Loading...
دینک ٹربیون» Newsترچھی نظر-دینک ٹربیون

راج مستری کی بیٹی کو راجیہ میں8واں,ضلعے میں تیسرا ستھان !    سنگاپور سے ووٹ ڈالنے بھارت آیا این آر آئی پریوار !    زیادہ تر ایگجٹ پول میں پھر مودی سرکار !    راشٹرپتی سے سمانت نیہا نے چھیڑی پانی بچانے کی مہم !    ایکدا !    بھدرواہ جانچ کے آدیش,کرفیو جاری !    ‘جج کے خلاف مہابھیوگ,سانسد کا نام نہیں بتا سکتے’ !    یوجیسی:یون اتپیڑن کے آنکڑے بتاییں !    دیش کی گوشالاؤں میں گؤئیں گہرے دباوٴ میں !    اندور میں بھاجپا کاریہ کرتا کی ہتیا !    

ترچھی نظر

Posted On May - 15 - 2019

ارمانوں فرمانوں کا روڈ شو
ارن ارنو کھرے

چناووں کا موسم ہے۔ ریلیاں اور روڈ شو جاری ہیں لیکن مراری جی روڈ شو کے طریقے کو لیکر بہت غصہ ہیں۔ بھلا یہ بھی کوئی روڈ شو ہے,جسکے لئے روڈ شو کیا جا رہا ہے وہی سٹار پرچارک کے پیچھے دبکا کھڑا ہے۔ ہاتھ ہلاکر ابھوادن کرنے سے پہلے باربار پرچارک کا منھ دیکھتا ہے,انکی پرتکریا کا آکلن کرتا ہے,پھر اپنے اٹھے ہاتھ نیچے کر لیتا ہے۔ اسکی پرچارک کے سامنے ویلیو ہی کتنی ہے,ڈالر کے سامنے رپییے جتنی ہی نہ۔
اپنے روڈ شو کی یادوں میں مراری جی کھوتے ہوئے بتا رہے ہیں—کتنی آن بان شان تھی انکے روڈ شو میں۔ سر پر چمکدار پگڑی,وشیش روپ سے سلوائی گئی اچکن,جری کی کڑھائی والی جوتیاں,کمر میں تلوار اور شاندار بگگھی۔ گھر سے مہلاؤں نے تلک لگاکر وداع کیا تھا۔ نظر نہ لگے,اسلئے بالوں کے نیچے ماتھے کے داہنی اور کاجل کا ٹیکا لگایا گیا تھا۔ بگگھی میں کیول وہ ہی وراجمان تھے۔ ساتھ میں تھے بہن کے دو چھوٹے بچے۔ پھوپھانما سٹار پرچارک سے کوسوں دور۔ نہ آچار سنہتا کا لپھڑا,نہ روڈ شو کے روٹ کی فکر اور نہ سمیہ کی سیما۔ تب ڈی جے چلن میں نہیں تھا۔ بینڈوالے ہی روٹ اور سمیہ نردھارت کرتے تھے۔ ناگن ڈانس پر رپئے لٹانے پر کوئی پابندی نہیں۔
مراری جی کا کہنا ہے که انکا روڈ شو تو مکھیہ سڑک کو چھوڑکر قصبے کی ہر گلی سے ہوکر گذرا تھا۔ گھروں کی بالکنی میں کھڑی بڑی بوڑھی انکو دیکھ کر کھسر پسر کر رہی تھی—بہتئی نونو لگ رہو ہے دولہا تو۔ انکی شادی میں تو تین تین پھوپھا تھے لیکن مجال کیا که کسی نے دولہے کی شان کم کرنے کی کوشش کی ہو۔ چھوٹے چاچا کی ویوستھا بھی پوری چاکچوبند تھی۔ رائل چیلنج کے پچاس پچاس ایم.ایل.کے دو دو پیگ نیچے اتروا کر انہوں نے تینوں پھوپھا سے‘یہ دیش ہے ویر جوانوں کا’گیت پر لنگی ڈانس کروا دیا تھا۔
اپنے روڈ شو کی سپھلتا سے مگدھ مراری جی نے آگے کہا کوئی سرکشا ویوستھا بھی نہیں تھی ہمارے روڈ شو میں لیکن سارے باراتی غضب کے سو انوشاسن میں چل رہے تھے۔ چناوی روڈ شو میں دیکھا آپنے۔ سرکشا کے اتنے تام جھام کے بیچ بھی لوگ باغ جیپ پر چڑھ کر سٹار مہودیہ کو تھپڑ لگا جاتے ہیں۔ ہمارے روڈ شو میں تو کتنے ہی لوگوں نے تلک کیا تھا اور غضب کا سواگت ستکار ہوا تھا سبھی کا۔ چناوی روڈ شو کے پرنام کے لئے مہینوں انتجار کرنا پڑتا ہے جبکہ ہم نے شام کو روڈ شو کیا اور صبح دلہن کو لیکر گھر روانہ ہو گئے۔
ہمارے اور اس روڈ شو کی کوئی تلنا نہیں ہے۔ شائد اسی لئے دولہا سویں ہی اس روڈ شو میں پیچھے رہنا پسند کرتا ہے۔ کیا معلوم کوئی سٹار جی سے کھندک نکالنے آئے اور انکی مڑتھپڑی کر چلا جائے۔


Comments Off onترچھی نظر
1 Star2 Stars3 Stars4 Stars5 Stars (No Ratings Yet)
Loading...
Both comments and pings are currently closed.

Comments are closed.

Powered by : Mediology Software Pvt Ltd.
Web Tranliteration/Translation