Loading...
10لاکھ کی پھروتی کے لئے اندور سے اپحت6سال کا اکشت جین ساگر کے پاس سکشل ملا| Webdunia Hindi

10لاکھ کی پھروتی کے لئے اندور سے اپحت6سال کا اکشت جین ساگر کے پاس سکشل ملا

Last Updated: سوموار, 11فروری2019 (23:33 IST)
اندور۔ شہر کے ہیرانگر تھانہ شیتر کے انترگت آنے والی پرائم سٹی سے10لاکھ کی پھروتی کے لئے جس6سال کے بچےکاکیا تھا,وہ سکشل ساگر کے مالتھون تھانہ شیتر کی بڑودیا چوکی کے پاس برآمد ہو گیا۔ پولیس کی ناکابندی کے کارن موٹرسائیکل سوار اکشت کو ساگر جھانسی ہائی وے پر چھوڑکر بھاگ نکلے۔ بچے کو ساگر لایا جا رہا ہے۔
اکشت کو ڈھونڈ نکالنے کے لئےپولیس یدھستر پر کام کر رہی تھی۔ پرائم سٹی میں رہنے والے کرانا ویوسائی روہت جین کے بیٹے کا اپہرن کر10لاکھ کی پھروتی مانگی گئی تھی لیکن پولیس کی گہن سکریتا سے اپہرنکرتاؤں نے پکڑے جانے کے ڈر سے بچے کو چھوڑ دیا۔ جیسے ہی اکشت برآمد
ہوا,ویسے ہی پولیس تھانے میں ڈاکٹر بلایا گیا جس نے کہا که بچہ سوستھ ہے اور اسے کسی طرح کا نقصان نہیں پہنچا ہے۔

الیکھنیہ ہے که بچے کے اپہرن کے بعد سے اسکے پرجن بیحد پریشان تھے۔ اے ایس پی پرشانت چوبے نے بتایا که پولیس نے بدمعاشوں کو پکڑنے کے لئے4ٹیمیں گٹھت کی تھیں۔ بیتی رات کالونی کے رہو اسی رات بھر سو نہیں سکے اور پیڑت پریوار کو بچے کے مل جانے کا دلاسا دیتے رہے۔ ماں شلپا کا رو روکر برا حال ہو رہا تھا۔

جیتو پٹواری پہنچے اکشت کے گھر: مدھیہ پردیش کے مکھیہ منتری کمل ناتھ کے نردیش پر اچ شکشا و کھیل ایوں یووک کلیان منتری جیتو پٹواری اکشت کے گھر پرائم سٹی پہنچے اور ویڈیو کال سے پرجنوں سے اکشت کی بات کروائی۔

ماں کے بغیر نہیں رہتا تھا اکشت: پھروتی کے لئے جس بچے اکشت کو اغوا کیا گیا تھا,اسکی ماں شلپا نے کھانا پینا چھوڑ دیا تھا۔ وہ باربار یہی کہ کر رو پڑتی تھی که صرف ٹی شرٹ پہنا ہے اور ٹھنڈ میں میرے بچے کا کیا حال ہوگا؟ لیکن پولیس نے بچے کو ساگر کے پاس سکشل برآمد کرکے انہیں بہت بڑی راحت دی ہے۔ وہ بار بار ایشور کا شکریہ کر رہیں ہیں۔

رویوار کی دوپہر کو اغوا ہوا تھا بچہ:پرائم سٹی کے روہت جین کے پتر اکشت کو رویوار دوپہر میں تب اغوا کر لیا تھا,جب وہ گھر کے پاس میدان میں کھیل رہا تھا۔ دادی بلا رہی ہے...یہ کہ کر موٹر بائک پر آئے دو یووکوں نے اسکا منھ دبا دیا اور وہ ساتھ میں لے گئے۔ علاقے کے4سی سی ٹی وی کیمرے میں اپہرن کرنے والے نظر آئے تھے۔ دوپہر3بجے بچے کو اغوا کیا گیا تھا اور3.40بجے10لاکھ رپئے کی مانگ کی گئی تھی۔ شک ہے که محلے سے نکلنے کے پہلے ہی انہوں نے بچے کو اغوا کر لیا ہوگا۔

پتا کرانا کاروباری: اکشت کے پتا روہت20سال سے پرا‍ام سٹی میں رہتے ہیں۔ روہت کے2بچے ہیں۔ بڑا بیٹا9سال کا ہے اور چھوٹا بیٹا اکشت6سال کا ہے۔ روہت کرانا کاروباری ہونے کے ساتھ زمین کے سودے بھی کراتے ہیں۔ پولیس جانچ کر رہی ہے که کہیں رنجش کے کارن تو بچے کو اغوا نہ کیا گیا تھا۔ کیمرے میں دکھ رہی موٹربائک بنا نمبر کی تھی۔ پولیس نے رات میں پورے شہر میں سرچنگ ابھیان چلایا گیا تھا اور سندگدھ لوگوں کو حراست میں لیکر پوچھ تاچھ بھی کی تھی۔
کرائم برانچ کی ٹیم نے پہچان لیا تھا:رویوار رات کو ہی بچے کو اغوا کرنے والوں کو کرائم برانچ کی ٹیم نے پہچان لیا اور انکے نام بھی سامنے آ گئے تھے۔ روہت,انکی پتنی شلپا و انیہ پرجن سہت کالونی کے رہو اسی رات بھر سے نہیں سوئے اور اپنے سطر پر بچے کو ڈھونڈنے کا پریاس کرتے رہے۔ نانی روتے ہوئے بولیں تھی که که ہمارا اکشت پھول سا ہے اور وہ سکشل واپس آ جائے۔

ہر کسی نے اپنے سطر پر کئے پریاس: اکشت کے اپہرن کے بعد کالونی میں کسی نے اکشت کے کپڑے دبوائے ہیں تو کوئی دیوی دیوتا کا پاٹھ کر رہا تھا۔ رہواسیوں نے بتایا که اکشت ملنسار قسم کا ہے اور ادھکانش رہواسیوں کے گھر چلا جاتا تھا۔ اسکے چنچل سوبھاؤ کا اپہرنکرتاؤں نے فائدہ اٹھایا۔ کالونی میں کوئی400گھر ہیں اور ان میں سے ادھکتر جین سماج کے ہیں۔

ڈی آئی جی ہرناراینجی کو نہیں کیا ریلیو:دوسری اور ڈی آئی جی ہرناراینجی مشر رویوار کو ریلیو ہونے والے تھے لیکن اترکت پولیس مہاندیشک ورن کپور نے اکشت کے اپہرن کی گتھی سلجھانے کے لئے انکو روک لیا تھا اور آخرکار انہوں نے اپہرن کی گتھی سلجھاکر ہی دم لیا۔


اور بھی پڑھیں:


Web Tranliteration/Translation