Loading...
لوک سبھا چناؤ2019:پی ایم مودی کے خلاف بیان اور مودی کے ووادت بول| Webdunia Hindi

لوک سبھا چناؤ2019:پی ایم مودی کے خلاف بیان اور مودی کے ووادت بول

Narendra Modi
پن سنشودھت سوموار, 13مئی2019 (17:57 IST)
-ٹیم بی بی سی ہندی(نئی دہلی)

بھارتیہ راجنیتی میں چناوی ثمر کے دوران راجنیتاؤں کے زبان پھسلنے کا لمبا اتہاس رہا ہے۔ اس بار کے لوک سبھا چناووں میں نہ صرف کئی نیتاؤں کی زبان پھسلی ہے,بلکہ انہوں نے راجنیتی سے عطر نیتاؤں کی نجی زندگیوں میں تانک جھانک والے ایسے بول بولے ہیں,جو نہ صرف آپتیجنک ہیں,بلکہ جسکی ان سے امید نہیں کی جاتی ہے۔

چناوی ریلیوں میں جنتا کے سامنے اپنے پرتدوندوی کو نیچا دکھانے کے مقصد سے یہ نیتا مریادہ اور نیتکتا کی ریکھائیں پار کرتے نظر آئے ہیں۔ اس جماعت میں پردھان منتری نریندر مودی سے لیکر وبھن پارٹیوں کے دگج راجنیتا شامل ہیں۔ جیسے جیسے لوک سبھا چناؤ کے چرن آگے بڑھتے گئے,وواداسپد بیانوں کی جھڑی بھی لگنے لگی۔


مہلا اسمتا پر چوٹ
حالیہبسپا سپریمو مایاوتی کا آیا ہے,جسمیں انہوں نے پردھان منتری نریندر مودی کو لیکر ایک ووادسپد بیان دیا۔ مایاوتی نے رویوار کو کہا که بھارتیہ جنتا پارٹی کے لوگ مہلاؤں کا سمان نہیں کرتے,یہاں تک که راجنیتک سوارتھ کے لئے پی ایم مودی نے اپنی پتنی کو بھی چھوڑ دیا۔
کانگریس نیتا نوجوت سنگھ سدھو بھی پیچھے نہیں رہے ہیں۔ انہوں نے ایک بیان دیا,جسکی یہ کہتے ہوئے آلوچنا کی گئی که وہ مہلاؤں کو کمتر آنکتے ہیں۔

انہوں نے شنیوار کو اندور میں ایک کاریہ کرم میں کہا تھا, "مودی اس دلہن کی طرح ہیں,جو روٹی کم بیلتی ہے اور چوڑیاں زیادہ کھنکاتی ہے,تاکہ محلے والوں کو پتہ چلے که وہ کام کر رہی ہے۔ یہ میں آٹھویں بار پوچھ رہا ہوں که مودی مجھے اپنی بس ایک اپلبدھی بتا دیں۔"
جس پر بھاجپا نے پرتکریا دی اور کہا که ایسے بیان جاری کر کانگریس دکھانا چاہتی ہے که دیش کی آدھی جن سنکھیا کا پرتندھتو کرنے والی مہلائیں کمزور ہیں۔ بھاجپا نے کہا, "سدھو اور کانگریس کو ایسا بیان دینے کے لئے معافی مانگنی چاہئیے۔"

'پھانسی لگائینگے مودی...?'
وواد کا دور یہیں نہیں تھما۔ کانگریس کے ورشٹھ نیتا ملکاجرن کھڑگے نے پردھان منتری نریندر مودی پر ووادت بیان دیا۔ کھڑگے نے رویوار کو کرناٹک کے کلبرگی کے ایک چناوی سبھا میں کہا که اگر ہمیں40سے زیادہ سیٹیں ملتی ہیں تو کیا مودی دہلی کے وجے چوک پر پھانسی لگا لیں گے۔
ملکارجن کھڑگے نے کہا, "جہاں بھی وہ(مودی جی)جاتے ہیں,کہتے ہیں که کانگریس کو لوک سبھا میں40سیٹیں بھی نہیں مل پائینگی۔ کیا آپ میں سے کوئی بھی اسے مانتا ہے؟ اگر کانگریس کو40سے زیادہ سیٹیں مل گئیں تو کیا مودی دہلی کے وجے چوک پر پھانسی لگا لیں گے؟"

کانگریس ادھیکش راہل گاندھی پردھان منتری مودی پر رفال سودے میں کتھت روپ سے بھرشٹاچار کرنے کے آروپ لگاتے رہے ہیں۔ وہ اپنی ہر ریلی میں چوکیدار چور ہے کا نعرہ دوہراتے ہیں۔ چھٹھے چرن کے چناؤ سے پہلے پردھان منتری نریندر مودی نے نو مئی کو راہل گاندھی کے چوکیدار چور ہے کے نعرے کے جواب میں پورو پردھان منتری راجیو گاندھی کو نشانے پر لیا۔
انہوں نے راجیو گاندھی کو بھرشٹاچاری بتایا اور کہا که انکی زندگی کا انت"بھرشٹاچاری نمبر ایک"کے طور پر ہوا۔ مودی نے یہ بھی کہا که راجیو گاندھی آئیینئیس وراٹ پر چھٹیاں منانے جاتے تھے اور اسکا استعمال انہوں نے ٹیکسی کی طرح کیا۔


دریودھن سے تلنا
سکریہ راجنیتی میں نئی نئی آئیں کانگریس مہاسچو پرینکا گاندھی کو مودی کو لیکر دیا گیا بیان بھی چرچا میں رہا اور اس بھی جم کر وواد ہوا۔ پرینکا نے چنوتی که مودی میں اگر ہمت ہے تو وکاس کے مدعے پر چناؤ لڑے۔
انہوں نے کہا که لوگ پردھان منتری کو اچھی طرح سے سمجھانے والے ہیں۔ مودی میں بھی کورووں کے نیتا دریودھن کی طرح اہنکار ہے۔ پرینکا گاندھی نے کہا, "اس دیش نے کبھی اہنکار اور گھمنڈ کو معاف نہیں کیا ہے,اتہاس اسکا گواہ ہے۔ ایسا اہنکار دریودھن میں بھی تھا,انہیں سچائی دکھانے کے لئے بھگوان کرشن سمجھانے گئے تو دریودھن نے کرشن جی کو بھی بندھک بنانے کی کوشش کی۔"پرینکا ہریانہ کے امبالہ سے کانگریس پرتیاشی کماری سیلجا کے لئے چناؤ پرچار کرنے گئی تھیں۔

چوکیدار کو جب'جلاد'کہا
پرینکا کے اس بیان پر وواد چھڑنے کے بعد نیتاؤں کی اور سے پرتکریائیں آنے لگیں۔ اسی بیچ بہار کی پورو مکھیہ منتری رابڑی دیوی نے پرینکا گاندھی کے مودی کو دریودھن کہے جانے والے ووادت بیان کو اور دھاردار بنا دیا۔

رابڑی دیوی نے کہا, "انہوں نے(پرینکا)دریودھن بول کر غلط کیا۔ دوسری بھاشا بولنی چاہئیے تھی۔ وہ سب تو جلاد ہیں,جلاد۔ جو جج اور پترکار کو مروا دیتے ہیں,اٹھوا لیتے ہیں,ایسے آدمی کا من اور وچار کیسے ہو نگے,خونخوار ہو نگے۔"

سماجوادی پارٹی کے نیتا اور پورو کیبنیٹ منتری روداس میہروترا نے بھی پردھان منتری نریندر مودی کو'جلاد'بتایا۔ میہروترا نے سماچار ایجینسی ایئینائی سے کہا تھا, "پردھان منتری نے پچھلے پانچ سالوں میں جنتا پر بیتحاشہ ظلم اور انیائے کئے ہیں۔ اسلئے آج پورا دیش اس جالم سے چھٹکارا پانا چاہتا ہے۔"

"جنتا پانچ سال سے قراح رہی ہے اور دیش کا پردھان منتری اربوں کھربوں رپئے سے ودیش گھوم رہا ہے۔ غریب بھوک سے مر رہے تھے,کسان آتم ہتیا کر رہے تھے,اسلئے یہ بات صحیح ہے که دیش کا چوکیدار جلاد ہے۔"

جب مودی کے ہی خلاف بول پڑے گرراج
اپنے ووادت بیانوں کے لئے چرچت بھاجپا نیتا اور کیندریہ منتری گرراج سنگھ اکثر وپکشیوں پر حملہ بولتے نظر آتے ہیں,لیکن ان چناووں کے دوران انکی زبان ایسی پھسلی که وہ پردھان منتری نریندر مودی کے ہی خلاف بول پڑے۔

مئی کے پہلے ہفتے میں مظفر پور میں آیوجت ایک پریس وارتا میں گرراج سنگھ نے پردھان منتری مودی پر چرمپنتھیوں کو سمرتھن دینے کی بات کہہ ڈالی۔ انہوں نے کہا تھا, "یہ آج سے نہیں,جب سے سرکار بنی,مودی جی نے آتنکیوں کا سمرتھن کیا,سینا کو گالی دی۔"
گرراج سنگھ یہ باتیں پہلے کی سرکاروں کے خلاف بولنا چاہ رہے تھے۔ زبان پھسلنے کے کارن انہوں نے وپکشیوں کے نام کی جگہ,اپنے ہی نیتا کا نام لے لیا۔


'دریودھن'کے بعد'اورنگزیب'بتائے گئے مودی
پرینکا گاندھی کے مودی کو دریودھن بتانے کے بعد کانگریس کے ورشٹھ نیتا سنجے نرپم نے پردھان منتری نریندر مودی کی تلنا اورنگزیب سے کی تھی اور کہا که ان سے بھاجپا کے لوگ بھی ترست ہیں۔
وارانسی میں کانگریس پرتیاشی اجے رائے کے سمرتھن میں ایک سبھا کے دوران سنجے نے کہا تھا, "وارانسی کے لوگوں نے جس ویکتی کو چنا وہ اورنگزیب کے آدھونک اوتار ہیں کیونکہ یہاں پر کارڈور کے نام پر سیکڑوں مندروں کو تڑوایا گیا اور وشوناتھ مندر میں درشن کے نام پر550رپئے کی فیس لگائی گئی۔"

انہوں نے کہا, "یہ اس بات کا ثبوت ہے که جو کام اورنگزیب نہیں کر پایا وہ نریندر مودی کر رہیں ہیں۔ اورنگزیب نے ججیا کر لگاکر ہندؤں پر اتیاچار کیا تھا,اسی طرح نریندر مودی مندرو کو توڑکر بابا وشوناتھ کے درشن کے لئے ججیا لگا رہیں ہیں۔"

الپ سنکھیک بہ سنکھیہ والا بیان
30اپریل کو پردھان منتری نریندر مودی نے وردھا کی ایک ریلی میں راہل گاندھی پر نشانہ سادھا۔ انہوں نے یہاں الپ سنکھیک اور بہہ سنکھیک کا مدعا چھیڑا۔ مودی نے کہا, "اب انکی(راہل گاندھی)ہمت نہیں ہے که جہاں پر بہہ سنکھیک(ہندو)رہتے ہیں,وہاں سے چناؤ لڑے۔ اسلئے بھاگ کر وہاں شرن لینے کو مجبور ہوئے ہیں جہاں بہہ سنکھیک الپ سنکھیک میں ہیں۔"

کنکڑ بھرے لڈو
پچھم بنگال کی مکھیہ منتری ممتا بنرجی کا وہ بیان بھی کافی ووادوں میں رہا تھا جسمیں انہوں نے پردھان منتری کو'مٹی کے بنے اور کنکڑ بھرے لڈو'بھیجنے کی بات کہی تھی۔ ترنمول کانگریس پرمکھ کا یہ بیان پردھان منتری نریندر مودی کے فلم ابھینیتا اکشے کمار کو دیئے انٹرویو کے بعد آیا تھا,جسمیں انہوں نے کہا تھا که"ممتا دیدی انہیں سال میں ایک بار کرتے اور مٹھائیاں بھیجتی ہیں۔"
رانیگنج کی ایک ریلی میں ممتا نے کہا تھا, "نریندر مودی ووٹ مانگنے بنگال آ رہے ہیں,لیکن لوگ انہیں کنکڑ بھرے اور مٹی سے بنے لڈو دینگے,جسے چکھنے کے بعد انکے دانت ٹوٹ جا ئینگے۔"اس سے پہلے انہوں نے کہا تھا که وہ ششٹاچار کے ناطے مودی کو یہ سب بھیجتی تھیں,لیکن انہوں نے اسے ساروجنک کرکے ایک راجنیتک مدعا بنا دیا۔


ہندستان ختم ہو جائیگا
اپریل کے انتم سپتاہ میں پورو کرکٹر اور پنجاب کے منتری نوجوت سنگھ سدھو نے مدھیہ پردیش میں کانگریس امیدوار کے لئے چناؤ ریلی کو سمبودھت کرتے ہوئے پی ایم نریندر مودی کو لیکر ووادت بیان دیا تھا۔ انہوں نے کہا تھا که اگر نریندر مودی پھر سے پی ایم بن گئے تو ہندستان ختم ہو جائیگا۔
انہوں نے بھوپال میں کہا تھا که مچھر کو کپڑے پہنانے,ہاتھی کو گود میں جھلانے اور تم سے سچ بلوانا اسمبھو ہے نریندر مودی۔ انہوں نے کہا پہلے جب حملے ہوتے تھے تو لوگ استیفا دیتے تھے۔ اب لوگ ووٹ مانگتے ہیں۔ لاشوں کی راجنیتی کرتے ہیں۔"مودی ڈوبتا سورج ہے اور راہل گاندھی اگتا سورج ہے۔ نریندر مودی,بات کروڑوں کی,دوکان پکوڑوں کی اور سنگت بھگوڑوں کی۔ واہ رے تیرے جملے,جملہ پرساد۔"

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation