Loading...
ایکادشی وشیش:کیوں نہیں کھاتے ہیں چاول اس دن؟ یہ جانکاری نئی ہے,ضرور پڑھیں.. | Webdunia Hindi

ایکادشی وشیش:کیوں نہیں کھاتے ہیں چاول اس دن؟ یہ جانکاری نئی ہے,ضرور پڑھیں..


یہ سوال اکثر کئی لوگوں کے من میں آتا ہے که ایکادشی کے دن چاول کیوں نہیں کھاتے؟ آخر ایکادشی کے دن چاول کھانا کیوں ورجت ہے؟

دھارم‌ک درشٹ‌ی سے پرانوں میں لکھا ہے که ایکادشی کے دن چاول کھانے سے اکھادیہ پدارتھ ارتھات نہیں کھانے یوگیہ پدارتھ کھانے کا پھل ملتا ہے۔

پورانک کتھا کے انوسار ماتا شکتی کے کرودھ سے بچنے کے لئے مہرشی میدھا نے شریر کا تیاگ کر دیا اور انکا انش پرتھوی میں سما گیا۔ چاول اور جو کے روپ میں مہرشی میدھا اتپن ہوئے اسلئے چاول اور جو کو جیو مانا جاتا ہے۔

جس دن مہرشی میدھا کا انش پرتھوی میں سمایا,اس دن ایکادشی تتھی تھی۔ اسلئے ایکادشی کے دن چاول کھانا ورجت مانا گیا۔ مانیتا ہے که ایکادشی کے دن چاول کھانا مہرشی میدھا کے مانس اور رقت کا سیون کرنے جیسا ہے۔

وگیانک کارن

وگیانک تتھیہ کے انوسار چاول میں جل تتو کی ماترا ادھک ہوتی ہے۔ جل پر چندرما کا پربھاؤ ادھک پڑتا ہے۔ چاول کھانے سے شریر میں جل کی ماترا بڑھتی ہے اس سے من وچلت اور چنچل ہوتا ہے۔ من کے چنچل ہونے سے ورت کے نیموں کا پالن کرنے میں بادھا آتی ہے۔ ایکادشی ورت میں من کا نگرہ اور ساتوک بھاوٴ کا پالن اتی آوشیک ہوتا ہے اسلئے ایکادشی کے دن چاول سے بنی چیزیں کھانا ورجت کہا گیا ہے۔

 

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation