Loading...
کرناٹک سنکٹ:سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد کیا بچ پائیگی کمار سوامی سرکار... | Webdunia Hindi

کرناٹک سنکٹ:سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد کیا بچ پائیگی کمار سوامی سرکار...

Last Updated: بدھوار, 17جولائی2019 (12:23 IST)
نئی دہلی۔نے بدھوار کوپر بڑا فیصلہ دیتے ہوئے کہا که سپیکر پر ودھائکوں کا استیفا منظور کرنے کے لئے دباوٴ نہیں بنا سکتے۔ باغی ودھائکوں پر بھی ودھان سبھا ستر میں شامل ہونے کے لئے دباوٴ نہیں بنایا جا سکتا۔
اب سوال یہ اٹھ رہا ہے که سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد کیا کرناٹک کے مکھیہ منتری کمار سوامی اپنی سرکار بچا پائیگے۔

مکھ‍یہ نیایادھش نے اپنے فیصلے میں کہا که سپیکر ہی ودھائکوں کے استعفے پر فیصلہ کریں۔ سپیکر نیموں کے مطابق فیصلہ لینے کے لئے سوتنتر ہیں۔ انہوں نے کہا‍که باغی ودھائکوں پر بھی ودھان سبھا ستر میں شامل ہونے کے لئے دباوٴ نہیں بنایا جا سکتا۔

سیجیائی رنجن گوگوئی نے کہا که معاملے میں سنویدھانک سنتلن بنانا ضروری ہے,جو سوال اٹھے ہیں انکے جواب بعد میں تلاش جا ئینگے۔عدالت نے نردیش دیا که انستشٹ ودھائکوں کے استعفے پر ادھیکش کے فیصلے کو اسکے سمکش رکھا جائے۔

سپریم کورٹ کے آدیش پر ٹپنی کرتے ہوئے ورش‍ٹھ بھاجپا نیتا ییدیرپا نے کہا که نش‍چت طور پر سرکار نہیں ٹکیگی کیونکہ انکے پاس نمبر نہیں ہے۔ وہیں جگدیش شیٹ‍ٹر نے کہا که مکھیہ منتری کمار سوامی کی وجہ سے یہ ستھتی بنی ہے۔ انہیں ترنت پد سے استیفا دے دینا چاہئیے۔
سپریم کورٹ نے منگلوار کو اس معاملے میں اپنا فیصلہ سرکشت رکھ لیا تھا۔ باغی ودھائکوں نے آروپ لگایا تھا که ودھان سبھا ادھیکش کے آر رمیش کمار بہہ مت کھو چکی گٹھ بندھن سرکار کو سہارا دینے کی کوشش کر رہے ہیں۔


 

اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation