Loading...
ابھدر ٹپنی پر ہاردک پانڈ‍یا اور کیئیل راہل کو ملی کڑی سجا,سودیش لوٹنے کا فرمان| Webdunia Hindi

ابھدر ٹپنی پر ہاردک پانڈ‍یا اور کیئیل راہل کو ملی کڑی سجا,سودیش لوٹنے کا فرمان

پن سنشودھت شنیوار, 12جنوری2019 (01:04 IST)
نئی دہلی۔ مہلاؤں پر ابھدر ٹپنی کرنے کے معاملے میں آل راؤنڈر ہاردک پانڈیا اور بلے باز لوکیش راہل کو اس معاملے میں جانچ پوری ہونے تککر دیا گیا ہے اور وہ آسٹریلیا کے شیش دورے تتھا نیوزی لینڈ کے سیمت اووروں کے آگامی دورے سے باہر ہو گئے ہیں۔ دونوں کھلاڑی اب سودیش لوٹ کر جانچ کا سامنا کرینگے۔

بھارتیہ کرکٹ کنٹرول بورڈ(بی بی سی آئی)کا سنچالن دیکھ رہی پرشاسکوں کی سمتی(سیؤئے)کی مہلا سدسیہ ڈائنا اڈلجی نے دونوں کرکٹروں کو اگلی کارروائی تک نلمبت کرنے کی سفارش کی تھی۔ سیؤئے نے دونوں کھلاڑیوں کو اس گھٹناکرم کی جانکاری دیتے ہوئے نئے کارن بتاؤ نوٹس بھیجے ہیں۔ دونوں کھلاڑی اب آسٹریلیا سے سودیش لوٹینگے اور راشٹریہ چین سمتی ان دونوں کھلاڑیوں کی جگہ لینے والے کھلاڑیوں کے ناموں کی گھوشنا جلد کریگی۔

پانڈیا اور راہل کی نلمبن اودھی کی ابھی کوئی جانکاری نہیں ہے لیکن اب سودیش لوٹ کر انہیں جانچ سے گزرنا ہوگا۔ نئے کارن بتاؤ نوٹس میں دونوں کرکٹروں کو کہا گیا ہے, 'آپ کو یہ معلوم ہے که اس معاملے میں آپکے خلاف بی بی سی آئی سنودھان کے نیم41کے تحت جانچ اور کارروائی شروع کر دی گئی ہے,جو ابھی لمبت ہے۔ نیم41 (6)کے تحت آپ کو تتکال پربھاؤ سے بی بی سی آئی,آئی سی سی اور کسی راجیہ سنگھ سے ادھیکرت,آیوجت,سویکرت,مانیتا پراپت یا سہیوگ والے ٹورنامینٹ,میچ,کاریہ کرم یا اوینٹ اور گتیودھی میں بھاگ لینے سے تب تک کے لئے نلمبت کیا جاتا ہے,جب تک اس معاملے میں آخری فیصلہ نہیں آ جاتا۔'
سیؤئے کے پرمکھ ونود رائے نے اس سے پہلے دونوں کرکٹروں پر2ون ڈے کا پرتبندھ لگانے کی سفارش کی تھی۔ ڈائنا اڈلجی نے بی بی سی آئی کے قانونی پرکوشٹھ سے قانونی صلاح لینے کے بعد یہ سفارش کی ہے اور ساتھ ہی کہا ہے که دونوں کھلاڑیوں کو نلمبت کرنے کی بات ان تک اور ٹیم تک پہنچا دی جانی چاہئیے۔

پانڈیا اور راہل شنیوار کو سڈنی میں آسٹریلیا کے خلاف ہونے والے پہلے ون ڈے سے باہر کئے جا چکے ہیں۔ پانڈیا نے حالانکہ اس معاملے میں معافی مانگی ہے لیکن سیؤئے ان پر نرمی برتنے کے موڈ میں قطعی نہیں ہے اور اسنے انہیں معاملے کا فیصلہ آنے تک نلمبت کر دیا ہے۔ بی بی سی آئی کے کاریہ واہک سچو امیتابھ چودھری نے بھی دونوں کھلاڑیوں کے خلاف کڑی کارروائی کی بات کہی تھی اور انہوں نے اڈلجی کی سفارش کا سمرتھن کیا ہے۔
اڈلجی نے بی بی سی آئی کے سی ای او راہل جوہری کا اداہرن دیتے ہوئے کہا که جوہری پر یون شوشن کے آروپ لگنے کے بعد انہیں چھٹی پر بھیج دیا گیا تھا۔
ونود رائے کی دو ون ڈے کا پرتبندھ لگانے کی سفارش کے بعد اڈلجی نے اس معاملے کو قانونی صلاح کے لئے بی بی سی آئی کے قانونی پرکوشٹھ کے پاس بھیج دیا تھا۔ حالانکہ لیگل فرم سرل امرچند منگلداس نے اپنی صلاح میں کہا ہے که پانڈیا کی ٹپنی کسی طرح کی آچار سنہتا کا النگھن نہیں ہیں کیونکہ انکا بیان کسی کھلاڑی,میچ ادھیکاری یا پھر سپارٹ سٹاف کے خلاف نہیں تھا اور یہ معاملہ آچار سنہتا کے النگھن کے دائرے میں نہیں آتا۔
اس بیچ بی بی سی آئی کے ایک ادھیکاری کا ماننا ہے که یہ بیشک آچار سنہتا کے النگھن کا معاملہ نہیں بنتا لیکن اس سے کرکٹ بورڈ کی چھوی کو گہری ٹھیس پہنچی ہے اور ٹیم کی سنسکرتی ہی سندیہ کے دائرے میں آئی ہے۔ بی بی سی آئی کے سامنے آسٹریلیا کا اداہرن ہے جہاں بال ٹیمپرنگ میں دوشی پائے گئے سٹیون سمتھ اور ڈیوڈ وارنر کو آئی سی سی نے ایک ٹیسٹ کے لئے نلمبت کیا تھا لیکن کرکٹ آسٹریلیا نے دونوں پر12مہینے کا پرتبندھ لگا دیا تھا۔

 

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation