Loading...
اپنے من کے کشل منیجر بنیں| Webdunia Hindi

اپنے من کے کشل منیجر بنیں

Author سنیل چورسیا|
منشیہ کے
سارے سنکلپ وکلپ,اچھائیںکامنائیںکی ہی اپج ہیں اور بدھی انکی پورتی کے لئے ستت کریاشیل رہتی ہے۔ شریر اور من کا سمبندھ بڑا گہرا ہوتا ہے۔ شریر ینتر ہے تو من ینتری۔ شریر روپی رتھ کا سارتھی من ہی ہوتا ہے۔ ات: شریرک اور مانسک سنتلن کے لئے سوستھ شریر ایوں سوچھ من کا ہونا آوشیک ہے۔ ادھکتر شریرک بیماریاں اسوستھ من کے چلتے ہی ہوتی ہیں۔ من کی سنکلپ شکتی سے شریر کو نروگ رکھا جا سکتا ہے تتھا ویوہار کو شالین ایوں ونمر بنایا جا سکتا ہے اور جیون کو نئے سوروپ میں گڑھا جا سکتا ہے۔
منووگیانکوں نے من کو دو بھاگوں میں بانٹا ہے۔ ایک ہوتا ہے چیتن من تو دوسرا اوچیتن من۔ چیتن من مستشک کا وہ بھاگ ہے جسمیں ہونے والی کریاؤں کی جانکاری ہمیں ہوتی ہے۔ یہ چیتن من وستنشٹھ ایوں ترک پر آدھارت ہوتا ہے۔ اوچیتن من جاگرت مستشک کے پرے مستشک کا حصہ ہوتا ہے,جسکی ہمیں جانکاری نہیں ہوتی تتھا انبھو بھی کم ہی ہوتا ہے۔

اداہرن کے روپ میں سمجھیں تو اسکی ستھتی پانی میں تیرتے ہمکھنڈوں کی طرح ہوتی ہے۔ ہمکھنڈ کا ماتر10%بھاگ پانی کی سطح سے اوپر دکھائی دیتا ہے اور شیش90%بھاگ سطح سے نیچے رہتا ہے۔ چیتن مستشک بھی اسمپورن مستشک کا10%ہی ہوتا ہے۔ مستشک کا90%بھاگ سادھارنتیا اوچیتن من ہوتا ہے۔
حالانکہ مستشک کا وبھاجن جیسا کچھ نہیں ہوتا ہے,جیسا که اداہرن دیا گیا ہے۔ ایسا کیول آپ کو سمجھانے کے لئے بتایا گیا ہے
اوچیتن من کو پریتنپوروک چیتن من میں پرورتت کیا جا سکتا ہے۔ سارے نرنیہ چیتن من ہی کرتا ہے۔ اوچیتن من ساری تیاری,پربندھ یا ویوستھا کرتا ہے۔ چیتن من یہ تے کرتا ہے که کیا کرنا ہے اور اوچیتن من یہ تے کرتا ہے که اسے کیسے کرنا ہے۔ یہی اوچیتن من ہمارے ویکتتو کو بھی نردھارت کرتا ہے,کیونکہ اسی کے اندر ہمارے ویکتتو کی جڑیں ودیمان رہتی ہیں۔





ہمارے سارے انبھو,جانکاری ہمارے اوچیتن من میں سنچت رہتے ہیں,پرنتو جب کبھی ہم انکا اپیوگ کرنا چاہتے ہیں,وہ چیتن من کا حصہ بن جاتے ہیں۔ سگمنڈ پھرایڈ کے انوسار ہماری دمت اچھائیں ایوں وچار اوچیتن من میں سنچت رہتے ہیں۔ یہ ہمارے ویکتتو کو بناتے ہیں ایوں پربھاوت کرتے ہیں اور ہمارے ویوہار ایوں آچار میں مہتوپورن بھومکا نبھاتے ہیں۔

شیکسپیئر نے بھی کہا ہے که ہمارا تن ایک باغیچہ ہے اور ہم اسکے باگوان ہیں۔ آپ ایک باگوان ہیں جو وچاروں کے بیجوں کو اوچیتن من میں بوتے ہیں,جو ہمارے عادتاً وچاروں کے انوروپ ہوتے ہیں۔ آپ جیسا اپنے اوچیتن من میں بوئینگے ویسا ہی پھل آپ کو پراپت ہوگا۔ اسکے انوسار ہی آپ کا شریر ایوں بودھ پرکٹ ہوگا۔ اسلئے پرتیک وچار ایک کارن ہے ایوں پرتیک دشا ایک پربھاؤ ہے۔ اسلئے یہ آوشیک ہے که ہم اپنے وچاروں کو ایسا بنائیں جس سے ہمیں اچھت پھل پراپت ہو سکیں۔
یدی سچی لگن اور درڑھ نشچیہ ہو تو من کو بلپوروک کسی بھی کاریہ میں لگایا جا سکتا ہے۔ آلسی من کو کرمٹھ بنانے کے لئے اسے کڑی پرتاڑنا کی ضرورت ہوتی ہے۔ نوسکھئے بچھڑے یا گھوڑے کو جو تتے سمیہ آرمبھک دنوں میں جو کٹھنائی ہوتی ہے,وہی من کو کسی روکھے وشیہ میں لگاتے ہوئے بھی ہوا کرتی ہے۔ درڑھتا کے آدھار پر جس نے اپنے من کے آلس کو جیت لیا اسکے لئے کوئی بھی کاریہ سرل پرتیت ہونے لگتا ہے۔

من کی مرضی تو اس میں رہتی ہے که اسے منورنجک گپ شپ کا اوسر ملے,ولاستا اور واسنا کی پورتی میں وقت کٹتا رہے,اپنی پرشنسا اور دوسروں کی نندا سننے کو ملے۔ پریشرم کرنا,کڑائی ہونا,انوشاسن کی پابندی,سمیہ کی مستعدی,نیمتتا جیسے بندھن بھلا اسے کیوں پسند آنے لگے۔ من ایسا کہاں ہے که ہر اچھے کام میں اپنے آپ لگ جایا کرے۔ کونسا بیل بیل گاڑی میں اور کونسا گھوڑا تانگے میں خوشی خوشی جتنے کو تیار ہوتا ہے۔ بلپوروک ہی اسے اسکے کاریہ میں لگایا جاتا ہے۔ من کی بھی ٹھیک یہی ستھتی ہے۔

وش میں کیا ہوا من ہی سچا متر سدھ ہوتا ہے اور انینترت من شترو کے سمان بھینکر پرنام دیتا ہے۔ جس نے اپنے من کو جیت لیا,اسے تینوں لوکوں کا وجئی کہا جاتا ہے۔ ہمارے من میں اننت شکتیاں ودیمان ہیں۔ آوشیکتا ہے,انہیں جاگرت کرنے کی۔ یوگ دوارہ ہم اپنی سوئی ہوئی شکتیوں کو جاگرت کر اننت آنند,اننت شکتی اور اننت شانتی کی پراپتی کر سکتے ہیں۔

-->

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation