Loading...
اٹلجی کو صادر نمن ارپت کرتی کوتا:دیشپریم کے گیت گنگناؤنگا| Webdunia Hindi

اٹلجی کو صادر نمن ارپت کرتی کوتا:دیشپریم کے گیت گنگناؤنگا

atal bihari vajpayee

ایک اٹل دیوانہ ہی تو تھا میں
چل پڑا ہوں اب دور شتج میں
ناپا تولا گیا مجھے بھاووں میں
شبدوں میں رشتوں میں نعتوں میں
سہارا گیا میں ججباتوں میں
میرے سدھانتوں,اصولوں کے درپن میں
ڈوبا زمانا میرے آدرشوادوں میں
میرا قرم بھی گھرا ووادوں میں
جنتا کے سوالوں کے کٹگھروں میں
وہی چلن سارا دنیاداری میں
کارگل,پوکھرن کی الجھنوں میں
کہیں الجھا سمبھلا درڑھ میں راہوں میں
راجنیتی بھی چلی مرتیو کے سائے میں
میری شیلی میری بھاشا کی دیوانگی میں
بچے,بڑے,بزرگ بندھ جاتے بندھن میں
ہنستامسکراتا خاموشی کے سنگ میں
میں چلا بھارت مان کے سپتروں کی قطاروں میں
سنسکاروں,سوبھمانوں کی گیتاولی میں
کئی گیت ارپن کئے بھارت ماں کے چرنوں میں
سیوا صدا لکشیہ میرا سادگی ادھیکاروں میں
سگا سمبندھی متر شترو سبھی میرے اپنوں میں
میں سبھی کا سبھی میرے بھارت ماں کے آنچل میں
لو بن دیپک کی جلا سورج کے اجالوں میں
سانسوں کی سندھیا سے جیتا پندرہ کے جشن میں
سولہویں میں وداعی لے سمایا برہم کال میں
ایک اٹل دیوانہ ہی تو تھا میں
چل پڑا ہوں اب دور شتج میں
سمیہ چکر میں پھنس کبھی لوٹا بھی کل میں
دیشپریم کے گیت گنگناؤگاں ہر کال میں!


اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation