Loading...
کون سا رتن کس راشی یا گرہ کے لئے فائدےمند یا نقصاندہ| gems benefits and loss | Webdunia Hindi

کون سا رتن کس راشی یا گرہ کے لئے فائدےمند یا نقصاندہ

پراچین گرنتھوں میں رتنوں کے84سے ادھک پرکار بتائے گئے ہیں۔ انمیں سے بہت تو اب ملتے ہی نہیں۔ مکھ‍یت:9رتنوں کا ہی زیادہ پرچلن ہے۔ ان9رتنوں کے ہیبھی بہت سے ہیں۔ یہاں جوکی بات کہی جا رہی ہے,وہ لال کتاب کے انوسار بھی ہے۔
رتنوں کو ہم مکھیت:3ورگوں میں بانٹ سکتے ہیں

1.پرانجارتھات جیوجنتؤں کے شریر سے پراپت,جیسے گجمکتا,مونگا آدی۔

2.وانسپتک رتن ارتھات ونسپتیوں سے پراپت,جیسے ونشلوچن,ترنمنی,جیٹ آدی۔

3.کھنج رتن ارتھات پراکرتک رچناؤں ارتھات چٹان,بھوگربھ,سمندر آدی سے پراپت کئے جاتے ہیں۔ آؤ,جانتے ہیں کچھ پرمکھ رتنوں کی جانکاری۔
1.مونگا(پروال)-منگل کی راشی میش اور ورش‍چک والوں کے لئے مونگا پہنے کی صلاح دی جاتی ہے۔ مونگا دھارن کرنے سے ساہس اور آتموشواس میں وردھی ہوتی ہے۔ پولیس,آرمی,ڈاکٹر,پراپرٹی کا کام کرنے والے,ہتھیار نرمان کرنے والے,سرجن,کمپیوٹر ساپھٹوییر و ہارڈویئر انجینئر آدی لوگوں کو مونگا پہننے سے وشیش لابھ ہوتا ہے۔ رقت سمبندھی روگ,مرگی تتھا پیلیا میں بھی لابھدائک مانا گیا ہے۔

لیکن اسکے نقصان بھی ہو سکتے ہیں۔ یدی کنڈلی کے انوسار مونگا نہیں پہنا ہے,تو یہ نقصان بھی کر سکتا ہے۔ اس سے درگھٹنا بھی ہو سکتی ہے۔ کہتے ہیں که اسکا بھار جیون ساتھی پر رہتا ہے۔ اس سے پریوارک قلح,کٹمب سے منمٹاؤ اور وانی میں دوش بھی ات‍پن‍نہ ہو سکتا ہے۔ شنی اور منگل کی یتی کہیں بھی ہو تو مونگا نہیں پہننا چاہئیے۔


2.اوپل یا ہیرا شکر کی راشی ورشبھ اور تلا والوں کے لئے ہیرا پہننے کی صلاح دی جاتی ہے۔ ہیرا مالامال بھی کر سکتا ہے اور کنگال بھی۔ اسے پہننے سے روپ,سوندریہ,یش و پرتشٹھا پراپت ہوتی ہے۔ کہتے ہیں که یہ مدھمیہ روگ میں لابھدائک ہے۔

لال کتاب کے انوسار تیسرے,پانچویں اور آٹھویں ستھان پر شکر ہو تو ہیرا نہیں پہننا چاہئیے۔ اسکے علاوہ ٹوٹا پھوٹا ہیرا بھی نقصاندائق ہوتا ہے۔ کنڈلی میں شکر,منگل یا گرو کی راشی میں بیٹھا ہو یا ان میں سے کسی ایک سے درشٹ ہو یا انکی راشیوں سے ستھان پرورتن ہو تو ہیرا مارکیش کی بھانتی برتاؤ کرتا ہے اور وہ آتم ہتیا یا پاپ کی اور اگرسر کرتا ہے۔


3.پنا بدھ کی راشی متھن اور کنیا راشی والوں کے لئے پنا پہننے کی صلاح دی جاتی ہے۔ پنا دھارن کرنے سے سمرن شکتی بڑھتی ہے۔ ہاجما اچ‍چھا کرنے کے لئے بھی اسے دھارن کرتے ہیں۔ نوکری اور ویوپار میں انتی کے لئے بھی اسے دھارن کرنے کی صلاح دی جاتی ہے۔

لال کتاب کے انوسار بدھ تیسرے یا12ویں ہو تو پنا نہیں پہننا چاہئیے۔کے انوسار6, 8, 12کا بدھ سوامی ہو تو پنا پہننے سے اچانک نقصان,یدی بدھ کی مہادشا چل رہی ہے اور بدھ8ویں یا12ویں بھاوٴ میں بیٹھا ہے تو بھی پنا دھارن کرنے سے سمسیا اتپن ہو سکتی ہے۔


4.موتی چندر کی راشی کرک اور گرو کی راشی مین راشی والوں کے لئے موتی پہننے کی صلاح دی جاتی ہے۔ اسکے پہننے سے من میں سکاراتمک وچار اتپن ہوتے ہیں۔ من کی بےچینی مٹ جاتی ہے۔ اسے دھارن کرنے پر سردیجکام میں فائدہ,بھیمکت جیون اور سکھ بڑھتا ہے۔

لال کتاب کے انوسار یدی کنڈلی میں چندر12ویں یا10ویں گھر میں ہے تو موتی نہیں پہننا چاہئیے۔ یہ بھی کہا گیا ہے که شکر,بدھ,شنی کی راشیوں والوں کو بھی موتی دھارن نہیں کرنا چاہئیے۔ اتیدھک بھاوک لوگوں اور کرودھی لوگوں کو موتی نہیں پہننا چاہئیے۔


5.مانک سوریہ کی راشی سنگھ راشی والوں کے لئے لئے مانک پہننے کی صلاح دی جاتی ہے۔ مانک یا مانکیہ سے راج کیہ اور پرشاسنک کاریوں میں سپھلتا ملتی ہے۔ یدی اسکا لابھ ہو رہا ہے تو آپکے چہرے پر چمک آ جائیگی انیتھا سردرد ہوگا اور پریوارک سمسیا بھی بڑھ جائیگی۔ اپیش جھیلنا پڑ سکتا ہے۔

6.پکھراج برہسپتی یا گرو کی راشی دھنو اور مین راشی والوں کے لئے پکھراج پہننے کی صلاح دی جاتی ہے۔ پکھراج دھارن کرنے سے پرسدھی ملتی ہے۔ پرسدھی سے مان سمان بڑھتا ہے۔ شکشا اور کریر میں یہ لابھدائک ہے۔ میش,کرک,سنگھ,ورشچک,دھنو اور مین راشی والے لوگ یدی پکھراج پہنتے ہیں تو سنتان,ودیا,دھن اور یش میں سپھلتا ملتی ہے۔


لال کتاب کے انوسار دھنو لگن میں یدی گرو لگن میں ہے تو پکھراج یا سونا کیول گلے میں ہی دھارن کرنا چاہئیے,ہاتھوں میں نہیں۔ یدی ہاتھوں میں پہنینگے تو یہکنڈلی کے تیسرے گھر میں ستھاپت ہو جا ئینگے۔ لیکن جیوتش کے انوسار یدی جنم پتر کا نہیں دکھائی ہے اور من سے ہی پکھراج دھارن کیا ہے تو نقصان بھی پہنچا سکتا ہے۔ ورشبھ,متھن,کنیا,تلا اور مکر راشی والوں کو پکھراج نہیں پہننا چاہئیے۔

7.نیلم شنی کی راشی کمبھ اور مکر راشی والوں کے لئے نیلم پہننے کی صلاح دی جاتی ہے۔ شنی لگن,پنچم یا11ویں ستھان پر ہو تو نیلم نہیں۔ نیلم آسمان پر اٹھاتا ہے اور خاک میں ملا بھی دیتا ہے۔ اسی لئے کنڈلی کی جانچ کرنے کے بعد نیلم پہنیں۔ یہ ویکتی میں دوردرشٹی,کاریہ کشلتا اور گیان کو بڑھاتا ہے۔


یہ بہت جلدی سے ویکتی کو پرسدھ کر دیتا ہے۔ لیکن یدی نیلم سوٹ نہیں ہو رہا ہے تو اسکے شروعاتی لکشنوں میں اکارن ہی ہاتھ پیروں میں زبردست درد رہنے لگےگا,بدھی وپریت ہو جائیگی,دھیرے دھیرے سنگھرش بڑھنے لگےگا اور ویکتی زندگی میں خود کے ہی بنے ہوئے جال میں الجھ مریگا۔

8.گومید راہو کے لئے گومید پہننے کی صلاح دی جاتی ہے۔ گومید دھارن کرنے سے نیترتو شمتا کا اضافہ ہوتا ہے۔ کہتے ہیں که گومید کالے جادو سے رکشا کرتا ہے۔ اچانک لابھ پہنچاتا ہے اور اچانک ہونے والے نقصان سے بھی رکشا کرتا ہے۔


لال کتاب کے انوسار راہو12ویں, 11ویں, 5ویں, 8ویں یا9ویں ستھان پر ہو تو گومید نہیں پہننا چاہئیے ورنہ نقصان ہوگا۔ لیکن جیوتشانسار دوشیکت گومید کے نقصان ہو سکتے ہیں۔ اس سے پیٹ کے روگ,آرتھک نقصان,پتر کو نقصان,ویوپار ہانی,رقت وقار کے علاوہ کہتے ہیں که آکسمک مرتیو تک ہو جاتی ہے۔

9.لہسنیا کی تو کے لئے لہسن یا پہننے کی صلاح دی جاتی ہے۔ اسے سنسکرت میں ویدریہ کہتے ہیں۔ ویوپار اور کاریہ میں لہسن یا پہننے سے فائدہ ملتا ہے۔ یہ کسی کی نظر نہیں لگنے دیتا ہے۔


لال کتاب کے انوسار تیسرے اور چھٹھے بھاوٴ میں کی تو ہے تو لہسن یا نہیں پہننا چاہئیے ورنہ نقصان ہوگا۔ جیوتش کے انوسار دوشیکت لہسن یا ویسا ہی نقصان پہنچاتا ہے,جیسا که گومید۔

انیہ رتن اور پت‍تھروں کے نام سلیمانی,پتھر,ویکرانت,یشد,پھروجا,عجوبہ,اہوا یہ گلابی رنگ کا دھبےدار تتھا مردو پتھر ہوتا ہے۔ اسے فرش تتھا کھرل بنانے کے کام میں لیا جاتا ہے۔


ابری,املیا,اپل,اداؤ,کرپشمنی,کسوٹی,کٹیلا,کانسلا,کرنڈ,قدرت,گدڑی,گودنتی,گوری,چکمک,چندر کانت ,چتو,چمبک,جبرجد,جہر مہرہ,ججیمانی,جھرنا,ٹیڑھی,ڈور,تلیر,ترساوا,ترنمنی,دانے پھرگ,دانتلا,دارچنا,دورنجپھ,دھنلا,نرم یا لالڑی,نیلوپل یا لاجورت آدی۔
پتھر پنگھن,ہکیک,پارس,پھاتے جہر,پھروجا,بسرو,بانسی,بیرنج,مرگج,مکڑی,ماسر منی,ماکشک,مووینجپھ,رکت منی یا تامڑا,رکتاشم,راترتوا,لاس,مکرانا,لودھیا,شیش منی,شیلمنی یا سپھٹک,شوبھامنی یا ویکرانت,سنگیا,سنگیہدید,سنگیسماک,سنگموسا,سنگ مرمر,سنگستارا,سپھری,سندوریا,سینگلی,سیجری,سنہلا,سوریکانت,سرما,سیلکھڑی,سونا مکھی ,ہجرتے بیر,ہجرتے عود,ہرتوپل,ہرتمنی آدی۔

 

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation