Loading...
مسالہ پھلموں کے مسیحا منموہن دیسائی,جن پر امیتابھ آنکھ موند کرتے تھے وشواس| Webdunia Hindi

مسالہ پھلموں کے مسیحا منموہن دیسائی,جن پر امیتابھ آنکھ موند کرتے تھے وشواس

کا سنیما مسالہ سنیما ہے۔ وہ دوسرے فلمکاروں کی تلنا میں ڈبل تڑکا لگاکر اپنے درشکوں کو پروستے تھے۔ وہ یہ بات اچھی طرح جانتے تھے که دیش کے فلم سمیکشک انہیں نظام آف نان سینس (بکواس کا بادشاہ)یا پھر ڈریم آف ایمپرر(سپنوں کا شہنشاہ)وشیشنوں کے ساتھ کھلی اڑاتے ہیں۔ منجی نے اپنے آلوچکوں کی کبھی پرواہ نہیں کی۔ جو راستہ ایک بار تے کر لیا تھا,آخری سمیہ تک اس پر چلتے رہے۔ انکا سیدھا ترک تھا 'سنیما میرے لئے شکشا تتھا کلا بالکل نہیں ہے۔ مہنگائی,بیروجگاری,غریبی بھرشٹاچار اور ابھاووں کے بیچ رہنے والا آدمی جب فلم دیکھنے کے لئے آتا ہے,تو اسے منورنجن اور صرف منورنجن چاہئیے۔ میں ہمیشہ منورنجن پردھان پھلمیں بناتا رہونگا۔ جب نہیں بنا پاؤنگا,تو پھلموں سے سننیاس لے لونگا۔'

چھلیا میرا نام
ممبیٔ کے گجراتی پریوار میں جنمے منموہن دیسائی کے پتا کا سایہ ان پر سے ساڑھے تین سال میں ہی اٹھ گیا تھا۔ ان سے بڑے سبھاش دیسائی ہیں,جو فلم لائن میں آ گئے تھے۔ سینٹ جیویرس سکول کالج سے منجی نے انٹرمیجئیٹ تک شکشا پراپت کی۔ بیس سال کی عمر میں بڑے بھیا سبھاش سے کہا که انہیں پھلموں میں قسمت آجمانا ہے۔ انہیں فلم چھلیا کے نردیشن کا بھار دیا گیا۔ انترراشٹریہ پرسدھی والے راج کپور اور نوتن فلم کی نائکا تھی۔ نوجوان منجی انکے سامنے بونے تھے۔ اپنی اینٹرٹیننگ سٹائل سے انہوں نے راج صاحب کو پرسن کیا۔ پھر انکی مدد سے کلیانجی آنندجی سے راج صاحب کی پسند کا سنگیت بھی تیار کرایا۔ فلم ہٹ ہوئی۔ چھلیا میرا نام,چھلنا میرا کام آج بھی لوکپریہ ہے۔ اس پہلی فلم کے پالنے سے ہی منجی کے پائوں دکھائی دے گئے تھے که وہ کتنا آگے جا ئینگے۔

گووندا اعلٰی رے
منجی جب پھلموں میں آئے تب دلیپ دیو راج کی ترمورتی کے علاوہ شمّی کپور ربیل ہیرو کے روپ میں تیزی سے ابھر رہے تھے۔ انہوں نے شمّی کو لیکر فلم'بلپھ ماسٹر'تتھا'بدتمیج'پھلمیں بنائیں۔ پھلموں نے اوسط سپھلتا حاصل کی۔ بلپھ ماسٹر کا
ہنسی مذاق جوش خروش سے پھلمایا گانا'گووندا اعلٰی رے'ہر جنم اشٹمی پر مکھن کی ہنڈیا پھوڑتے سموہ دوارہ زور شور سے گایا جاتا ہے۔ دراصل منجی,راج کپور کے سکول کے ودیارتھی تھے۔ گرو تتھا چیلے میں انتر یہی تھا که راج کپور کی فلم سٹائل کا وہ سرلیکرن کر دیتے تھے۔

منجی کی پھلموں میں ایسے ایسے سین دیکھنے کو ملتے ہیں که جادوگر پی.سی.سرکار بھی ویسا جادو کبھی نہیں دکھا پاتے۔ اتھوا کوئی بیٹمین سپرمینسپا بھی جسے سمبھو نہیں کر پاتا,اسے منجی کی فلم کا سادھارن کلاکار سمبھو بنا دیتا تھا۔ فلم مرد میں ہوائی جہاج آسمان میں اڑ رہا ہے۔ زمین پر داراسنہ کھڑے ہیں۔ وہ رسی کا پھندا اتنی طاقت سے اچھالتے ہیں که وہ ہوائی جہاج کے پنکھوں میں الجھ کر اسے زمین پر اترنے کو مجبور کر دیتا ہے۔ یہ بھلے ہی اتی ہو,مگر درشک داراسنہ کے ہاتھوں سے یہ کمال دیکھتے ہیں,تو آسانی سے بھروسہ کر تالیاں پیٹنے لگتے تھے۔ فلم کا ہیرو کسی عمارت کی دسویں منزل سے نیچے گر رہا ہے,تو سڑک پر کپڑوں سے لدا ٹرک گزرتا ہے,جو اسے بچا لیتا ہے۔ بھارتیہ پورانک کتھاؤں میں جو کردار تتھا چمتکار ہوئے ہیں,انہیں آدھونک انداز میں پردے پر دکھانے میں منجی کی مہارت کو سلام کرنے کا جی چاہتا ہے۔ اسکے پیچھے ایک سچائی یہ ہے که ڈایریکٹر بننے کے پہلے منجی کی ٹریننگ سنیماٹوگراپھر بابو بھائی مستری کے نردیشن میں ہوئی۔ بابو بھائی دھارمک پھلموں کی ٹرک پھوٹوگراپھیکے بادشاہ تھے۔ منجی نے اس کلا کا استعمال ساماجک پھلموں میں کیا۔

امر اکبر اینتھونی
یدی منجی کی تمام پھلموں کو خارج کر دیا جائے اور صرف امر اکبر اینتھونی فلم کو ہی رکھا جائے,تو بھی وہ ہمیشہ یاد کئے جا ئینگے اور اس منورنجک فلم کے ذریعے فلم اتہاس میں شامل رہینگے۔ بی بی سی لندن نے جب اپنے چینل پر ہندی فلم دکھانے کا فیصلہ لیا,تو پہلی فلم تھی امراکبراینتھونی۔ اس فلم کی قوالی پردہ ہے پردہ بیحد لوکپریہ ہوئی۔ وہ ممبئی کے کھیتواڑی علاقے میں رہتے تھے,جہاں اکثر قوالی کی راتیں ہوتی تھی۔ اسکا اثر ان پر زبردست ہوا۔ عام آدمی کے بیچ رہنا منجی کو اچھا لگتا تھا اسلئے ممبئی کے پاش علاقے میں رہنے کے لئے وہ نہیں گئے۔ کھیتواڑی میں وہ اکثر عام لوگوں کے ساتھ کرکٹ کھیلتے تھے اور انہیں کے بیچ سے وہ اپنی پھلموں کے لئے کردار ڈھونڈ لیا کرتے تھے۔

کھویا پایا پھارمولا
یہ منجی کی وشیشتا بھی ہے اور انکا فارمولا بھی ہے که انہوں نے بچپن میں کھوئے بھائی تتھا ماں باپ کے پھارمولے پر اتنا زور دیا که وہ انکے نام سے پیٹینٹ بن سکتا تھا۔ کھوئے بچوں کی ماں کا کردار نبھا رہی ابھینیتری نرپا رائے پر تو مذاق میں یہ لکھا جاتا تھا که وہ ایسی ماں ہیں,جو دو بچوں کو بھی سنبھال کر نہیں رکھ پاتی اور وہ بچپن میں ہی بچھڑ جاتے ہیں۔ لیکن اس پھارمولے کی شروعات کے لئے پاٹھکوں کو ہم یاد دلا دیں که بامبے ٹاکیج کی فلم قسمت(1943)میں بھی اشوک کمار اپنے ماں باپ سے کمبھ بچھڑ جاتے ہیں۔ منجی نے ودیشی پھلموں کی کبھی نقل نہیں کی اور نہ کبھی پریرنا پراپت کی۔ وہ بھارتیہ فلمکاروں کی پھلموں سے ہی آئڈیا لیکر اگلی فلم اس سے بہتر بنانے کی کلا جانتے تھے۔ جیسے بیار چوپڑا کی فلم وقت سے آئڈیا لیکر امر اکبر اینتھونی بنا کر ادھک سپھلتا حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔

منجی کے ستارے:ستاروں کے منجی
منجی میں بھی کچھ چمبکیہ شکتی ایسی تھی که وہ جس ستارے کو آفر کرتے وہ انکی فلم میں کام کرنے کو راجی ہو جاتا۔ راج کپور سے انہوں نے شروعات کی تھی۔ جب راجیش کھنہ ستارہ بنے,تو انہیں اپنی فلم میں موقع دیا۔کو ستارہ حیثیت بنانے کا شرییہ بھی منجی کو جاتا ہے۔ منجی پر امیتابھ آنکھ موند کر وشواس کرتے تھے اور کبھی انہوں نے سوال نہیں کیا که فلم میں ان سے ایسا کیوں کروایا جا رہا ہے؟ امیتابھ جانتے تھے که عام آدمی کی نبج پر منجی کو غضب کی پکڑ ہے۔ امیتابھ,منجی کے پسندیدہ ایکٹر ہو گئے تھے۔ قلی فلم کے سیٹ پر کھلنائک کے ایک گھونسے سے گھائل امیتابھ کے سواستھیہ لابھ کے لئے منجی نے ایڑی چوٹی کا زور لگایا تھا۔ ششی کپور,رشی کپور,ونود کھنہ,شتروگھن سنہا,دھرمیندر,ہیما مالنی,پروین بابی جیسے تمام سٹارس کے ساتھ انہوں نے پھلمیں بنائیں۔ اپنے تیس سال کے فلم کریر میں منجی نے بیس پھلمیں ڈائریکٹ کی۔ ان میں سے پندرہ پھلموں نے سلور,گولڈن تتھا ڈائمنڈ جبلی تک منائی تھی۔ منجی کی پھلمیں بڑے بجٹ,بڑے ستارے اور بھویتا کے ساتھ بنائی جاتی تھی۔ وہ بھی شو مین تھی,لیکن گھر کی چھت پر چڑھ کر اپنے شو مین ہونے کی بات پر وہ کبھی زور سے نہیں چلائے۔

عام آدمی کو ہنساتے رہے
منجی کا پورا سنیما منورنجن کا سنیما ہے۔ عام آدمی کی روچی کا سنیما انہوں نے ہمیشہ بنایا,لیکن کبھی پھوہڑتا کا سہارا نہیں لیا۔ اپنی پھلموں میں کبھی ہیروئنوں سے انگپردرشن نہیں کروایا۔ وہ خود ہنس مکھ تھے۔ ملنسار تھے۔ صورت کے شہر سے انکے پوروجوں کا واسطہ تھا۔ وہ ہمیشہ صورت سٹائل میں گالیاں بقا کرتے تھے۔ اپشبد انکے منھ سے کب نکل جائیگا,کوئی بتا نہیں سکتا تھا۔ ایک بار امیتابھ نے ان سے پوچھا تھا که منجی آپ سینٹ جیویرس کی پروڈکٹ ہیں,پھر یہ گالیاں کیوں؟ انکا جواب تھا ان میں کوئی دربھاونا نہیں ہے,بس یہ النکار کا کام کرتی ہیں۔ اپنے انتم دنوں میں منجی پریشان تھے۔ انکے بیٹے دوارہ بنائی گئی پھلمیں اسفل ہو گئیں۔ ویڈیو کے آنے سے گھر گھر پھلمیں دیکھے جانیں لگی,جس سے انہیں سنیما کا بھوشیہ اندھکارمیہ نظر آنے لگا۔ اس طرح عام آدمی کو ہنسانے والا خود ٹریجیڈی کا شکار ہوکر سورگ گیا۔ منجی کی یہ نیتی سمجھ سے پرے ہے۔

منموہن دیسائی:پرمکھ پھلمیں
چھلیا(1960),بلپھ ماسٹر(1963),بدتمیج(1966),قسمت(1968),سچا جھوٹھا(1970),بھائی ہو تو ایسا(1972),رام پور کا لکشمن(1972),شرارت(1972),آ گلے لگ جا(1973),امر اکبر اینتھونی(1977),چاچا بھتیجا(1977),دھرمویر(1977),پرورش(1977),سہاگ(1979),نصیب(1981),دیشپریمی(1982),قلی(1983),مرد(1985),گنگا جمنا سرسوتی(1988),طوفان(1989)


منموہن دیسائی:آدھا حقیقت,آدھا فسانہ
-ایک مارچ1994کو منجی نے اپنی گھر کی پانچویں منزل سے کود کر آتم ہتیا کر لی تھی۔ یہ رہسیہ آج بھی رہسیہ ہے که انہوں نے ایسا کیوں کیا۔
-منموہن دیسائی اپنی وین(کار)میں کبھی بیٹھ کر سفر نہیں کرتے تھے۔ پچھلی سیٹ پر لیٹ جاتے تھے۔ ایسی سپیشل وین انہوں نے اپنے تتھا امیتابھ کے لئے ڈیزائن کرائی تھی۔
-منجی کبھی ٹی وی نہیں دیکھتے تھے۔ کبھی دیکھنا ہوتا,تو ٹی وی سکرین کی امیج کو درپن میں دیکھا کرتے تھے۔ انکا ماننا تھا که اس سے آنکھیں خراب نہیں ہوتی۔
-منجی شراب,سگریٹ,گٹکھا کا استعمال نہیں کرتے تھے۔ صرف دلچسپ سپنے دیکھتے تھے۔
-منجی اپنی ہیروئنوں میں پاپولر تھے,لیکن کبھی کسی سے افیئر نہیں کیا۔
-گنگا جمنا سرسوتی,طوفان پھلموں کے پٹنے کے بعد وہ منجی ڈپریشن کے شکار ہو گئے تھے۔
-دھنیا دال اور سپاری کھانے کا منجی کو بیحد شوق تھا۔

 

اور بھی پڑھیں:


 


Runtime Error

Server Error in '/' Application.

Runtime Error

Description: An application error occurred on the server. The current custom error settings for this application prevent the details of the application error from being viewed remotely (for security reasons). It could, however, be viewed by browsers running on the local server machine.

Details: To enable the details of this specific error message to be viewable on remote machines, please create a <customErrors> tag within a "web.config" configuration file located in the root directory of the current web application. This <customErrors> tag should then have its "mode" attribute set to "Off".


<!-- Web.Config Configuration File -->

<configuration>
    <system.web>
        <customErrors mode="Off"/>
    </system.web>
</configuration>

Notes: The current error page you are seeing can be replaced by a custom error page by modifying the "defaultRedirect" attribute of the application's <customErrors> configuration tag to point to a custom error page URL.


<!-- Web.Config Configuration File -->

<configuration>
    <system.web>
        <customErrors mode="RemoteOnly" defaultRedirect="mycustompage.htm"/>
    </system.web>
</configuration>