Loading...
JNUمیں سکیورٹی گارڈ تھا اب وہیں کریگا پڑھائی,جانئے راجمل مینا کی سکسیس سٹوری| Webdunia Hindi

JNUمیں سکیورٹی گارڈ تھا اب وہیں کریگا پڑھائی,جانئے راجمل مینا کی سکسیس سٹوری

پن سنشودھت بدھوار, 17جولائی2019 (07:59 IST)
دیش کے سب سے بہتر شکشن سنستھانوں میں شمار جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں ایڈمشن کا سپنا ویسے تو بہتر کریر کی چاہ لئے ہر سٹوڈینٹ دیکھتا ہے‍لیکن راجس‍تھان کے ایک گاؤں سے آئے راجمل مینا کی کہانی ان سب سے جدا ہے۔5سالوں سے یہاں گارڈ کی نوکری کر رہے ہیں راجمل نے کٹھن پریشرم کے بل پر یہاں بی اے رشین ہانرس کی پرویش پریکشا پاس کی ہے۔

راجمل ویسے تو شروع سے ہی پڑھائی میں ہوشیار تھے لیکن وتیہ پریشانیوں کی وجہ سے آگے کی پڑھائی نہیں کر سکے۔میں گارڈ کی نوکری کرتے ہوئے انہوں نے یہیں پڑھائی کا سپنا دیکھا اور اپنی لگن سے اسے سچ بھی کر دکھایا۔

اس طرحJNUپہنچے رامجل: رامجل کے پریوار میں پتنی اور تین بچے ہیں۔ گاؤں میں ماتا پتا ہیں۔ ان پر تین بہنوں کی شادی کی جماداری تھی۔2003میں انہوں نے مزدوری بھی کی۔ اس وقت دن بھر کام کرنے پر70رپئے ملتے تھے۔ مگر پھر ایک دن پتا نے کہا,پڑھائی کرو اور کچھ بڑھیا کرو۔ کلاس5سے10تک کلاس میں ہمیشہ پہلا نمبر آتا تھا اسلئے انہیں کچھ امیدیں تھیں۔ پھر وہ جے پور آ گئے۔ وہاں اوپن سے بی اے کا فارم بھرا۔ وہاں دیکھا ایک سکیارٹی کمپنی میں بھرتی ہو رہی تھی۔ اس میں بھرتی ہو گیا۔ اسکے بعد ٹریننگ کے لئے گوڑگاؤں پہنچا,پھر دہلی میٹرو میں سکیارٹی گارڈ بنا اور پھر2014میں جے این یو پہنچ گئے۔
5سال سے کر رہے تھے تیاری: 2014سے ہی راجمل نے جے این یو میں ایڈمشن کے لئے تیاری کر رہے تھے۔ پچھلے سال ہی انہوں نے راجستھان وشوودیالیہ سے اوپن ایجو کیشن کے ذریعے راجنیتی وگیان,اتہاس اور ہندی میں گریجوایشن کیا۔ اس مئی2019میں انہوں نے ایگجام دیا اور اب اسے کریک بھی کرکے دکھا دیا۔ وہ'رشین لینگویج'میں بیچلر کورس کرینگے۔

 

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation