Loading...
دینک ٹربیون» Newsچپ چاپ بن گیا چین پولر پاور-دینک ٹربیون

2یووتیوں سے ساڑھے3کروڑ کی سمیک پکڑی !    گولی مار خودکشی کا کیا پریاس !    آتنکی پرچار والے سوشل میڈیا اکاؤنٹس کی جانچ !    سامبا میں وسفوٹ,بی ایس ایف جوان شہید !    گرامین سوچھتا کوریج کا آنکڑا پہنچا96فیصدی !    ادھر,پانچویں دن بھی سستا !    ایچٹیٹ 2018کی پریکشائیں5-6جنوری کو !    مٹھ بھیڑ میں2مہلا نکسلی ڈھیر !    شادمان اسلام بانگلادیش ٹیسٹ ٹیم میں نیا چہرہ !    فلم‘جیرو’کے خلاف یاچکا پر سنوائی30کو !    

چپ چاپ بن گیا چین پولر پاور

Posted On September - 14 - 2018

انٹارکٹکا میں سب کچھ خاموشی سے چل رہا تھا۔ آج پتہ چلا که چین پولر پاور بن چکا ہے۔ اس ہفتے بدھوار کو شنگھائی سے ایک آئس بریکر شپ کو چین نے روانہ کیا ہے۔‘شئیلونگ ٹو’نامک اس جہاج پر334لوگ سوار ہیں۔ شئیلونگ کا مطلب ہوتا ہے, ‘برفیلا ڈریگن!’یہ جہاج روس ساگر کے‘ٹیرا نووا بے’پر ڈیرا ڈال دیگا۔ ساؤتھ پول پر اس طرح کا یہ پانچواں دیپ ہے,جہاں ریسرچ کے بہانے چین کا قبضہ ہوگا۔ چین نے کہا, ‘اس پانچویں بیس پر ہم2022تک شوگھ کرینگے۔’ ‘شئیلونگ ٹو’برف توڑنے والا جہاج ہے,جسے شنگھائی کے چیانگنان شپ یارڈ میں2016سے بنایا جا رہا تھا۔ اسکے نرمان میں فنلینڈ کے‘آکیر آرکٹک ٹیکنولاجی’اور‘چائنہ سٹیٹ شپنگ کارپوریشن’کے تکنیشین ساجھا روپ سے کام کر رہے تھے۔
‘شئیلونگ ٹو’دنیا کا پہلا آئس بریکنگ شپ ہے,جو آگے اور پیچھے سے برف کو توڑ پانے میں سکشم ہے۔ اورجنل‘شئیلونگ’ 1994میں یوکرین سے منگایا گیا تھا,جسے چین2013تک انت کرتا رہا۔‘شئیلونگ ٹو’کے بن جانے سے دنیا کے بہت سارے دیش چین پر آشرت ہو جا ئینگے,جو دکشنی دھرو سے شارٹ کٹ راستہ چاہ رہے تھے۔ نابھکیہ اور جا سے سنچالت‘شئیلونگ ٹو’میں منئیچرائزڈ ری ایکٹر لگے ہوئے ہیں۔ چین اسکی سپھلتا کے بعد نابھکیہ شمتا سے لیس ایئرکرافٹ کیرئیر کے نرمان میں لگنے والا ہے۔ یہ بھوشیہ کا سپر یدھپوت ہوگا,جسمیں دنیا کی ساری سودھائیں ہونگی۔ کئی لاکھ لوگوں کو جتنی بجلی کی ضرورتیں ہونگی,وہ سپر یدھپوت کے مادھیم سے پوری کی جائینگی۔
بہت پہلے سوویت سنگھ نے الیانووسک شپ یارڈ میں نو نابھکیہ آئس بریکنگ جہاج وکست کیے تھے۔ اپریل2018میں روس نے خلاصہ کیا که‘اکادمک لومونوسوو’آئس بریکر ری ایکٹر سے ہم70میگاواٹ بجلی پیدا کر رہے ہیں۔ سینٹ پیٹرسبرگ شپ یارڈ میں نرمت روس کا‘اکادمک لومونوسوو’دنیا کا اکیلا فلوٹنگ پاور یونٹ ہے,جس سے دو لاکھ لوگوں کی اور جا ضرورتیں پوری ہو سکتی ہیں۔
اسکے مقابلے بھارت کہاں کھڑا ہے؟ پرتھوی وگیان منترالیہ کے سچو شیلیش نائک نے مارچ2015میں جانکاری دی تھی که سپین سے ہم پولر ریسرچ ویسل(پیاروی)آنے والے تین ورشوں میں حاصل کر لیں گے,جس سے18ہزار ناٹکل مائل تک سفر اور ڈیڑھ میٹر موٹی برف کی پرت کاٹنا آسان ہوگا۔ منترالیہ نے اسکے لئے1ہزار50کروڑ آونٹت بھی کر رکھے تھے۔ اس سمیہ تک بھارت کے پاس چھہ‘پیاروی’اپلبدھ تھے,جن کی شمتا10ہزار ناٹکل مائل کا سفر اور40سینٹی میٹر موٹی برف کاٹنے بھر کی تھی۔ یہ سمیہ سیما سماپت ہو چکی ہے,مگر سپین سے ملنے والی‘پیاروی’کا کوئی عطا پتہ نہیں ہے۔ یہ ایک چھوٹا-سا اداہرن ہے,جو یہ بتاتا ہے که دیش کا پرتھوی وگیان منترالیہ کتنا سنزیدا ہے۔
ساؤتھ پول میں ہم سب سے پہلے1983-84میں اپنے ریسرچ اسٹیشن‘گنگوتری’کے ساتھ اپستھت ہوئے تھے۔ چین ہم سے سال بھر بعد ہی وہاں اوترت ہوا۔1990میں ہمارا ریسرچ اسٹیشن‘گنگوتری’برف میں ولین ہو گیا۔ لیکن وہاں انوپستھت ہونے سے پہلے,شماخر اوئیسس پر‘میتری’نامک ایک دوسرا اسٹیشن1989میں اور مارچ2013میں‘بھارتی’نامک اسٹیشن ہم نے بنا لیا۔ جہاں پر میتری اسٹیشن ہے,وہاں سے کوئی تین ہزار کلومیٹر اور آگے دکشنی دھرو ہے,وہیں چوتھے ریسرچ اسٹیشن‘ہمادری’کا نرمان کرنا ہے۔ میتری اسٹیشن سے‘ہمادری’والے ٹھکانے تک پہنچنے کے لئے جن چار پولر ریسرچ ویسل(پیاروی)کی ضرورت پڑ رہی ہے,اسکے صرف کرایے پر تین کروڑ60لاخ روپے خرچ ہو جا ئینگے۔
کیسی وڈمبنا ہے,ہم چلے ہیں انٹارکٹکا شیتر میں دو ہزار سال کے پریاورن پرورتن پر ریسرچ کرنے,لیکن منزل پر پہنچنے کے لئے ہمارے پاس یان تک نہیں ہے۔ مئی2011کے انتم ہفتے میں490کروڑ کے‘آئس کلاس ریسرچ ویسل’خریدنے کی حامی ہماری سنسدیہ سمتی نے بھر دی تھی۔60لوگوں کی شمتا والا یہ جہاج مارچ2013تک بھارت کو مل جانا تھا۔‘آئس کلاس ویسل’کو حاصل کرنے کے معاملے میں ہم اتنے سال سوتے کیوں رہے؟ ایسے سوالوں کا اتر دینے میں بھو وگیان منترالیہ کے ادھیکاری آپ کو بھومی گت ملیں گے۔
اب اسکی بھی بات ہو جائے که چین وہاں‘ریسرچ’کے علاوہ اور کیا کر رہا ہے۔ ٹھیک آٹھ سال پہلے, 3ستمبر2011کو اوسلو سے خبر آئی تھی که چین نے دکشنی دھرو کے براستے ایک نئے پولر مارگ کا وستار کیا ہے۔ کوئی ڈیڑھ سو سال سے اس پولر مارگ کو بنانے کا پریاس دنیا کے وکست دیش کر رہے تھے۔ پولر مارگ کے کھل جانے سے امریکہ,یوروپ اور ایشیاء کی سمندری دوری آدھی سے بھی کم ہو جاتی ہے۔ اس سے صدیوں سے تیشدا مصر کے سویج کینال والے سمندری مارگ سے مکتی ملے گی۔ ایندھن میں پرتی کھیپ1لاکھ80ہزار ڈالر کی بچت ہوگی۔ اور سب سے فائدے کی بات یہ که عدن کی کھاڑی,مل کا جلڈمرمدھیہ کے سمندری لٹیروں سے چھٹکارا۔ اس سے مصر کو زبردست آرتھک نقصان پہنچیگا,یہ تو تے جانیے۔
چین نے سوموار کو‘شئیلونگ ٹو’بنانے میں جو سپھلتا حاصل کی ہے,اس سے پولر مارگ پر آواگمن میں سب سے ادھک آسانی اسکے جہازوں کو ہوگی۔ سامنے سے یا پیچھے سے برف کاٹنے میں سکشم جہازوں کے نہ ہونے کی وجہ سے دنیا کے وکست دیش ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھے تھے۔ آپ باہر سے دیکھیں تو یہی لگتا ہے که دکشنی دھرو میں سکریہ دیش پریاورن پر شودھ کر بڑا پنیہ کا کام کر رہے ہیں۔ لیکن سچائی یہ ہے که جب سے اس نراپد مہادیش کا پتہ چلا,تب سے بڑی شکتیاں یہاں دبدبہ بنانے,نابھکیہ پریکشن کرنے اور سیکڑوں میٹر برف کے نیچے سے سونا,چاندی,کوبالٹ,تامبا,کرومیم,لوہ ایسک,نکیل,لیڈ,ٹیٹینیم,یورینیم کو اڑا لے جانے کی طاق میں لگی ہیں۔ یوں1991میں میڈرڈ سندھی کے تحت2041تک ایسے کھنج پدارتھوں کے دوہن پر روک لگا دی گئی ہے۔

پشپرنجن

چین اس سمیہ دنیا بھر سے تیل,گیس اور کھنج بٹورنے کے لئے بھوکھے ڈریگن کی بھومکا میں ہے۔ اس بھوکھے ڈریگن کو یدی پولر مارگ میں حصے داری مل جاتی ہے تو نشچت مانیے که چین کی یہاں لاٹری لگ جائیگی۔ چین دکشنی دھرو پر دعویداری ٹھوکنے میں ذرا بھی نہیں چوکیگا۔ روس,ناروے,فنلینڈ جیسے دیش چین کے بہانے دکشنی دھرو میں ایک نئی لابی بنا رہے ہیں,اسے کاؤنٹر کرنے کے لئے یوروپیہ سنگھ اور امریکہ کے ساتھ ملکر بھارت ایک نیا گٹ کیوں نہیں بنا سکتا؟

لیکھک اییو ایشیاء نیوز کے نئی دہلی سمپادک ہیں۔


Comments Off onچپ چاپ بن گیا چین پولر پاور
1 Star2 Stars3 Stars4 Stars5 Stars (No Ratings Yet)
Loading...
Both comments and pings are currently closed.

Comments are closed.

سماچار میں حال لوکپریہ

Powered by : Mediology Software Pvt Ltd.
Web Tranliteration/Translation