Loading...
Uber founder takes aim at South Korea shared kitchen market |ڈلیوری کرنے والی کمپنیوں کی پیشکش,اب ریسٹورینٹ نہیں'کلاؤڈ کچن'کا کھانا آرڈر کر سکیں گے- Dainik Bhaskar

آن لائن فوڈ/ڈلیوری کرنے والی کمپنیوں کی پیشکش,اب ریسٹورینٹ نہیں'کلاؤڈ کچن'کا کھانا آرڈر کر سکیں گے



Uber founder takes aim at South Korea shared kitchen market
X
Uber founder takes aim at South Korea shared kitchen market

  • آن لائن فوڈ کمپنیاں کلاؤڈ کچن میں نویش کے لئے عام لوگوں کو بھی آفر دے رہیں

Dainik Bhaskar

Jul 11, 2019, 10:05 AM IST

نئی دہلی.ریسٹورینٹ یا ہوٹل کے لذیذ کھانے کی گھر گھر تک ڈلیوری پہنچانے والی آن لائن فوڈ کمپنیاں اب خود ہی فوڈ کوکنگ بزنس کے کاریابار میں اتر گئی ہیں۔ اپنے آن لائن پلیٹ فارم پر وہ دوسرے ریسٹورینٹ کے بجائے خود کے کلاؤڈ کچن میں بنے سستے کھانے کو پرموٹ کر رہی ہیں۔ اسکے لئے وہ چھوٹے شہروں تک لیج پر کلاؤڈ کچن کھول رہی ہیں۔ کمپنیوں کی اس پیشکش سے نئے ادیمیوں کو موقع مل رہا ہے لیکن موجودہ ریسٹورینٹس پر سنکٹ کھڑا ہو گیا ہے۔ انکے لئے لاگت کے معاملے میں آن لائن کمپنیوں سے مقابلہ کرنا مشکل ثابت ہو رہا ہے۔

 

آن لائن فوڈ ڈلیوری کمپنی جومیٹو لوگوں کو کچن کھولنے کے لئے زمین اپلبدھ کرانے پر دو سے چار لاکھ رپئے پرتماہ کا کمانے کا آفر دے رہی ہے۔ کمپنی نے اپنی ویب سائٹ پر بتایا ہے که قریب دو سے تین ہزار ورگپھیٹ زمین اور35لاکھ رپئے کے نویش سے ہر مہینے نشچت آئے ہو سکتی ہے۔ اس میں صرف کچن کا نرمان کرکے جومیٹو کو دینا ہوگا۔ ٹھیک اسی طرح کا آفر ابر ایٹس بھی دے رہی ہے۔ حالانکہ آفر ابھی بھارت کے بجائے دوسرے دیشوں دکشن کوریا,امریکہ اور یوروپیہ دیشوں میں مل رہا ہیں۔ 

  • سوگی کی گھر کے بنے کھانے کی ڈلیوری

    سوگی نے ایک قدم آگے بڑھتے ہوئے گھر کے بنے کھانے کی ڈلیوری شروع کی ہے۔'سوگی ڈیلی'ایپ کے ذریعے گھریلو رسوئیوں دوارہ تیار کیا گیا گھر کا کھانا و ٹفن سیوا گرگرام میں اپلبدھ ہے۔ سوگی کے مکھیہ کاریہ کاری شریہرش مجیتی نے کہا که آنے والے مہینوں میں ممبئی اور بینگلرو میں بھی سیوا شروع ہوگی۔ سوگی کے کے آفر کو دیکھتے ہوئے جومیٹو بھی ٹفن سروس شروع کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

  • 2023تک آن لائن فوڈ ڈلیوری کاروبار1.1لاکھ کروڑ کا ہوگا

    کنسلٹینسی فرم مارکیٹ ریسرچ فیوچر کی رپورٹ کے مطابق بھارت میں آن لائن فوڈ ڈلیوری مارکیٹ سال2023تک سالانہ1.1لاکھ کروڑ رپئے کا ہو جائیگا۔ شہروں میں کامکاجی آبادی میں مہلاؤں کی بڑھتی سنکھیا اسکی وجہ ہے۔ آن لائن کاروبار کو2023تک16.2%کی وارشک گروتھ ریٹ مل سکتی ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے95پرتیشت لوگ آفر اور چھوٹ تو84پرتیشت سمیہ کی بچت و ٹریفک کی پریشانیوں سے بچنے کے لئے آن لائن کھانا آرڈر کرتے ہیں۔

COMMENT
Web Tranliteration/Translation