Loading...
پرواسی کوتا:کتنی تنہا ہوں میں... | Webdunia Hindi

پرواسی کوتا:کتنی تنہا ہوں میں...

hindi poem
 
کیا کبھی میں نے تم سے کہا
کتنی تنہا ہوں میں
مالا جپیملا
پھر بھی تنہا ہوں میں۔
 
کرتویہ کو دھرم مان
ون گئی ہرن ہوئی
ایکانت بیٹھی مکتی کی باٹ جوہی
چرتر رکشا کی لڑائی تھی میری۔
 
میری درڑھتا میری رکشک
اچھائی برائی کی جنگ چھڑی
ہنسابلپریوگ یوگ بنے
اچھائی جیت میری مکتی بنی۔
 
برائی مری,پھر بھی میں چھوڑی گئی
واہواہی رام لوٹی
پھر ون بھٹک بھٹک صدیاں
سوال پوچھوں کس سے میں تنہا۔
 
دربار سجے بولی کو میری ہر اور
لجا لوٹی یا بچائی
پانچالی بھی پکارا
میری مرضی کب کہاں جن جانی۔
 
پانچ پانڈو سو کورو پر بھاری
تب سمبھو جب کرشن بھیتر جگائی
پرش من کو پرشارتھ سمجھائی
واہواہی ارجن کرشن سنگ لوٹی۔
 
میں تنہا اب بھی ہوں
ایک رام تھا,ایک راون
انیک راون,کتنے ہیں رام
پاشوک آچرن اوڑھے کئی ون میں۔
 
واہواہی رام ہی لوٹو
سنگ رہو ون میں اکیلا نہ چھوڑو
انیتھا گیان بھی بنٹینگے صدیوں 
یدھ بھی چھڑینگے صدیوں۔
 
آبرو پر سوال ختم نہ ہو نگے
میں تنہا آج بھی۔


اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation