Loading...
وارانسی:‘80مسلم گھروں میں45ہندو مندر ملنے’کا سچ| Webdunia Hindi

وارانسی:‘80مسلم گھروں میں45ہندو مندر ملنے’کا سچ

Last Updated: منگلوار, 7مئی2019 (11:21 IST)
- ٹیم
 بی بی سی نیوز


ڈھہے ہوئے مکانوں کے کچھ ویڈیو سوشل میڈیا پر اس دعوے کے ساتھ شیئر کیے جا رہے ہیں که اتر پردیش کے بنارس میں‘کاشی وشوناتھ کارڈور پروجیکٹ’کے لئے مودی سرکار نے راستے میں پڑنے والے80مسلم گھروں کو خرید لیا ہے۔
 
جن لوگوں نے یہ ویڈیو شیئر کیے ہیں,انہوں نے لکھا ہے, “کاشی وشوناتھ مندر سے گنگا ندی تک سڑک کو چوڑا کرنے کے لئے مودی نے80مسلم گھروں کو خرید لیا ہے۔ جب انہوں نے ان گھروں کو صاف کرنا شروع کیا تو ان گھروں کے اندر45پرانے مندروں کی کھوج کی گئی۔
 
آپ کو بتا دیں که‘کاشی وشوناتھ کارڈور پروجیکٹ’کو پردھان منتری نریندر مودی کا‘ڈریم پروجیکٹ’بتایا جاتا ہے۔
 
اس پریوجنا کے تحت سرکار چاہتی ہے که گنگا ندی کے تٹ پر ستھت للتا گھاٹ سے لیکر کاشی وشوناتھ مندر تک پہنچنے والا مارگ چوڑا کرکے اسے صاف ستھرا اور سندر بنایا جائے تاکہ جو بھی لوگ وہاں درشن کے لئے آییں,انہیں سودھا مل سکے۔
 
اتر پردیش کے مکھیہ منتری آدتیناتھ یوگی اور راجیہ پال رام نائک کی موجودگی میں پردھان منتری نریندر مودی نے8مارچ2019کو اپنے سنسدیہ شیتر وارانسی میں اس پریوجنا کا شلانیاس کیا تھا۔
 


لیکن بیتے کچھ دنوں میں اس پریوجنا سے جوڑتے ہوئے ٹوٹّر اور فیس بک پر جو ویڈیو سیکڑوں بار شیئر کیے گئے ہیں,وہ بھرامک ہیں۔
 
دعوے کی سچائی
 
کاشی وشوناتھ مندر پرسر کے سوندریہ کرن کی یوجنا پر کام کرنے کے لئے سرکار نےکاشی وشوناتھ وششٹ شیتر وکاس پریشدکا گٹھن کیا ہے۔
 
اس پریشد میں اتر پردیش سرکار کے ادھیکاری وشال سنگھ مکھیہ کاریپالک آدھکاری یعنی سی ای او کے پد پر کاریرت ہیں۔
 
مندر پرسر کے نرمان کے لئے‘مسلم گھروں کو خریدے جانے’اور انمیں‘ہندو مندروں کی کھوج’کا جو دعویٰ کیا جا رہا ہے,اسکے بارے میں ہم نے وشال سنگھ سے بات کی۔
 
انہوں نےبی بی سی سنوادداتا پرشانت چاہلکو بتایا که یہ سبھی دعوے فرجی ہیں۔
 
انہوں نے کہا, “اس پریوجنا کے لئے ہم نے ابھی تک کل249مکان کریہ کیے ہیں۔ جتنے بھی گھر مندر پرشاسن دوارہ کریہ کیے گئے ہیں اس یوجنا کے لئے,ان گھروں میں سے ایک بھی گھر کسی انیہ دھرم کا نہیں تھا۔ یہ سبھی مکان جو کریہ کیے گئے,یہ سبھی سناتن دھرم کے ہندو دھرماولمبیوں کے ہی تھے۔”
 
وشال سنگھ نے کہا که“جتنے بھی مکان اب تک کریہ کیے گئے ہیں,انمیں سے183مکان توڑے جا چکے ہیں۔ ٹوٹے ہوئے مکانوں میں چھوٹے بڑے مندروں کی سنکھیا ملاکر کل23مندر ہمیں ملے ہیں۔”

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation