Loading...
دینک ٹربیون» Newsٹوکن کے باوجود سرسوں کی خرید نہیں,لگایا جام-دینک ٹربیون

راج مستری کی بیٹی کو راجیہ میں8واں,ضلعے میں تیسرا ستھان !    سنگاپور سے ووٹ ڈالنے بھارت آیا این آر آئی پریوار !    زیادہ تر ایگجٹ پول میں پھر مودی سرکار !    راشٹرپتی سے سمانت نیہا نے چھیڑی پانی بچانے کی مہم !    ایکدا !    بھدرواہ جانچ کے آدیش,کرفیو جاری !    ‘جج کے خلاف مہابھیوگ,سانسد کا نام نہیں بتا سکتے’ !    یوجیسی:یون اتپیڑن کے آنکڑے بتاییں !    دیش کی گوشالاؤں میں گؤئیں گہرے دباوٴ میں !    اندور میں بھاجپا کاریہ کرتا کی ہتیا !    

ٹوکن کے باوجود سرسوں کی خرید نہیں,لگایا جام

Posted On May - 15 - 2019

جھجر, 14مئی(ہپر)

چرخی دادری میں منگلوار کو بارش کے بعد کھلے آسمان کے نیچے پڑی اناج کی ڈھیریوں میں کھڑا پانی۔-نس

سرسوں کی خرید نہ ہونے سے خفا کسانوں نے ماتنہیل منڈی کے سامنے ماتنہیل جھاڑلی مارگ پر جام لگا دیا۔ سوچنا کے بعد ماتنہیل چوکی پر بھاری رام پال و سالہاواس تھانہ پربندھک نریکشک بجیندر سنگھ پولیس بل کے ساتھ موقعے پر پہنچے اور کسانوں کو سمجھا بجھا کر جام کھلوایا۔ قریب پونے گھنٹے لگے جام کے کارن یاتریوں و واہن چالکوں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔
جام لگا رہے کسانوں نے بتایا که50کسانوں کے ٹوکن سرسوں بکری کے لئے کٹے ہوئے ہیں اور کافی سمیہ سے سرسوں بیچنے کے لئے بھٹک رہے ہیں۔ ٹوکن فوڈ سپلائی سے ہیپھیڈ میں ٹرانسفر نہیں کئے جا رہے ہیں۔ جسکے چلتے انہوں نے جام لگایا ہے۔ تھانہ پربندھک بجیندر سنگھ نے ہیپھیڈ ادھیکاریوں سے اس سمبندھ میں بات کی۔ ہیپھیڈ ادھیکاریوں نے شیش بچی سرسوں خریدنے میں اسمرتھتا جتائی اور کہا که وہ کسانوں کی بات سرکار کو بھیجینگے اور سرکار کے آدیش کے بعد ہی سرسوں خریدی جائیگی۔ پولیس ادھیکاریوں دوارہ سمجھائے بجھائے جانے کے بعد کسانوں دوارہ جام کھول دیا گیا۔
20گاؤوں کے کسانوں نے کیا پردرشن
سرسہ(نس) : سرسوں کی بکری پھر سے شروع نہ ہونے سے پریشان چوپٹا شیتر کے20گاؤوں کے کسانوں نے منگلوار کو تحصیل پرسر میں پردرشن کیا۔ کسانوں نے چوپٹا کے تحصیلدار کو اپایکت کے نام ایک گیاپن سونپا۔ گیاپن میں کسانوں نے بکی ہوئی سرسوں کے روپے کسانوں کے کھاتوں میں جلدی ڈالنے اور بقایا پڑی سرسوں کی بکری شروع کروانے کی مانگ کی ہے۔ تحصیل پرسر میں ورودھ جتا رہے گاؤں الیموہمد,رامپرا ڈھلوں,روپاواس,روپانا,جوڑکیاں,ارنیانوالی,گشائییانا,کھیڑی,راجپرا ساہنی,ہنجیرا,گڈیا کھیڑا,ڈھوکڑا,جمال,کتیانا,رائے پور,لدیسر,بکریانوالی,ترکانوالی,گیگورانی سہت انیہ گاؤوں کے کسان ستبیر,اندر سنگھ,بھجن لال,وکاس کا کہنا ہے که11مئی کو جن کسانوں کی سرسوں کی بکری نہیں ہوئی,انہیں13مئی کے بعد آنے کو کہا تھا۔ کسانوں نے بتایا که منگلوار کو جب وہ سرسوں بیچنے آئے تو منڈی کرمچاریوں نے ٹوکن کاٹنے سے منا کر دیا۔ اسکے علاوہ قریب ایک ماہ پہلے جو سرسوں بیچی تھی اسکے پیسے بھی ابھی تک کھاتے میں نہیں آئے ہیں۔ جسکے چلتے انہوں نے پردرشن کیا۔ چوپٹا تحصیل میں کسانوں نے گیاپن میں مانگ کی ہے که جلد ہی انکی سرسوں کی فصل بیچنے کے ٹوکن کاٹنے شروع کئے جائیں و پہلے بکی ہوئی سرسوں کے پیسے انکے کھاتوں میں ڈالے جائیں۔ اسکے لئے17مئی تک انتظار کیا جائیگا۔

اٹھان نہیں ہونے سے گیہوں,سرسوں کو نقصان

چرخی دادری(نس) :سوموار رات بارش کے بعد منڈی کے حالات بےحال ہو گئے ہیں۔ برش سے کسانوں کا گیہوں بھیگ گیا۔ اٹھان نہیں ہونے اور اناج کو بارش سے نہیں بچانے کے بعد گیہوں کی کئی ڈھیریوں میں اناج سڑ گیا ہے۔ حالانکہ منڈی ادھیکاری صرف نوٹس و پرشاسن کو پتر لکھ کر اتیشری کر رہی ہے۔ بارش کے چلتے منڈی میں ہزاروں ٹن گیہوں و سرسوں کو کافی نقصان ہوا ہے۔ کسان رام پھل,جےبھگوان و دیانند اتیادی نے بتایا که بارش سے جہاں انکا اناج خراب ہوا ہے وہیں انکے پاس بکری کا میسییج آنے کے بعد بھی اناج نہیں خریدا جا رہا ہے۔ ادھر مارکیٹ کمیٹی سچو بسنت کمار کا کہنا ہے که بارش کو لیکر آڈھتیوں کو ترپال سہت انیہ ویوستھا کرنے کے لئے نوٹس جاری کیا ہوا ہے۔ اس سمیہ اٹھان نہیں کے کارن بارش سے کچھ نقصان ہوا ہے۔ اس سمبندھ میں جلا پرشاسن کو پتر لکھ کر سمسیا سے اوگت کروا دیا گیا ہے۔

سونی پت کی اناج منڈی میں برسات کی وجہ سے خراب ہیہ گیہوں کی لگی ڈھیریاں۔
-ہپر

سونی پت میں سڑنے لگا بھیگا گیہوں,کہیں کہیں پھپھوند

سونی پت(ہپر) : منڈیوں سے گیہوں کا اٹھان نہیں ہونے کا دشپرنام اب دکھائی دینے لگا ہے اور برسات کے کارن گیہوں منڈیوں میں ہی سڑنے لگا ہے۔ ضلعے میں ہی اب بھی70لاکھ مٹرک ٹن گیہوں منڈیوں میں پڑا ہے۔ اس میں گیہوں خراب بھی ہونے لگا ہے۔ برسات گرنے سے اناج پر پھنپھود لگنے کی شکایت آنے لگی ہے۔ غورطلب ہے که گیہوں کی خرید پرکریا ایک اپریل سے شروع کی گئی تھی۔ اپریل کے دوسرے سپتاہ سے منڈیوں میں گیہوں کی آوک تیز ہوئی۔ گیہوں کی خرید کے لئے ضلعے میں4پرموکھ منڈی و18خرید کیندر ستھاپت کئے گئے تھے۔ خرید اور اٹھان کی ذمیداری ایف سی آئی,ہیپھیڈ,کھادھیہ ایوں آپورتی وبھاگ و ایچڈبلیوسی کو سونپی گئی تھی۔ ربیع خرید سیزن میں خرید پرکریا تو صحیح ڈھنگ سے ہوئی۔ لیکن اٹھان کی سمسیا بنی رہی۔ اب برسات کی وجہ سے منڈیوں میں پڑا گیہوں سڑنے لگا ہے۔ بورے میں بند گیہوں میں بھی پھپھوند لگنے کی شکائتیں آ رہی ہیں۔ ان بوریوں کو ترپال تک نہیں لگایا گیا۔ منڈیوں میں خرید بند ہو چکی ہے,باوجود اسکے اب بھی گیہوں کا پوری طرح سے اٹھان نہیں ہو پایا ہے۔ ربیع سیزن میں اس بار کھادھیہ ایوں آپورتی وبھاگ نے جہاں ایک لاکھ55ہزار ایم ٹی سے ادھک گیہوں خریدا ہے۔ وہیں ایف سی آئی نے ایک لاکھ61ہزار ایم ٹی گیہوں کی خرید کی ہے۔ ہیپھیڈ نے بھی ایک لاکھ46ہزار ایم ٹی سے ادھک گیہوں کی خرید کی ہے۔

”اٹھان کو لیکر وبھاگ گمبھیر ہے۔ باردانے کی کمی کی وجہ سے تھوڑی دیری ہوئی ہے۔ موجودہ سمیہ میں ادھکتر منڈیوں سے گیہوں کا اٹھان کر لیا ہے۔ جہاں باقی ہے,وہاں پر گیہوں کو پلاسٹک سے ڈھک کر سرکشت رکھا گیا ہے۔ ادھکتر گیہوں گوداموں میں ہی سرکشت رکھا گیا ہے۔”
-منیشا مہرا,ڈی ایف ایس سی

بلبھگڑھ کی منڈیوں میں حالات خراب
بلبھگڑھ(نس) :موسم خراب ہو رہا ہے,جبکہ ابھی بھی منڈیوں میں کھلے میں لاکھوں کونٹل گیہوں پڑا ہے۔ زیادہ بارش ہونے پر کسی بھی دن گیہوں بھیگ کر خراب ہو سکتا ہے۔ گیہوں کی ڈھلائی کا کام بہت دھیمی گتی سے چل رہا ہے۔ گیہوں کی ڈھلائی کم ہونے سے ابھی بھی سب سے زیادہ گیہوں موہنا منڈی میں پڑی اور2لاکھ بوریاں کھلے میں پڑی ہیں۔ ٖفتح پور بلوچ میں45ہزار بوریاں,بلبھگڑھ منڈی میں ایک لاکھ بوریاں,تگانو میں50ہزار,فریدآباد منڈی میں پانچ ہزار بوری گیہوں کھلے میں پڑا ہے۔ سوموار کو بلبھگڑھ میں4ملی میٹر اور چھانیسا میں2ملی میٹر بارش ہوئی۔ اس بارے میں آڑھتی رام اوتار کا کہنا ہے که ایسے روزانہ تھوڑی تھوڑی بارش بھی ہوتی رہی,تو گیہوں خراب ہو جائیگا۔ گیہوں کالا پڑ جائیگا۔ گیہوں کے خراب ہونے کا نقصان آڑھتیوں کو اٹھانا پڑےگا۔ اس بارے میں جلا کھادھیہ ایوں آپورتی نینترک کے.کے.گوئل کا کہنا ہے که بلبھگڑھ منڈیوں سے گیہوں کی ڈھلائی اب تک قریب80فیصدی پوری کی جا چکی ہے۔ سب سے زیادہ گیہوں موہنا منڈی میں لگا ہوا ہے۔ ٖفتح پور بلوچ میں بہت تھوڑا گیہوں بچا ہے,جبکہ بلبھگڑھ میں کچھ کٹے پڑے ہوئے ہیں۔ جلدی ہی گیہوں کی ڈھلائی کا کام پورا کر لیا جائیگا۔ گیہوں کو کسی بھی صورت میں نہیں بھیگنے دیا جائیگا۔

گیہوں کی آوک میں ایلناباد اول
سرسہ(نس) : ضلعے کی اناج منڈیوں میں گیہوں کی آوک تیز ہو گئی ہے۔ منڈیوں میں اب تک12لاکھ51ہزار251میٹرک ٹن گیہوں کی آوک ہو چکی ہے۔ ڈی سی پربھجوت سنگھ نے بتایا که2لاکھ29ہزار304میٹرک ٹن گیہوں کی خرید کی جا چکی ہے۔ انہوں نے بتایا که ایلناباد منڈی میں ایک لاکھ34ہزار471,سرسہ منڈی میں ایک لاکھ33ہزار926,ڈبوالی منڈی میں96ہزار382,کالانوالی منڈی میں95ہزار600,چوٹالا منڈی میں71ہزار99,رانیاں منڈی میں58ہزار732,بنی منڈی میں48ہزار194,جیون نگر منڈی میں32ہزار120,ناتھوسری چوپٹا منڈی میں27ہزار636,گنگا منڈی میں27ہزار594,ڈنگ منڈی میں27ہزار392,کھاریاں منڈی میں26ہزار618,ابوبشہر منڈی میں25ہزار127و ملیکاں منڈی میں22ہزار283میٹرک ٹن گیہوں کی خرید کی جا چکی ہے۔ ساتھ ہی جلا کی انیہ منڈیوں میں بھی گیہوں کی آوک جاری ہے۔ انہوں نے سبھی ایجینسیوں کے ادھیکاریوں سے کہا که گیہوں کے اٹھان کا کاریہ شیگھر و نرنتر اپنی دیکھ ریکھ میں سچارو کروائیں۔

کتھت گھوٹالے کے خلاف بھاکیو بنائیگی رننیتی
بہل(نس) : کتھت ٹوکن گھوٹالا کی اچستریہ جانچ کر دوشی ادھیکاریوں و کرمچاریوں,آڑھتیوں پر کارروائی کرنے تتھا ضلعے کی سبھی منڈیوں میں بقایا سرسوں کی خرید کو لیکر کسانوں کا دھرنا14ویں دن بھی جاری رہا۔ کسانوں نے کہا که آن لائن خرید کے لئے جٹے ضلعے کے7ہزار کسانوں کی اور بہل کے آپھلائن1300سے ادھک کسانوں کی مینوال خرید شروع کی جائے۔ بہل مارکیٹ کمیٹی کاریالیہ کے سامنے چل رہے دھرنے کی ادھیکشتا پورو صوبیدار رنجیت سنگھ شیرلا نے کی۔ بھاکیو یووا پردیش ادھیکش روی آزاد نے کہا که آڑھتیوں کے اویدھ ٹوکن کاٹ کر سرسوں منڈی میں طولی گئی جبکہ اصل کسان کو سرسوں کو اونے پونے داموں میں بیچنے پر مجبور کیا گیا۔ بدھوار کو چودھری مہیندر سنگھ ٹکیت کی پنیتتھی پر بھاکیو ان مانگوں پر سرکار و پرشاسن کو جھکانے کے لئے اگلی رننیتی کا اعلان کریگی۔ اس اوسر پر ہوشیار سنگھ چیہڑ,ایشور روڑھا,بجیندر اور مہتاب مہلا موجود رہے۔


Comments Off onٹوکن کے باوجود سرسوں کی خرید نہیں,لگایا جام
1 Star2 Stars3 Stars4 Stars5 Stars (No Ratings Yet)
Loading...
Both comments and pings are currently closed.

Comments are closed.

Powered by : Mediology Software Pvt Ltd.
Web Tranliteration/Translation