Loading...
فاروق عبداللہ کا بڑا بیان,بھگوان رام صرف ہندوؤں کے نہیں,پوری دنیا کے ہیں... | Webdunia Hindi

فاروق عبداللہ کا بڑا بیان,بھگوان رام صرف ہندوؤں کے نہیں,پوری دنیا کے ہیں...

نئی دہلی| پن سنشودھت شکروار, 4جنوری2019 (12:55 IST)
نئی دہلی۔ جموں کشمیر کے پورو مکھ‍یمنتری اور نیشنل کانپھرینس کے نیتا فاروق عبداللہ نے کہا که ایودھیا میں رام مندر کو مدعے کو مل بیٹھ کر سلجھانا چاہئیے۔ اس معاملے کو کورٹ میں نہیں جانا چاہئیے۔
نیکاں نیتا نے کہا که اس مدعے کو کورٹ میں لے جانے کے بجائے سبھی پکش ملکر بات چیت کے ذریعے سلجھا سکتے ہیں۔ مجھے پورا وشواس یہ مدعا بات چیت کے ذریعے سلجھ سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کهتو پوری دنیا کے ہیں,وہ صرف ہندوؤں کے ہی نہیں ہیں۔

عبداللہ نے کہا که رام سے کسی کو بھی بیر نہیں ہونا چاہئیے۔ انہوں نے کہا که جس دن رام مندر مدعے کا سمادھار ہو جائیگا,میں سویں وہاں اینٹ لگانے جاؤنگا۔

سپریم کورٹ میں ایودھیا معاملے پر10جنوری تک کے لئے سنوائی ٹل گئی ہے۔ سپریم کورٹ نے اس معاملے کی سنوائی کے لئے ایک نئی پیٹھ بنانے کا آدیش بھی دیا ہے۔ غورطلب ہے که ہندو سنگٹھن سرکار سے لگاتار مانگ کر رہے ہیں که رام مندر کا نرمان قانون بناکر کیا جانا چاہئیے,جبکہ مودی ایک ساکشاتکار میں کہہ چکے ہیں که اس معاملے میں سپریم کورٹ کے نرنیہ کا انتظار کرینگے۔


اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation