Loading...
Mirza Ghalib | Mirza Ghalib Shayari | Ghalib ki Shayari |مرزا غالب|غالب کی شاعری
0

مرجع غالب:اپنی سوچ کے جادو سے نئی دنیا رچنے والی شخصیت

بدھوار,دسمبر26, 2018
Mirza Ghalib
0
1

بوڑھے کو ماں کی گالی

منگلوار,جون19, 2012
غالب کو انکے حاسد اکثر پھہش خط لکھا کرتے تھے کسی نے ایک خط مے غالب کو ماں کی گالی لکھی۔ پڑھکر غالب مسکرائے اور...
1
2

غالب کا خط 45

بدھوار,جون17, 2009
اندوۂ فراق نے وہ فشار دیا که جوہر روح گداز پاکر ہر بن مو سے ٹپک گیا۔ اگر آپکے اقبال کی تائید نہ ہوتی,تو...
2
3

غالب کا خط 44

بدھوار,جون17, 2009
تجھ کو لکھوں که تیرا باپ مر گیا اور اگر لکھوں تو پھر آگے کیا لکھوں که اب کیا کرو۔ مگر صبر وہ ایک شیوۂ فرسودہ...
3
4

غالب کا خط 43

بدھوار,جون17, 2009
تمہارا خط رام پور پہنچا اور رام پور سے دہلی آیا۔ میں23شعبان کو رام پور سے چلا اور30شعبان کو دہلی پہنچا۔ اسی...
4
4
5

غالب کا خط 42

سوموار,اپریل13, 2009
میرا حال سوائے میرے خدا اور خدابند کے کوئی نہیں جانتا۔ آدمی کسرت غم سے سودائی ہو جاتے ہیں,اک‍ل جاتی رہتی ہے۔ اگر...
5
6

غالب کا خط 41

سوموار,اپریل13, 2009
پانچ لشکر کا حملہ پے در پے اس شہر پر ہوا۔ پہلا باغیوں کا لشکر,اس میں پہلے شہر کا اعتبار لٹا۔ دوسرا لشکر خاکیوں...
6
7

غالب کا خط 40

سوموار,اپریل13, 2009
پینشنداروں کا اجرائے پینشن,اور اہل شہر کی آبادی مسکن,یہاں اس صورت پر نہیں ہے,جیسی اور کہیں ہے۔ اور جگہ سیاست ہے که...
7
8

غالب کا خط 33

شنیوار,اپریل4, 2009
مجھ پر عتاب کیوں ہے؟ نہ میں تم تک آ سکتا ہوں,نہ تم تشریف لا سکتے ہو۔ صرف نامہ و پیام۔ سو آپ ہی یاد کیجئے که کتنے...
8
8
9

غالب کا خط 39

بدھوار,فروری25, 2009
بہت دنوں میں آپنے مجھ کو یاد کیا۔ سال گذشتہ ان دنوں میں میں رام پور تھا۔ مارچ سن1860میں یہاں آ گیا ہوں,اب...
9
10

غالب کا خط 38

بدھوار,فروری25, 2009
برکھردار منشی جواہرسنہ کو بعد دواٴ دوام عمر ودولت معلوم ہو۔ خط تمہارا پہنچا۔ خیراپھیت تمہاری معلوم...
10
11

غالب کا خط 18

بدھوار,فروری18, 2009
روٹھے ہی رہوگا یا کی منوگے بھی؟ اور اگر کسی طرح نہیں من تے ہو تو روٹھنے کی وجہ تو لکھو۔ میں اس تنہائی میں صرف خطوں کے...
11
12

غالب کا خط 37

گرووار,جنوری22, 2009
برخردار,کامگار,سادت اقبال نشان منشی جواہرسنہ جوہر کو بلبھگڑھ کی تہسیلداری مبارک ہو۔'پیپلی'سے'نوح'آئے۔...
12
13

غالب کا خط 36

شکروار,دسمبر26, 2008
شکر ہے خدا کا که تمہاری خیرافیت معلوم ہوئی۔ تم بھی خدا کا شکر بجا لاؤ که میرے یہاں بھی اس وقت تک...
13
14

غالب کا خط 35

گرووار,دسمبر11, 2008
مینہ کا یہ عالم ہے که جدھر دیکھیئے,ادھر دریا ہے۔ آفتاب کا نظر آنا برق کا چمکنا ہے,یعنی گاہے دکھائی دے جاتا ہے۔ شہر...
14
15

غالب کا خط 34

گرووار,دسمبر11, 2008
لو صاحب! اور تماشا سنو۔ آپ مجھ کو سمجھاتے ہیں که تفتہ کو آجردا نہ کرو۔ میں تو انکے خط کے نہ آنے سے ڈرا تھا که کہیں...
15
16

غالب کا خط 32

گرووار,دسمبر11, 2008
ہائے ہائے وہ نیک بخت نہ بچی۔ واقعی یہ که تم پر اور اسکی ساس پر کیا گزری ہوگی۔ لڑکی تو جانتی ہی نہ ہوگی که مجھ پر کیا...
16
17

غالب کا خط 31

گرووار,دسمبر11, 2008
جی چاہتا ہے باتیں کرنے کو۔ حق تالا عبدل سلام کی ماں کو شفا دے اور اسکے بچوں پر رحم کرے۔ یہ جو تپ اور کھانسی...
17
18

غالب کا خط 30

گرووار,نومبر6, 2008
پرسوں شام کو مرزا یوسف علی خاں شہر میں پہنچے اور کل میرے پاس آئے۔ بیگم کی پردانشین اور گھر میں بہت لوگوں کی بیماری...
18
19

غالب کا خط 29

گرووار,نومبر6, 2008
بھائی صاحب میں بھی تمہارا ہمدرد ہو گیا,یعنی منگل کے دن18ربیئ ال اول کو شام کے وقت وہ پھوپھی کی میں نے بچپنے سے...
19


Web Tranliteration/Translation