Loading...
Nagapanchami Nagmandir۔ مہلا کے گربھ سے جنما دومنہا ناگ,ناگن کے مرنے پر پاشان میں بدلہ,چمتکارک مندر میں ہوتی ہے پوجا| Webdunia Hindi

مہلا کے گربھ سے جنما دومنہا ناگ,ناگن کے مرنے پر پاشان میں بدلہ,چمتکارک مندر میں ہوتی ہے پوجا

Author سدھیر شرما|
ہندو دھرم میں بہت سے جیووں کی دیو سوروپ میں پوجا کی جاتی ہے۔ ناگ بھی ایسا ایک جیو ہے۔ پرانوں میں ناگوں کو لیکر کئی کتھائیں ملتی ہیں اور سماج میں ناگوں کو لیکر کئی مانیتائیں بھی پرچلت ہیں۔ پرانوں میں تو ناگ لوک ,ناگ کنیا ,ناگ جاتی آدی کا الیکھ ملتا ہے۔ پرانوں کے مطابق اس پرتھوی کا بھار شیش ناگ نے اپنے اوپر اٹھا کر رکھا ہے۔ حالانکہ یہ ایک پرتکاتمک کتھا ہے۔

بھگوان شو کے شرنگار کے روپ میں ناگ نظر آتے ہیں۔ شو کی ستتی شواشٹک میں ورنن ہے 'گلے رنڈمالم تنو سرپجالں'۔ جس کا ارتھ ہے بھگوان شنکر کا پورا شریر سانپوں کے جال سے ڈھنکا ہے۔ پرانوں کے انوسار جب دیوتا اور دانووں نے سمندر منتھن کیا تھا تب مندار پروت کو شیش ناگ سے باندھ کر سمندر کو متھا گیا تھا۔ دو اپر یگ میں جب بھگوان وشنو نے کرشن کے روپ میں اوتار لیکر متھرا کی جیل میں جنم لیا تھا اور وسدیو انہیں لیکر برجبھومی گئے تھے,تب بھی تیز بارش سے واس کی نام کے ایک نے ہی انکی رکشا کی تھی۔ ناگ کو لیکر الگ ستھانوں پر کئی کنودنتیاں اور کہانیاں بھی جڑی ہوئی ہیں۔ پرانوں کی ان کہانی اور کنودنتیوں نے ناگوں کے پرتی لوگوں کی آستھا کو بڑھایا ہے۔

اس خاص مندر کا ویڈیو دیکھنے کے لئے یہاں کلک کریں
ایسا ہی ایک آستھا کا کیندر ہےگاؤں۔ اندور سے قریب25-30کلومیٹر کی دوری پر بسے گاؤں کا نام ہی اس مندر کے کارن ناگپور پڑا ہے۔ یہاں پر ستھت ناگ مندر کو لیکر لوگوں میں وشیش آستھا ہے۔ اس ناگ مندر سے کئی طرح کی مانیتائیں اور کہانیاں جڑی ہوئی ہیں۔ ناگ پنچمی کے دن یہاں وشیش بھیڑ رہتی اور میلہ بھی لگتا ہے۔ لوگ دور دور سے اپنی منوکامناؤں کو لیکر یہاں آتے ہیں۔یہاں پر ناگ دیوتا کی قریب3فٹ اونچی پاشان کی پرتما ہے۔ کہا جاتا ہے اس مندر کا نرمان کئی ورشوں پہلے ہوا تھا۔ کہا جاتا ہے که کبھی یہاں دومنہا ناگ جنما تھا۔

کنودنتیاں اور کہانیاں: گانووالے اس ناگ پرتما کو لیکر الگ الگ کہانیاں بتاتے ہیں۔ گانووالوں کے انوسار کئی ورشوں پہلے ایک مہلا کے گربھ سے ایک بچے اور ایک ناگ نے جنم لیا تھا۔ مہلا اسے لیکر ڈر گئی که کہیں ناگ بچے کو ڈس نہ لے ات: وہ ناگ کو چھوڑکر چلی آئی۔ تبھی سے یہاں ناگ پاشان روپ میں آ گیا۔ کچھ دنوں بعد مہلا نے آدیش دیا که وہ پاشان پرتما تالاب میں ہے,اسے باہر نکال کر یہاں مندر کا نرمان کروائیں۔ اس پرکار یہ مندر بنا۔

مندر کو لیکر ایک اور کنودنتی ہے که یہاں مہلا کے گربھ سے ناگ ناگن نے جنم لیا تھا۔ لوگوں نے ناگن کو مار دیا تب ناگ نے پاشن کا روپ دھارن کر لیا۔ تبھی سے یہاں مندر کا نرمان ہوا ہے۔ لوگوں میں اس مندر کو لیکر الگ الگ کہانیاں پرچلت ہیں۔ ورتمان میں یہ ناگ مندر شردھالوؤں کی آستھا کا کیندر ہے۔

پانچ فن والی پاشان پرتما:اس مندر میں قریب تین فٹ اونچی کالے رنگ کی پاشان کی پرتما ہے۔ اس پرتما کی وشیشتا یہ ہے که اسکے پانچ فن ہیں اور یہ فن ایک بڑی پرتما میں سے نکلے ہوئے ہیں۔ لوگ یہاں ناگ پرتما کا دودھ سے ابھیشیک کرتے ہیں۔
دومنہا سرپ دیتا ہے درشن
:
لوگوں نے یہ بھی بتایا که مندر کے پرسر میں کئی بار دو منھ کے سرپ بھی دکھائی دیئے ہیں۔ اسکے پرسر میں کئی انیہ مندروں کا نرمان بھی ہو گیا ہے۔ یہاں کی گرام پنچائت نے یہاں مندر پرسر اور تالاب کے آس پاس سوندریہ کرن کا کاریہ بھی کیا ہے۔ پیچھے ستھت تالاب کے آس پاس پودے بھی لگائے گئے ہیں۔ آستھا کے ساتھ ہی یہ ایک پریٹن ستھل کے روپ میں آکار لیتا جا رہا ہے۔
منوکامنا ہوتی ہے پوری: اسکو لیکر وشیش مانیتائیں ہیں۔ لوگ یہاں پر آتے ہیں اور اپنی اچھا کے لئے مان کرتے ہیں۔ مہلائیں اس مندر میں اپنی منوتی پورن ہونے کے لئے الٹے سواستک بناتی ہیں اور کامنا پوری ہونے پر سیدھا سواستک مندر میں بناتی ہیں۔

 

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation