٹوٹ گیا۔

 

2.کرس گیل:ویسٹئنڈیج کا یہ اوپنر اس ورلڈ کپ میں اپنی شمتا کے انوسار پردرشن نہیں کر سکا۔39سال کے گیل8پاریوں میں صرف242رن ہی بنا سکے۔ انکے بلے سے ایک بھی شتک نہیں نکلا۔ وہ افغانستان کے خلاف اپنے آخری ورلڈ کپ مقابلے میں7رن ہی بنا سکے۔ گیل نے ورلڈ کپ کے بعد سننیاس لینے کی گھوشنا کر دی تھی,لیکن بعد انہوں نے اپنا من بدل لیا۔ وہ بھارت کے خلاف اگست میں ہونے والی ون ڈے سیریز میں کھیلینگے۔

 

3.شعیب ملک: اس ورلڈ کپ میں ملک فلاپ رہے۔37سال کے پورو پاکستانی کپتان کو اس ورلڈ کپ میں صرف3میچ میں کھیلنے کا موقع ملا۔ اس دوران وہ کل8رن ہی بنا سکے۔ بھارت کے خلاف ملک شونیہ پر آؤٹ ہو گئے۔ اسکے بعد انہیں ٹیم سے باہر ہی کر دیا۔ وہ مقابلہ انکے کریر کا آخری ون ڈے ثابت ہوا۔ ساتھ ہی پاک ٹیم سیمی فائنل میں پہنچنے میں بھی ناکام رہی۔

 

4.لستھ ملنگا:بھارت کے خلاف ملنگا نے اپنا آخری ورلڈ کپ میچ کھیلا۔ اس میچ میں وہ اثردار ثابت نہیں ہوئے۔ انہوں نے10اوور میں82رن دیئے۔ ملنگا کو صرف ایک ہی سپھلتا مل سکی۔ اس ورلڈ کپ میں انہوں نے7میچ میں کل13وکیٹ لئے,لیکن ٹیم کا کوئی انیہ گیندباز انکا ساتھ نہیں دے سکا۔ اس سے شری لنکائی ٹیم سیمی فائنل میں نہیں پہنچ سکی۔

 

5.عمران طاہر:آسٹرلیا کے خلاف کھیلے گئے آخری لیگ میچ میں دکشن افریقی ٹیم بھلے ہی جیت گئی,لیکن وہ انتم 4میں نہیں پہنچ سکی۔ طاہر اس میچ میں9اوور میں صرف1ہی وکیٹ نکال سکے۔ انہوں نے59رن بھی دیئے۔ اس ورلڈ کپ میں انہوں نے9میچ کھیلے۔ انکے کھاتے میں صرف11وکیٹ ہی آئے۔

 

6.مشرپھے مرتضیٰ:بانگلادیش نے اس ورلڈ کپ میں اپنے پردرشن سے سب کا دل جیتا۔ حالانکہ,وہ سیمی فائنل میں نہیں پہنچ سکی۔ ورلڈ کپ میں اسکے بہترین پردرشن کے پیچھے مرتضیٰ کی کپتانی کا بھی یوگدان ہے۔ وہ ٹیم کو ایکجٹ رکھنے میں ماہر ہیں۔ حالانکہ ویکتیگت طور پر انکا پردرشن نراشاجنک رہا۔ وہ پورے ٹورنامینٹ میں صرف1ہی وکیٹ لے سکے۔ پاکستان کے خلاف آخری ورلڈ کپ میچ میں انہوں نے7اوور گیندبازی کی,لیکن سپھلتا حاصل نہیں ہوئی۔


7.جیپی ڈمنی: 35سال کے جیپی ڈمنی نے اپنا پہلا ون ڈے2004میں شری لنکا کے خلاف کھیلا تھا۔ وہ اس ورلڈ کپ میں بلے باز کے طور پر ناکام رہے۔ انہوں نے4پاریوں میں17.50کی اوسط سے صرف70رن بنائے۔ ڈمنی آسٹریلیا کے خلاف آخری میچ میں14رن ہی بنا سکے۔13گیند کی پاری میں انہوں نے ایک چوکا لگایا۔

 

کھلاڑی کریر ورلڈ کپ کریر
دھونی میچ: 350,رن: 10773 میچ: 29,رن: 780
گیل میچ: 298,رن: 10393 میچ: 35,رن: 1186
ملک میچ: 287,رن: 7534 میچ: 6,رن: 100
ڈمنی میچ: 199,رن: 5117 میچ: 18,رن: 458
ملنگا میچ: 225,وکیٹ: 335 میچ: 29,وکیٹ: 56
طاہر میچ: 107,وکیٹ: 173 میچ: 22,وکیٹ: 40
مرتضیٰ میچ: 217,وکیٹ: 266 میچ: 24,وکیٹ: 19
COMMENT

آج کا راشی پھل

پائیں اپنا تینوں طرح کا راشی پھل,روزانہ
Web Tranliteration/Translation