Loading...
دینک ٹربیون» News »ڈھلتی عمر میں پھائبرایڈ کا خطرہ

سواد گلیوں کی سیر کراتے شیپھ !    اپنیپن کو سہیجیں پیار سے !    چٹوری دہلی !    مست مست شام !    اب کھلینگے بیٹری چار جنگ سینٹر !    انوٹھے کامگار !    لگھکتھائیں !    دھواں !    کوتا !    یو ایس میں ایچ4ویجا ہٹانے پر فیصلہ3مہینے میں !    

ڈھلتی عمر میں پھائبرایڈ کا خطرہ

Posted On September - 15 - 2018

یوٹرس یعنی گربھاشیہ کے اندر بننے والی مانسپیشیوں کے ٹیومر کو پھائبرایڈ کہتے ہیں۔ عام بھاشا میں اسے گربھاشیہ کی رسولی بھی کہا جاتا ہے۔ یہ انگور کے آکار کے ہو سکتے ہیں اور کھربوجے کے آکار کے بھی۔ پھائبرایڈ ایک یا انیک بھی ہو سکتے ہیں۔ حالانکہ انھیں غیر کینسرک مانا جاتا ہے۔ یعنی زیادہ تر میں کینسر ہونے کا خطرہ نہیں ہوتا۔ ڈاکٹروں کے مطابق کیول0.2پرتیشت معاملوں میں ہی کینسر ہونے کی آشنکا ہوتی ہے۔ ادھکتر مہلاؤں کو40سے50کی عمر میں پھائبرایڈ کی سمسیا ہونے لگتی ہے۔ اگر اسکے سنکیتوں کو صحیح سمیہ پر پہچان کر ٹریٹمینٹ لے لیا جائے تو اس پرابلم کو کنٹرول کیا جا سکتا ہے۔ ہر6مہینے میں پیلوک الٹرا ساؤنڈ اس میں مددگار ہو سکتا ہے۔
نہیں دکھتے لکشن
اکثر پھائبرایڈ ہیوی بلیڈنگ کا کارن بنتے ہیں۔ پھائبرایڈ چھوٹے ہوں یا پھر یوٹرس کے باہر ہوں تو اس میں کسی بھی طرح کے لکشن نظر نہیں آئینگے۔ جو پھائبرایڈ یوٹرس کے اندر کیو ٹی ہوتے ہیں انکی وجہ سے ہیوی بلیڈنگ ہوتی ہے۔ انھیں سبمیوکس پھائبرایڈ کہتے ہیں۔ ایسے بڑے پھائبرایڈ جو یوٹرس کے سائز اور اسکی کیو ٹی کو بڑا کر دیتے ہیں ہیوی بلیڈنگ کا کارن بنتے ہیں۔
کارن

  • بڑھتی عمر,ہارمونل چینجیز یا جینیٹک کارنوں سے مہلاؤں کو پھائبرایڈ کی پرابلم ہونے لگتی ہے۔
  • پھائبرایڈ ان مہلاؤں کو ہونے کی آشنکا ادھک ہوتی ہے جو لمبے سمیہ‍تک اوواہت رہتی ہیں۔ دیر تک پریگنینسی نہ ہونے کے چلتے مہلاؤں کے پیٹ میں اس طرح کی گانٹھیں بننے لگتی ہیں۔
  • یہ ماہواری کے سمیہ مشکلیں کھڑی کر دیتے ہیں۔ اگر گربھ میں بھرون ہو تو یہ ٹیومر ایک طرح سے اسکی جگہ کو بھی گھیر لیتے ہیں۔ اس سے گربھ پات یا پرٹرم برتھ ہونے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

کیا ہے پھائبرایڈ
دراصل جب یوٹرس کی مانسپیشیوں کا اسامانیہ روپ سے اترکت وکاس ہونے لگتا ہے تو اسے پھائبرایڈ کہا جاتا ہے۔ یہ ایک پرکار کا ٹیومر ہوتا ہے۔ اسکا آکار کبھی کبھی کرکٹ کی بال کی طرح بھی ہو سکتا ہے۔
جب یہ گربھاشیہ کی مانسپیشیوں کے باہری حصے میں ہوتا ہے تو اسے سبسیرس کہا جاتا ہے اور اگر یہ یوٹرس کے بھیتری حصے میں ہوتا ہے تو ایسے پھائبرایڈ کو سبمیوکس کہا جاتا ہے۔ ڈاکٹروں کی مانے تو اگر پھائبرایڈ کا آکار چھوٹا ہو اور اسکی وجہ سے مریض کو کوئی تکلیف نہ ہو یا اسے گربھدھارن کرنے کی ضرورت نہ ہو تو اسکے لئے اپچار کی بہت آوشیکتا نہیں ہوتی۔

پھائبرایڈ اور انپھرٹلٹی
پھائبرایڈ کی سمس‍یا ہونے پر بانجھ پن کی ستھتی ہو سکتی ہے۔ دراصل پھائبرائڈ میں ماسک دھرم کے دوران سامان‍یہ سے ادھک رک‍تسراو,انیمت ماسک دھرم,اسکے بعد بھی رک‍تسراو ہونے جیسی سمس‍یا ہوتی ہے۔ ان سمس‍یاؤں کے کارن پھائبرایڈ بانجھ پن کے لئے بھی جم‍میدار ہے۔

پھائبرایڈ کا اپچار
پھائبرایڈ کے سمبندھ میں سب سے اہم بات یہ که اسکی گانٹھیں کینسر رہت ہوتی ہیں۔ اسلئے انکا آسانی سے اپچار سمبھو ہے۔ پہلے اوپن سرجری دوارہ اسکا اپچار ہوتا تھا,جس سے مریض کو سوستھ ہونے میں لگ بھگ ایک مہینے کا سمیہ لگتا تھا۔ لیکن اب لیپروسکوپی کی نئی تکنیک کے ذریعے اس بیماری کا کارگر اپچار سمبھو ہے۔
اس میں بڑا چیرا لگانے کے بجائے صرف آدھے سے ایک سینٹی میٹر کا سوراخ بناکر دوربین کے ذریعے مارسلیٹر نامک ینتر کا اپیوگ کر پھائبرایڈ کے چھوٹے چھوٹے باریک ٹکڑے کرکے اسے باہر نکال دیا جاتا ہے۔ اس طریقے سے علاج کے دوران مریض کو زیادہ تکلیف نہیں ہوتی۔ سرجری کے24گھنٹے بعد مہلا آسانی سے گھر جا سکتی ہے۔
اگر پھائبرایڈ کا آکار بہت بڑا ہو یا اتینت چھوٹے آکار کے کئی پھائبرایڈ ہوں,اگر مریض کو ڈایبیٹیز یا ہردیہ روگ ہو تو ایسی ستھتی میں بھی اسے پرتی سپتاہ جیئینارئیچ اینالاگ کا انجیکشن لگایا جاتا ہے۔ اس سے دھیرے دھیرے بڑا پھائبرایڈ سوکھ کر چھوٹا ہو جاتا ہے۔
اسکے علاوہ پالیونائل ایلکوہال کے کرسٹل کے ذریعے پھائبرایڈ کی آٹری کو بلاک کر دیا جاتا ہے,اس سے ٹیومر کے لئے رقت کا پرواہ رک جاتا ہے اور ٹیومر گل کر چھوٹے چھوٹے ٹکڑوں کے روپ میں پیریڈس کے ساتھ شریر سے باہر نکل جاتا ہے,لیکن علاج کی یہ پرکریا زیادہ مہنگی ہے۔ اسکے لئے مریض کو کچھ دنوں تک اسپتال میں بھرتی بھی ہونا پڑتا ہے۔ اس سے یوٹرس میں سنکرمن کی بھی آشنکا رہتی ہے۔

(وشیشگیوں سے بات چیت پر آدھارت)

گھریلو اپچار
لہسن
کچ‍چی لہسن میں اینٹیآک‍سیڈینٹ ہوتے ہیں جو که ٹیومر کو بڑھنے سے روکتے ہیں۔
کیسٹر آئل
کیسٹر آئل کو ادرک کے رس کے ساتھ دن میں دو بار صبح اور رات میں سوتے سمیہ پر یوگ کریں۔ اس سے بھی پھائبرایڈ چھوٹے ہو نگے اور ادھک نہیں بنینگے ساتھ ہی موجود پھائبرایڈ کے کینسر میں تبدیل ہونے کی آشنکا بھی کم ہوگی۔
سیب کا سرکا
صبح اور شام گرم پانی کے ساتھ سیب کا سرکا پئیں۔ اس سے بھی پھائبرایڈ میں ہونے والے درد میں آرام ملتا ہے ساتھ ہی یہ بھی پھایبرایڈ کو بڑھنے سے روکتا ہے۔
ہلدی:ہلدی کا پر یوگ جتنا ادھک ہو سکے کریں,کیونکہ ہلدی پیٹ سے وشیلے تتووں کو باہر کرتی ہے اور اینٹیبایوٹک ہونے کے کارن پھائبرایڈ کی گروتھ کو کینسر بننے سے روکیگی۔
سالمن مچھلی
ٹھنڈے پانی کی مچھلی سالمن کے اندر ڈھیر سارا اچ‍چھا فیٹ ہوتا ہے جو که شریر سے بھاری ماترا میں ایس‍ٹروجین کو نکلنے سے روکتا ہے۔ اس مچھلی میں سوجن کم کرنے کے بھی گن ہیں۔
ادرک کی جڑ
گربھاشیہ میں رک‍ت کے پرواہ اور پرسنچرن کو بڑھاوا دینے میں اس‍تیمال کیا جاتا ہے۔ بڑھا ہوا سرکولیشن گربھاشیہ,انڈاشیہ یا پھیلوپن ٹیوب کی سوجن کو کم کرنے میں مدد کرتا ہے۔
پیاز
پ‍یاج میں سیلینیم ہوتا ہے جو که ماسپیشیوں کو راحت پردان کرتا ہے۔ اسکا تیز اینٹیانپھلیمیٹری گن پھائبرایڈ کے سائز کو سکوڑ دیتا ہے۔ ہری,تزا اور کچ‍چی سبی‍جیوں میں فائبر ہوتا ہے,جو که شریر میں ہارمون کو بیلینس کرنے میں کافی مدد کرتا ہے۔
ڈھیر سارا پانی
پانی پینے سے شریر سے فیٹ,ٹاکی‍سنہ اور ات‍یدھک ہارمون باہر نکل جاتا ہے۔ حل‍دی,دالیں اور بینس کھانے سے شریر کو ایک طرح کا کیمیکل جسے پھوٹوئس‍ٹروجین کہتے ہیں,ملتا ہے۔ یہ پھائبرایڈ کو سکوڑتا ہے۔
سٹرس پھل
سٹرس پھلوں میں وٹامن سی اور اینٹیآک‍سیڈینٹ ہوتا ہے۔ یہ شریر کو اندر سے صاف کرتا ہے اور یوٹرس میں پھائبرایڈ کو بننے سے روکتا ہے۔
بادام:بادام میں اومیگا3پھیٹی ایسڈ ہوتے ہیں جو که یوٹرس کی لائننگ کو ٹھیک کرتے ہیں۔ پھائبرایڈ ج‍یاداتر یوٹرس کی لائنننگ پر ہی ہوتے ہیں۔
پھائبرایڈ کے سنکیت
1.نابھی کے نیچے پیٹ میں درد رہنا
2.پیٹھ کے نچلے حصے میں درد رہنا
3.باربار پیشاب آنا
4.پیریڈس کے دوران پیٹ میں تیز درد ہونا
5.لمبے سمیہ تک پیریڈس چلنا
6.اینیمیا کی سمسیا
7.لمبے سمیہ تک قبج کی پرابلم رہنا

سجگ رہیں
پھائبرایڈ,مانسپیشی کی پرت ہوتی ہے جو گربھاشیہ کی دیواروں پر اکٹھا ہونے لگتی ہیں اور یہ ہارمونل کی سکریتا کی وجہ سے ہوتی ہے۔ بعد میں یہ ٹیومر بن جاتا ہے اور علاج نہ ہونے پر یہ کینسر کا روپ لے لیتا ہے۔ اگر پھائبرایڈ کا آکار بڑا ہو چکا ہے تو ڈاکٹرس اسکا علاج یا تو دوائیاں دے کر کرتے ہیں یا پھر مائکرو سرجری کے دوارہ ۔ پر اگر پھائبرایڈ کو پراکرتک طریقے سے ٹھیک کرنا ہے تو اسکے لئے کچھ ایسے کھادھیہ پدارتھوں کا سیون کرنا چاہئیے جو پھائبرایڈ کے آکار کو سکوڑ دے۔ ان آہاروں کے نیمت سیون سے لیور اتیدھک ایسٹروجین کو شریر سے باہر نکالیگا جس سے ہارمون بیلینس ہو نگے اور پھائبرایڈ ختم ہو نگے۔


Comments Off onڈھلتی عمر میں پھائبرایڈ کا خطرہ
1 Star2 Stars3 Stars4 Stars5 Stars (No Ratings Yet)
Loading...
Both comments and pings are currently closed.

Comments are closed.

سماچار میں حال لوکپریہ

Powered by : Mediology Software Pvt Ltd.
Web Tranliteration/Translation