Loading...
بھاجپا کی بھوشیہ وانی,کرناٹک سے چلا'مانسون'گوا ہوتے ہوئے مدھیہ پردیش آنے والا ہے,سرکار کی کوئی سمیہ سیما نہیں| Webdunia Hindi

بھاجپا کی بھوشیہ وانی,کرناٹک سے چلا'مانسون'گوا ہوتے ہوئے مدھیہ پردیش آنے والا ہے,سرکار کی کوئی سمیہ سیما نہیں

وکاس سنگھ| Last Updated: شکروار, 12جولائی2019 (14:10 IST)
بھوپال۔ مدھیہ پردیش میںکے بھوشیہ کو لیکر سیاسی گھماسان تیز ہو گیا ہے۔ کانگریس کے دگج نیتا جہاں ایک اور سرکار کے پوری طرح سے مضبوط ہونے کا دعویٰ کر رہے ہیں,وہیں وپکش لگاتار سرکار کے بھوشیہ پر سوال اٹھا رہا ہے۔
اس بیچ,شکروار کو ودھان سبھا میں بھی سرکار کے ستھایتو کو لیکر پکش وپکش میں نونک جھونک ہوئی۔ سدن میں اتتھی شکشکوں سے سمبندھت وشیہ پر چرچا کے دوران نیتا پرتپکش گوپال بھارگو نے کہا که سرکار کی کوئی سمیہ سیما نہیں کب تک چلیگی,اسکا بھروسہ نہیں۔ وہیں پورو منتری نروتم مشرع نے کہا کهسے اٹھا مانسون گوا ہوتے ہوئے مدھیہ پردیش آنے والا ہے۔
نروتم کے اس بیان پر نیتا پرتپکش نے انہیں موسم وگیانک بتا دیا۔ وپکش کے اس حملے کے بعد سرکار کی طرف سے گرہ منتری بالا بچن نے پلٹوار کرتے ہوئے کہا که کیا آپ تے کرینگے سرکار کی سمیہ سیماس اسکے بعد ستا پکش کے کئی منتریوں نے وپکش پر سرکار کو استھر کرنے کا آروپ لگایا۔

بسپا ودھایک نے دکھائے طیور:وہیں سدن میں شونیہ کال کے دوران سرکار کو سمرتھن دے رہی بسپا ودھایک رامبائی نے چورسیا ہتیاکانڈ میں اپنے پریوار کو ساجشن پھنسائے جانے کا آروپ لگایا۔ رامبائی نے کہا که ہتیاکانڈ میں انکے پریوار کے28لوگوں کو نردوش ہونے کے بعد بھی جیل میں ڈالا گیا۔
بسپا ودھایک نے کہا که جب ایک ودھایک ہونے کے ناطے انکو ہی نیائے نہیں مل پا رہا ہے تو اور لوگوں کو کیسے نیائے ملیگا؟ انہوں نے پورے معاملے کی سی بی آئی جانچ کرانے کی مانگ کی ہے۔ بسپا ودھایک کی بات کا سمرتھن وپکش اور انکے ساتھی بسپا ودھایک نے بھی کیا۔ ایسے میں جب سرکار کے بھوشیہ پر بھاجپا لگاتار سوال اٹھ رہی ہے تب بسپا ودھایک کی ناراضگی کے کئی سیاسی معنی تلاش جا رہے ہے۔


 

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation